سلوواکیا میں دنیا کا پہلا موبائل فون میوزیم قائم
  8  ستمبر‬‮  2017     |     سائنس/صحت

ڈوبسینا(ویب ڈیسک)بین الاقوامی مارکیٹ میں ہر ماہ نت نئے اسمارٹ فونز متعارف ہونے کا سلسلہ جاری ہے، ایسے میں سلوواکیا سے تعلق رکھنے والا ٹیکنالوجی کا شوقین ایک شخص ایسا بھی ہے جس نے لوگوں کو ماضی کی سیر کرانے کے لیے پرانے موبائل فونز کا میوزیم تیار کر رکھا ہے۔اس میوزیم میں موبائل کی وہ بے شمار اشکال موجود ہیں جن سے ہوتے ہوئے اس وائر لیس ایجاد نے موجودہ جدید شکل اختیار کی۔سلوواکیا سے تعلق رکھنے والے آن لائن مارکیٹنگ اسپیشلسٹ 26 سالہ اسٹیفن پولگاری کے پاس موجود کئی موبائل فونز ایسے بھی ہیں جو ریلیز کے وقت آج کے کمپیوٹرز سے مہنگے تھے اور لوگ انہیں خریدنے کی استطاعت نہیں رکھتے تھے۔اسٹیفن پولگاری نے موبائل فونز اکھٹا کرنے کا آغاز دو سال قبل کیا اور اب ان کے پاس 1500 ماڈلز موجود ہیں جبکہ ان فونز کی نقول کو ملا کر یہ تعداد 3500 ہے۔

ڈوبسینا کے چھوٹے سے مشرقی شہر میں واقع اسٹیفن کے گھر کے دو کمرے اس میوزیم کے لیے مختص ہیں اور ان موبائل فونز کو دیکھنے کے خواہشمند افراد اپوائنٹمنٹ لینے کے بعد یہاں آسکتے ہیں۔اسٹیفن کے کلیکشن میں حال ہی میں دوبارہ ریلیز ہونے والے نوکیا 3310 سے لے کر 20 سال پرانا سیمنز کا فون بھی موجود ہے جو اب بھی بالکل ٹھیک کام کرتا ہے۔اپنی تنخواہ سے دو گنا مہنگا یہ فون انہوں نے سلوواکیا کی مقامی کرنسی میں 23 ہزار کا خریدا تھا۔اسٹیفن کے مطابق، ان کے پاس موجود فونز ڈیزائن اور ٹیکنالوجی کے وہ شاہکار ہیں جو اسمارٹ فونز کے برعکس ہمارا وقت نہیں چرایا کرتے تھے۔فون جمع کرنے کے شوقین اس شخص کے لیے یہ کہنا تو مشکل ہے کہ کونسا فون سب سے قیمتی ہے لیکن وہ نوکیا 350 آئی کے اسٹار وارز ایڈیشن کو سب سے زیادہ پسند کرتے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سائنس/صحت

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved