برقع پوش خاتون نے ویڈیو بنا کر وقار ذکا کا بھانڈا پھوڑ دیا
  16  فروری‬‮  2017     |      شوبز
کراچی(روزنامہ اوصاف)پاکستانی اینکر وقار ذکا اور جنید خان کی لڑائی اور صلح کے حوالے سے نیا موقف سامنے آگیا ،پاکستانی خاتون کا کہنا ہے کہ وقار ذکا اور جنید خان نے مشہور ہونے کے لیے لڑائی اور پھر صلح کا ڈرامہ رچا یا ۔شہر قائد میں کچھ ہفتے قبل وقار ذکا کے جھگڑے کی ویڈ یو سوشل میڈ یا پر وائرل ہوئی تھی جس کے بعد نہ صرف سوشل میڈ یا پر ہنگامہ برپا ہو گیا تھا بلکہ کراچی پولیس کی بھی دوڑیں لگ گئی تھیں ۔اس لڑائی کے حوالے سے مختلف خبریں بھی سامنے آئیں تاہم اس معاملے کا ڈراپ سین اس وقت ہوا جب وقار ذکا اور جنید خان نے آپس میں دوستی کر لی تھی ۔اب اس حوالے سے ایک پاکستانی خاتون نے سوشل میڈ یا پر ویڈ یو پیغام جاری کیا اور بتا یا کہ میں وقار ذکا ،عمائمہ سہیل اور دعاجنجوعہ کو جانتی ہوںاور یہ تینوں بھی ایک دوسرے کوبہت اچھی طرح جانتے ہیں ۔آپ لوگ وقار ذکا اور جنید خان کے ہاتھوں بہت زیادہ بے وقوف بنے ہیں ۔جنید خان کا پراڈکشن ہاوس ہے اور وہ فلمیں بناتا ہے ۔جنید خان نے اپنی مشہوری کے لیے وقار ذکا کی خدمات حاصل کیں ۔خاتون نے کہا کہ وقار ذکا لوگوں سے پیسے لے کر ان کی سوشل میڈ یا پر پبلسٹی کرتا ہے،اسی طرح وقار ذکا نے جنید خان کو ایک ہفتے میں اتنا مشہور کردیا کہ اب اس کی پراڈکشن سے جو بھی فلم ریلیز ہو گی اسے دیکھنے سب جائیں گے ۔اس نے بتا یا کہ وقار ذکا نے چھ مہینے تک سوشل میڈ یا ویب سائٹ سنیپ چیٹ پر عمائمہ کی پلسٹی کی اور اس سے پیسے حاصل کیے ،بعد ازاں عمائمہ کی مزید پبلسٹی کرنے کے لیے وقار ذکا نے منفی پبلسٹی کا منصوبہ بنا یا ۔اس کے بعد وقار ذکا نے عمائمہ کے بارے میں کچھ منفی باتیں کیں اور اس کے فالوورز میں اضافہ ہو گیا ۔اس نے کہا کہ جس طرح عمائمہ کو مشہور کیا اسی طرح جنید خان اور اس کے پراڈکشن ہاوس کو مشہور کرنے کے لیے بھی وقار ذکا نے یہ ہی طریقہ اختیار کیا :-

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
50%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
25%
پسند ںہیں آئی
25%



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

شوبز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved