موسیقی حرام ہے ۔۔ انڈین آئڈل کی مسلمان گلوکارہ ناہید آفرین کیخلاف فتویٰ جاری کردیا گیا
  15  مارچ‬‮  2017     |      شوبز

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ریاست آسام سے تعلق رکھنے والے 46 علماء نے ابھرتی ہوئی گلوکارہ ناہید آفرین کیخلاف فتویٰ جاری کیا ہے۔ فتویٰ میں کہا گیا ہے کہ موسیقی کے کنسرٹس اور گانے گانا شریعت کیخلاف اور حرام ہے۔ بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ناہید آفرین نے 25 مارچ کو آسام کے علاقے لنکا کے ایک کالج کے کنسرٹ میں پرفارم کرنا ہے، علماء نے اسی بات سے ناراض ہو کر ناہید آفرین اور منتظمین کے خلاف کل فتوی جاری کیا گیا ہے۔ فتوے میں لکھا گیا ہے کہ موسیقی اور گانے بجانے کے پروگرامز مکمل طور پر شریعت کیخلاف ہیں۔خیال رہے کہ ناہید آفرین 2015ء کے انڈین جونیئر آئیڈل میں رنر اپ رہی تھیں۔ ان کی گلوکاری کو بہت زیادہ سراہتے ہوئے انھیں مستقبل کی کامیاب گلوکارہ قرار دیا جا رہا ہے۔ انہوں نے سوناکشی سنہا کی فلم اکیرا میں بھی اپنی گلوکاری کے جوہر دکھائے ہیں۔ علماء کی جانب سے فتوے کا جواب دیتے ہوئے ناہید آفرین نے کہا ہے کہ میں کسی سے نہیں ڈرتی، میں دھمکیوں سے ڈر کر موسیقی نہیں چھوڑ سکتی۔ دوسری جانب پولیس نے فتوے کا نوٹس لیتے ہوئے اس پر تفتیش شروع کر دی ہے۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ناہید آفرین نے حال ہی میں دہشت گرد تنظیم داعش کیخلاف نغمے گائے تھے، ہم اس فتوے کو اس تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

شوبز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved