انسٹاگرام اسٹوریز اب فیس بک پر شیئرکرنا ہوگا ممکن
  7  ستمبر‬‮  2017     |     سائنس/صحت

فیس بک کی پوری کوشش ہے کہ اس کی موبائل ایپ پر لوگ اسٹوریز کو دیکھنا شروع کردیں اور ایسا کرنے کے لیے اب وہ انسٹاگرام کا استعمال کرنے والی ہے جس میں یہ فیچر بہت زیادہ کامیاب ثابت ہوا ہے۔ انسٹاگرام نے ایک نئے فیچر کی آزمائش شروع کردی ہے جو لوگوں کو اس فوٹوشیئرنگ ایپ پر اپنی اسٹوری ڈائریکٹ فیس بک پر شیئر کرنے کا موقع فراہم کرے گا۔محدود تعداد میں صارفین کو دستیاب اس آپشن میں انسٹاگرام میں ان ایپ کیمرہ سے لی جانے والی تصاویر اور ویڈیوز کو فیس بک اسٹوری میں شیئر کیا جاسکتا ہے جبکہ انسٹاگرام اسٹوری بھی فیس بک پر لگائی جاسکتی ہے۔انسٹاگرام کے ایک ترجمان نے اس فیچر کی آزمائش کی تصدیق کی ہے تاہم اس حوالے سے مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا۔ترجمان کا کہنا تھا ' ہم انسٹاگرام کے تجربے کے بہتر بنانے کے لیے ہمیشہ مختلف فیچرز آزماتے رہتے ہیں تاکہ لوگوں کے لیے اپنے قیمتی لمحات کو شیئر کرنے میں آسانی ہو، تاہم اس حوالے سے تفصیلات ابھی شیئر نہیں کی جاسکتیں'۔ویسے یہ کافی غیرمعمولی ہے کہ انسٹاگرام فیس بک کے ساتھ اتنی

قریبی شیئرنگ کررہی ہو کیونکہ روایتی طور پر یہ دونوں الگ ایپس کے طور پر کام کرتی ہیں۔مگر یہ بھی واضح ہے کہ اسنیپ چیٹ کے اہم ترین فیچر اسٹوریز میں فیس بک کی دلچسپی کوئی راز نہیں جو کہ جارحانہ انداز میں اسے اپنی ایپس میں پیش کررہی ہے۔ایک سال قبل اسے سب سے پہلے انسٹاگرام کا حصہ بنایا گیا جس کے بعد میسنجر، واٹس ایپ اور فیس بک کی اپنی ایپ میں بھی شامل کردیا گیا۔واٹس ایپ اور انسٹاگرام میں تو یہ فیچر کامیاب ثابت ہوا مگر فیس بک کی مین ایپ میں ناکام ہوگیا تاہم اب سوشل نیٹ ورک کو توقع ہے کہ انسٹاگرام اسٹوریز کو فیس بک پر لانے سے اسے کامیابی مل سکے گی۔اس وقت پچیس کروڑ سے زائد افراد روزانہ انسٹاگرام اسٹوریز فیچر کو استعمال کررہے ہیں۔اس وقت فیس بک پر اس فیچر کے صارفین کی تعداد نہ ہونے کے برابر ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved