احمد شہزاد نے قومی کرکٹ ٹیم میں واپسی کی پھر امید باندھ لی
  8  جنوری‬‮  2017     |      سپورٹس
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان کے اوپنر بیٹسمین باز احمد شہزاد نے قومی کرکٹ ٹیم میں واپسی کی پھر امید باندھ لی ،اوپننگ بلے باز کا کہنا ہے کہ وہ مکمل فٹ ہیں اور اپنی کرکٹ پر فوکس کر رہے ہیں ، بہت سی باتوں کا جواب دینے کا سوچا لیکن کسی متنازعہ بات میں نہیں پڑنا چاہتا ، ڈیڑھ سالوں کے دوران بہت سے لوگوں کا پتہ چل گیا، کیئریر میں اپ اینڈ ڈاون آتے رہے ہیں ، آسٹریلیا کی پچز فلیٹ تھی ، ٹیسٹ سیریز میں بہت سی غلطیاں ہوئی ،اسلام آباد کا ماحول اور پلیئرز دونوں بہت اچھے ہیں ۔ اتوار کو ڈائمنڈ کرکٹ گراونڈ اسلام آباد میں پی سی بی ویجنل ون ڈے کرکٹ ٹورنامنٹ کے پہلے راونڈ میں راولپنڈی کیخلاف اسلام آباد کی نمائندگی کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے احمد شہزاد کا کہنا تھا کہ وہ اسلام آباد ریجن کی جانب سے پہلی مرتبہ نمائندگی کر رہے ہیں ، یہاں کی کنڈیشن اور کھلاڑیوں دونوں بہت اچھے ہیں ، میں مکمل فٹ ہوں اور اپنی کرکٹ پر فوکس کر رہاں ہوں جبکہ اب کسی متنازعہ بات میں نہیں پڑنا چاہتا ۔ احمد شہزاد نے کہاکہ ڈیڑھ سالوں کے دوران بہت سے لوگوں کا پتہ چل گیا، اپنی فٹنس کو بہتر بنانے کیلئے ٹرینر کی خدمات لی ، اپنی پرفارمنس سے قومی ٹیم میں واپسی کیلئے پر امید ہوں ، ایک سوال کے جواب میں احمد شہزاد کا کہنا تھا کہ کیئریر میں اپ اینڈ ڈاون آتے رہے ہیں ،مصباح الحق نے کیرئیر میں بہت راہنمائی اور اعتماد دیا ، میں نے ایمانداری کیساتھ پاکستان کی نمائندگی کی جبکہ پاکستان کیلئے جان بھی حاضر ہے، ان کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا کی پچزفلیٹ تھی ، ٹیسٹ سیریز میں بہت سی غلطیاں ہوئی ، سب تو پتہ ہے کہ غلطیاں کہاں ہوئی ، ہمیں اپنے آپ کو انفرادی طور پر دیکھنا ہوگا ۔احمد شہزاد ایک سال سے قومی اسکواڈ سے آوٹ ہے ۔احمد شہزاد 11ٹیسٹ ، 75ون ڈے اور44ٹی ٹوئنٹی میچز میں پاکستان کی نمائندگی کر چکے ہیں ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 



 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سپورٹس

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved