ایک منٹ میں تین بار چھینکنے کی انوکھی بیماری میں مبتلا برطانوی لڑکی
  10  مارچ‬‮  2017     |     سائنس/صحت

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) بسا اوقات ایساہوتا ہے کہ کوئی شخص کسی پراسرار بیمارئی کا شکار ہوجاتا ہے ۔بہت زیادہ علاج معالجے کے باوجود اس کے مرض کی تشخیص نہیں ہو پاتی ۔ایسا ہزاروں افراد میں سے کسی ایک کے ساتھ ہوتا ہے مگر جس کےساتھ ہوتا ہے وہ اور اس کے آس پاس لوگ اذیت میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔سکول جانے والی ایک لڑکی کو کسی پراسرار بیماری کے باعث ایک منٹ میں 20 اور ایک دن میں 12 ہزار سے زائد چھینکیں آتی ہے۔ اس بیماری کے باعث وہ مستقل تکلیف میں متبلا رہنے لگی ہے۔ 12 سالہ کیٹلین تھورنلے پچھلے ایک ماہ سے ہر منٹ میں 20 بار چھینکتی ہے۔ اس نے 6 ڈاکٹروں کو دکھایا مگر کوئی بھی اتنی زیادہ چھینکوں کی وجوہات نہیں بتا پایا۔ڈاکٹروں کو یقین ہے کہ کیٹلین کو آنے والی چھینکیں کسی وائرس یا الرجی کا نتیجہ نہیں۔ کیٹلین کی چھینکیں صرف اس وقت بند ہوتی ہے جب وہ سو رہی ہو۔ یہ سائنسی حقیقت بھی ہے کہ سوتے ہوئے کسی کو چھینک نہیں آتی۔ کیٹلین کو سونے میں بھی کافی مشکلات پیش آتی ہیں، وہ اپنا پسندیدہ میوزک سنتے ہوئے اورچھینکتے ہوئے سونے کی کوشش کرتی ہے۔کیٹلین کا کہنا ہے کہ اسے بس اچانک ایک چھینک آئی اور پھر وہ بس چھینکتی ہی رہی۔کیٹلین کا کہنا ہے کہ اتنا زیادہ چھینکنے کی وجہ سے اس کے پیٹ میں درد ہو جاتا ہے، ٹانگوں کو تکلیف ہوتی ہے، اس نے بتایا کہ میں اتنی کمزور ہو گئی ہوں کہ کچھ کھا بھی نہیں سکتی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved