عوامی مرکز میںلگنے والی آگ بجھ چکی تھی پھر کچھ نقاب پوش افراد آئے اور انھوں نے ایسا کیا کیا کہ آگ پھر لگا گئی؟؟یہ کون تھے؟؟لرزہ خیز انکشاف
  13  ستمبر‬‮  2017     |     پاکستان

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ملک کے معروف صحافی اور تجزیہ کار رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ سی ڈی اے میں لوٹ مار اور کرپشن کا بازار گرم ہے اور اس کے ملازمین کی بنائی ہوئی یونین ایسی ہر لوٹ مار کو تحفظ دینے کےلئے اتنی مضبوط ہے کہ کوئی ان کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا۔ نجی ٹی وی چینل میں گفتگو کرتے پوئے رؤف کلاسرا کا کہنا تھا کہ سی ڈی اے کے اپنے بازار میں آگ لگی ۔لوگوں نے چھلانگیں لگا دیں۔ ان کے پاس میٹریس تک نہیں تھے۔ دوسالو ں میں 55ارب روپے اڑا دیے گئے ہیں لیکن شہر خوبصورت ہونے

کی بجائے گندے ہی ہوئے جا رہے ہیں۔ عوامی مرکز پر لگنے والی آگ بارے ہو لناک انکشاف کرتے ہوئے رؤف کلاسرا کا کہناتھا کہ میرے سننے میں یہ بھی بات آئی ہے کہ آگ بجھ گئی تھی لیکن کچھ نقاب پوش افراد آئے جس کے بعد یہ آگ دوبارہ لگ گئی۔ انھو ں نے یہ انکشاف کیا کہ اگر تو یہ بات درست ہے تو پھر سی پیک کا ریکارڈ جلائے جانے کا خدشہ بھی خارج از امکان نہیں ہے۔ انھوں نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے مطالبہ کیا ہے کہ واقعے کی کڑی تحقیقات کی جائیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved