ایک ایسی مشین تیار جو دیکھتے ہی دیکھتے انسانی لاشوں کو قدرتی کھاد میں بدل دیتی ہے،سائنسدان
  8  مارچ‬‮  2017     |     سائنس/صحت
سٹاک ہوم(روزنامہ اوصاف ) انسانی تاریخ کے ہر دور اورہرتہذیب میں مرنے والوں کو دنیا سے رخصت کرنے کےلئے مخصوص رسوم ورواج رائج رہے ہیں۔ کوئی اپنے مرنے والوں کو عزت وتکریم کےساتھ دفن کرتا ہے تو کوئی آگ میں جلا کر بھسم کردیتا ہے ۔ جبکہ کچھ مذاہب کے ماننے والے اپنے مردوں کو بلند ستونوں پر چیل کوئوں کی خوراک بننے کےلئےبھی چھوڑ دیتے ہیں ۔ یہ سب روایات اپنی جگہ لیکن جدید ٹیکنالوجی کے دور میں ماحولیاتی آلودگی سے پریشان سائنسدانوں نے مرنے والوں کو دنیا سے رخصت کرنے کا ایک ایسا طریقہ ایجاد کرلیا ہے کہ جس کے بارے میں سن کر ہرکوئی دنگ رہ گیا ہے ۔ دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق سویڈن سے تعلق رکھنے والی خاتون سائنسدان اورماہر حیاتیات سوزان وی ماساک کا کہنا ہے کہ انہوں نے تین سال کی تحقیق کے بعد ایک مشین تیار کی ہے جو دیکھتے ہی دیکھتے انسانی لاشوں کو قدرتی کھاد میں بدل دیتی ہے، جسے فصلوں کو ہربھرا اورتوانا رکھنےلئے استعمال کیاجاسکتا ہے ۔ ان کی ایجاد کا نام پرومیشن ہے ۔ جسے انسانی لاشوں کو قدرتی کھاد میں تبدیل کرنےوالی بہترین اورکامیاب ترین مشین قراردیا جارہا ہے

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
10%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
10%
پسند ںہیں آئی
80%



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved