اولمپک تمغہ جیتنے والی امریکی مسلمان کو بھی روک لیا گیا
  15  فروری‬‮  2017     |      سپورٹس

واشنگٹن (روزنامہ اوصاف)ابتہاج محمد نے گزشتہ سال ریو اولمپکس میں اس وقت تاریخ رقم کی جب انہوں نے امریکی تاریخ کی پہلی باحجاب مسلمان خاتون کے طور پر مقابلوں میں حصہ لیا اور شمشیر زنی میں کانسی کا تمغہ بھی جیتا۔ لیکن 31 سالہ ابتہاج کا کہنا ہے کہ انہیں ہوائی اڈے پر دو گھنٹے تک حراست میں رکھا گیا تھا۔ انٹرویو کے دوران جب ابتہاج سے سوال کیا گیا کہ کیا وہ کسی کو ذاتی طور پر جانتی ہیں جو نئے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ایگزیکٹو آرڈر کے نتیجے میں متاثر ہوا ہو؟ اس حکم نامے کے بعد 7 مسلم اکثریتی ممالک کے باشندوں کے امریکا میں داخلے پر پابندی لگ گئی تھی۔ تو جواب میں ابتہاج کا کہنا تھا کہ "ابھی کچھ ہفتے پہلے مجھے دو گھنٹے تک کسٹمز کی جانب سے روکا گیا ہے۔ مجھے نہیں معلوم کیوں۔ شاید اس لیے کہ میں مسلمان ہوں اور ایک عربی نام رکھتی ہوں۔ میں نے امریکا کی نمائندگی کی، اس کے لیے تمغہ جیتا، لیکن میرا حلیہ اور اس بارے میں لوگوں کا تاثر اس تمغے سے بھی تبدیل نہیں ہوا۔"انہوں نے مزید کہا کہ "بدقسمتی سے بات تو سات ممالک کی کی جا رہی ہے لیکن میرے خیال میں اس جال میں اور بہت لوگ پھنسیں گے۔ میں بھی ان میں شامل ہوں کیونکہ میں مسلمان ہوں اور حجاب کرتی ہوں۔" ابتہاج نے مزید کہا کہ "یہ واقعہ اتنا پریشان کن تھا کہ میرے آنسو نکل آئے، میں بہت غم زدہ، پریشان، دل شکستہ اور مایوس تھی۔"


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

سپورٹس

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved