"ماں کا دودھ" بازار میں بکنے والی شیر خوار بچوں کی خوراک پر کیا لکھنے کی پابندی عائد کر دی گئی
  31  اگست‬‮  2017     |     سائنس/صحت

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی پنجاب نور الامین مینگل نے بچوں کی خوراک میں غذائی اجزا کے مقررہ تناسب پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کےلئے اہم اقدام اٹھا لیا ہے۔انھوں نے ے محکمہ ہیلتھ کے بریسٹ فیڈنگ پروٹیکشن اور نوزایدہ بچوں کی خوراک کے حوالے سے کام کرنے والے یونٹ سے ملاقات کی ۔ملاقات میں پنجاب فوڈ اتھارٹی اور محکمہ ہیلتھ کی طرف سے بچوں کی غذا خصوصا فارمولا ملک کے حوالے سے بنائے گئے

قوانین اور ان پر عمل درآمد پر تفصیلی گفتگو کی گئی۔انھوں نے سختی سے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ بچوں کے دودھ کی 100 گرام مقدار میں کم سے کم پروٹین 1.8 جبکہ ذیادہ سے ذیادہ 3.8 رکھی جائے۔ ملاقات میں بچوں کی غذا بنانے والی تمام کمپنیوں کو ہدایات جاری کی گئیں کہ طے شدہ ڈیڈ لائن کے بعد ڈبوں پر "یہ ماں کے دودھ کا متبادل نہیں ہے" لکھنے کی پابندی پر عمل درآمد یقینی بنائیں اور ہسپتالوں کی حدود میں بچوں کی متبادل غذا کی مارکیٹنگ پر بھی مکمل پابندی لگائی جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved