بریکنگ نیوز مومنہ مستحسن مسلمان نہیں بلکہ کس مذہب سے تعلق رکھتی ہیں ؟ پاکستانی مداح حیرت کے شدید جھٹکے کیلئے تیار ہو جائیں 
  22  ستمبر‬‮  2017     |      شوبز

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)اداکارہ ماہرہ خان کی رنبیر کپور کے ساتھ منظر عام پر آنے والی تصویروں کے بعد وہ تنقید کی زد میں ہیں ، ایسے میں شوبز کی کچھ شخصیات ماہرہ خان کی ڈھارس بندھانے کی کوشش کرر ہی ہیں،ایسی ہی ایک کوشش گلوکارہ مومنہ مستحسن نے بھی کی لیکن وہ الٹا خود ہی تنازعہ میں پھنس گئیں۔ماہرہ خان کی تصاویر منظر عام پر آنے کے بعد مومنہ مستحسن نے فوری رد عمل دیا اور کہا ”جیسس ، برائے مہربانی کیا ہم ماہرہ خان کو تھوڑا سا سنبھلنے کا موقع دیں گے؟ہم کسی کو پرکھنے اور اس پر تنقید میں اتنی جلد بازی کیوں کرتے ہیں؟ بالخصوص اس وقت جب یہ ایک خاتون سے متعلق ہو، یہ ماہرہ کی اپنی زندگی ہے“۔مومنہ مستحسن کی جانب سے اپنے ٹویٹ میں جیسس کا نام استعمال کرنے پر سوشل میڈیا صارفین خاصے برہم نظر آئے کیونکہ جیسے مسلمان یا اللہ ، یا خدا پکارتے ہیں اسی طرح عیسائی مشکل صورتحال میں حضرت عیسیٰؑ کا نام لیتے ہوئے

’ جیسس‘ کہتے ہیں۔مومنہ مستحسن کے ٹویٹ پر کمنٹ کرتے ہوئے پاکستانی نے جیسس کا نام استعمال کرنے پر سوال اٹھایا اور کہا ” عیسائی سے زیادہ آپ خود کو انگریز ثابت کرنے کی کوشش کر رہی ہیں، ویسے بھی آپ ہر وقت انگریزی میں ہی بات کرتی ہیں“۔بلال محمود نے بھی جیسس کا نام لینے کو مغرب سے مشابہت قرار دیا ۔توصیف احمد رحمان نے کہا ” کیا آپ نے جیسس کہا؟ بس اب آپ انتظار کریں کیونکہ تنازعہ شروع ہوا چاہتا ہے“۔شعیب حسن نے جیسس کا نام لینے پر سوال اٹھایا کہ کیا مومنہ غیر مسلم ہیں؟۔’پاگل پن کی حد تک شیطان‘ نامی صارف نے مومنہ مستحسن کو مشورہ دیا کہ وہ اللہ سے دعا کرنے کی کوشش کریں وہ ان کی دعاؤں کا ضرور جواب دے گا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
25%
ٹھیک ہے
6%
کوئی رائے نہیں
19%
پسند ںہیں آئی
50%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

شوبز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved