باتھ روم میں موبائل چارج کرنا لڑکی کی جان لے گیا
  14  جولائی  2017     |     سائنس/صحت

لونگٹن(ویب ڈیسک)نیومیکسیکو سے تعلق رکھنے والی میڈیسن پچھلے اتوار کو موبائل فون کے ایک حادثے میں وفات پا گئیں۔ میڈیسن نے باتھ ٹب میں بیٹھے ہوئے باتھ روم کے ساکٹ میں چارج پر لگا ہوا موبائل ہاتھ میں لیا تو اسے زور کا کرنٹ لگا۔ یہ کرنٹ پانی میں بھی پھیل گیا، جس سے میڈیسن موقع پر ہی وفات پاگئیں۔میڈیسن کی وفات کے بعد اُن کی فیملی کی کوشش ہے کہ اس طرح کا حادثہ کسی دوسرے شخص کے ساتھ نہ ہو۔میڈیسن کی فیملی نے اس حوالے سے آگاہی کی مہم شروع کی ہے۔ مہم کا مقصد لوگوں کو باتھ روم میں موبائل چارج کرنے کے خطرات سے آگاہ کرنا ہے

۔اس حوالے سے میڈیسن کی فیملی اپنا فیس بک اکاؤنٹ استعمال کرتے ہوئے ایک پیغام پھیلا رہی ہے۔ پیغام میں کہا گیا ہے کہ چاہے آپ کا فون IP67 یا IP68 سرٹیفائیڈ یعنی واٹرپروف ہو، تب بھی اسے باتھ روم میں یا شاور لیتے ہوئے استعمال نہ کریں۔اگر مجبوری میں ایسا کرنا ضروری ہوتا تو اس بات کی یقین دہائی کریں کہ موبائل چارج پر نہیں لگا ہوا۔آپ کو ایک ایسے فیچر کو آزمانے کے لیے اپنی زندگی کو خطرے میں نہیں ڈالنا چاہیے، جس کے لیے کمپنی نے بھی گارنٹی نہ دی ہو۔ اگر آپ کے گھر میں چھوٹے بچے ہوں تو چھوٹی عمر سے ہی اُنہیں بتائیں کہ بجلی اور پانی ایک ساتھ مل کر جان لیوا ہوتے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
100%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved