برما سے ہجرت کرنے والے مسلمانوں کو معذور بنانے کےلئے کیا کیا جا رہاہے؟؟تشویشناک خبر
  13  ستمبر‬‮  2017     |     دنیا

ینگون(مانیٹرنگ ڈیسک )میانمار سے نقل مکانی کرنے والے متعددروہنگیا مسلمان بارودی سرنگ سے ٹکرا کر شدید زخمی اورمعذور ہوگئے،برطانوی ٹی وی نے ان روہنگیا مسلمانوں سے بات چیت کی ہے جو میانمار میں ہونے والے تشدد سے بھاگتے ہوئے بظاہر فوج کی جانب سے بچھائی گئی بارودی سرنگوں سے زخمی ہوئے ۔بنگلہ دیش میں ایسے ہی ایک 15 سالہ بچے کا علاج کیا جارہا ہے جو اپنی دونوں ٹانگوں سے محروم ہوچکا ہے۔اسی ہسپتال میں ایک خاتون کا کہنا تھا کہ جب اس پر اور اس کے خاندان پر فائرنگ کی گئی تو ایک بارودی سرنگ پر گر گئی۔ڈاکٹروں کا بھی کہنا تھا کہ ارودی سرنگوں سے زخمی ہونے والے افراد زیادہ آرہے ہیں۔15 سالہ لڑکے عزیزو حق کی دونوں ٹانگیں

بھی بری طرح زخمی تھیں۔ ان کی والدہ کا کہنا تھا کہ اس کے بھائی کا بھی یہی حال ہے جو ایک دوسرے ہسپتال میں زیر علاج ہے۔انھوں نے بتایاکہ ان کے زخم اتنے شدید تھے کہ جیسے وہ مر گئے ہوں۔ یہی اچھا ہوتا اگر اللہ انھیں بلا لیتا، وہ بہت تکلیف میں ہیں۔ایک اور زخمی خاتون سابقر نہار نے بتایا کہ انھوں میانمار چھوڑا کیونکہ فوج ان کی برادری کو نشانہ بنا رہی تھی، اور وہ ایک بارودی سرنگ کا نشانہ بنیں جب وہ اپنے تین بچوں کے ساتھ سرحد عبور کر رہی تھیں۔عزیزو حق کا جسم ایک دھماکہ میں زخمی ہوا، ان کی ٹانگیں ضائع ہوچکی ہیں اور پیٹ کے کچھ حصے بھی زخمی ہیں۔ ان کے ڈاکٹر نے جب ان کی جان بچانے کے بارے میں بات کی تو وہ واضح طور پر جذباتی تھے، انھیں اس بارے میں زیادہ امید نہیں رکھتے۔ عزیزو کا خون جس قسم ہے وہ ملنا مشکل ہے، اور ہسپتال میں بلڈ بینک بھی نہیں، اور خون عطیہ کرنے والوں کی کمی ہے۔اس کے ساتھ والے وارڈ میں سابقر نہار ہیں۔ وہ کہتی ہیں کہ انھوں نے اپنے تین بچوں کے پیچھے پیچھے میانمار کی سرحد عبور کی تھیں جو بغیر کسی چوٹ کے پار چلے گئے تھے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

دنیا

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved