09:17 am
شریف خاندان پر85 ارب کی منی لانڈرنگ کا الزام!

شریف خاندان پر85 ارب کی منی لانڈرنگ کا الزام!

09:17 am

٭حمزہ شہباز کی گرفتاری کے لئے گھر پر نیب کا چھاپہ، نیب کی ٹیم مار کھا کر واپس، دوبارہ گھر کا محاصرہO شریف فیملی:85 ارب کے غیر قانونی اثاثے، 2000 فیصد اضافہ
٭حمزہ شہباز کی گرفتاری کے لئے گھر پر نیب کا چھاپہ، نیب کی ٹیم مار کھا کر واپس، دوبارہ گھر کا محاصرہO شریف فیملی:85 ارب کے غیر قانونی اثاثے، 2000 فیصد اضافہ O ملک صدارتی نظام کی طرف جا رہا ہے، ایک رپورٹ O میں حکومت گرانے اسلام آباد آ رہا ہوں، زرداری O بسم اللہ! تشریف لایئے، کھانا دوں گا، کنٹینر بھی ملے گا:عمران خان۔ ملائیشیا کے زیرحراست سابق وزیراعظم نجیب رزاق نے قومی خزانے کے 68 کروڑ ڈالر لوٹ لئے O پورے ملک کے رائونڈ کے بعد اسلام آباد پر دھاوا بول دوں گا:فضل الرحمنO فاروق ستار، عدالت کا 500 روپے جرمانہ!
٭نیب کی ایک ٹیم نے جمعہ کے روز لاہور میں سابق وزیراعلیٰ شہبازشریف کی ذاتی رہائش گاہ -96 ایچ ماڈل ٹائون پر شہباز شریف کے بیٹے، پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز شریف کو گرفتارکرنے کے لئے چھاپہ مارا۔ شہباز شریف کے سکیورٹی گارڈوں نے نیب ٹیم کی پٹائی کر دی، نیب کے مطابق چھاپہ مار ٹیم کے کپڑے پھاڑ دیئے، نیب نے تھانہ میں مقدمہ درج کرا دیا۔ اگلے روز ہفتہ کے دن نیب کی ٹیم پولیس کی بھاری تعداد کے ساتھ پھر گھرپر پہنچ گئی اور گھر کا چاروں طرف سے محاصرہ کر لیا۔ ن لیگ کے ارکان سے شدید ہاتھا پائی ہوئی۔ دوسری طرف حمزہ شہباز نے ہائی کورٹ میں درخواست دائر کر دی کہ نیب کا گرفتاری کا وارنٹ غیرقانونی ہے، اسے گرفتاری سے تحفظ حاصل ہے۔ نیب کا اعلان کہ ہر حالت میں گرفتاری کرنی ہے۔ شریف خاندان کے ذرائع کا جواب کہ گرفتاری دیں گے۔ کالم کی تحریر تک ’مذاکرہ‘ جاری تھا۔ باقی خبر اخبار میں دیکھ لیں۔ گرفتاری کی وجہ اثاثوں میں بے پناہ اضافہ اور…اور…آصف زرداری جیسی منی لانڈرنگ!
٭نیب کے پریس ریلیز کے مطابق شریف خاندان کے اثاثوں میں 10 سال کے اندر دو ہزار فیصد اضافہ ہوا ہے۔ حمزہ شہباز کے پاس 2003ء میں دو کروڑ روپے کے اثاثے تھے، (2013ء میں 32 کروڑ) 2018ء میں 42 کروڑ ہو گئے۔ نیب کے مطابق اثاثوں میں بے پناہ اضافہ والد شہباز شریف کے وزیراعلیٰ پنجاب بننے کے بعد ہوا (شہباز کے اثاثے بھی 10 کروڑ سے 28 کروڑ ہو گئے) حمزہ کے چھوٹے بھائی سلمان شہباز کے اثاثوں کی روداد تو بہت ہی مختلف ہے۔ اس کے اثاثوں میں 8500 فیصد اضافہ ہوا۔ اس وقت تین ارب روپے کے اثاثوں کا مالک ہے۔ وہ ملک سے باہر جا چکا ہے (نیب کے باعث؟)
٭نیب اور شریف خاندان کے بلی چوہے والے اس کھیل کے انجام کی تفصیل اب تک خبروں میں آ چکی ہو گی۔ معاملہ دونوں طرف سے سمجھ میں نہیں آ رہا۔ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو نیب نے جب بھی بلایا، وہ بلاتاخیر حاضر ہو گئے، ہر سوال کا جواب دیا۔ اسی سوال و جواب کے دوران شہباز شریف کو ایک کیس میں بلایا، وہ آئے تو کسی دوسرے کیس میں گرفتار کرلیا (اب ضمانت پر) اسی طرح حمزہ شہباز کو جب بھی بلایا، وہ حاضر ہو گیا۔ اسے بھی بلا کر گرفتار کر لیتے، گھر پر دھاوا بولنے کی کیا ضرورت تھی؟ حمزہ کا نام ای سی ایل میں شامل ہے۔ ملک سے باہر نہیں جا سکتا، اس نے کہاں جانا تھا؟ مگر نیب کا چلن ہی بگڑا ہوا ہے۔ گھر پر جا کر دیواریں پھاندنا شروع کر دیں، پھر گارڈز سے مار کھا کر واپس بھاگ آئے اور اگلے دن پولیس کی بھاری تعداد کے ساتھ پھراسی جگہ پہنچ گئے۔ دوسری طرف حمزہ کا رویہ بھی سمجھ میں نہیں آ رہا۔ نیب والے آئے تھے تو ضمانت نامہ دکھا دیا جاتا، وہ مطمئن نہ ہوتے تو دوسرے سیاست دانوں کی طرح خاموشی سے ساتھ چلے جاتے،عدالت سے رجوع کرتے، گرفتاری غیر قانونی قرار پاتی تو رہا ہو کر گھر چلے جاتے،مگر ایک قانون ساز وزیراعلیٰ کا بیٹا قانون کا کیا احترام کر رہا ہے؟۔ ستم یہ کہ نیب کی پٹائی کے وقت حمزہ شہباز کے قانون ساز والد شہباز شریف بھی حمزہ کے پاس موجود تھے۔! قانون کے محافظوں کا یہ حال! تو پھر عوام کا اللہ ہی حافظ! ۔اصل مسئلہ یہ بنا ہے کہ نیب نے شریف خاندان کے دو خدمت گار قاسم قیوم اور فضل داد منی لانڈرنگ کے الزام میں گرفتار کئے۔ وہ بے چارے تھوڑی سطح کے لوگ، چار چوٹیں نہ سہہ سکے اور اُگل دیا کہ آصف زرداری کی طرح شریف خاندان نے بھی وسیع پیمانے پر اربوں کی منی لانڈرنگ کی ہے۔ ان دونوں نے متعدد دستاویزات بھی پیش کر دیں۔ سو چل سو چل!
٭مجھے ملائیشیا کاایک وزیراعظم یاد آ گیا ہے۔ مہاتیر محمد نے وزیراعظم کے طور پر انتہائی مشکل حالات میں ملائیشیا کو زبردست ترقی اور استحکام دیا۔ انہوں نے اقتدار چھوڑتے وقت اپنے نائب نجیب رزاق کو وزیراعظم نامزد کر دیا۔ اس شخص نے اس عہدہ پر آ کر اندھیر مچا دیا۔ بالآخر اس طرح کے دوسرے وزیراعظم کی طرح بالآخر وہ بھی قید ہوا تو سنسنی خیز انکشافات سامنے آئے یہ کہ اس نے قومی خزانے کے ایک بڑے پراجیکٹ کی آڑ میں قومی خزانے کے 68 کروڑ ڈالر اپنی جیب میں ڈال لئے لندن و امریکہ میں فلیٹس خریدے ذاتی تفریح کے لئے سرکاری فنڈ سے 25 کروڑ ڈالر کی ایک شاہانہ کشتی خریدی، اس میں سوئمنگ پول، سینما گھر بھی تھا۔ اس پر ہیلی کاپٹر اترتا تھا۔ اس کے گھر کی تلاشی لی گئی تو دو کروڑ 86 لاکھ ڈالر نقد اور سامان تعیش کی بھری بے شمار ٹرالیاں نکلیں۔ بیوی دو ہاتھ آگے نکلی۔ ہیرے جواہرات والے 500 اعلیٰ ہینڈ بیگ، سینکڑوں گھڑیاں، 27 کروڑ کے 12 ہزار زیورات،! آخر کار وہی انجام، دونوں میاں بیوی گرفتار، ہر چیز ضبط۔25 کروڑ والی کشتی نصف قیمت پر فروخت ہوئی۔ اس داستان کی اہم بات یہ کہ نجیب رزاق پہلی بار عدالت میں جانے لگا تو باہر اس کے حامیوں کا ہجوم نعرے لگا رہا تھا کہ ’’یہ سیاسی انتقام ہے، نجیب بے قصور ہے، اسے رہا کرو!‘‘
٭ایم کیو ایم کے ’فارغ البال‘ فاروق ستار ایک کیس میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں دوسری بار لیٹ پہنچے تو عدالت نے اس تاخیر پر 500 روپے جرمانہ کر دیا۔ پتہ نہیں سوا کروڑ کی گاڑی میں سفر کرنے والے رہنما کے پاس 500 روپے تھے یا نہیں؟ مجھے ایسا ہی ایک پرانا لطیفہ یاد آ گیا۔ ایک شخص الف نے دوسرے شخص ب کو تھپڑ مارا، عدالت نے الف کو حکم دیا کہ ب کو 50 روپے ادا کر لے۔ الف نے ب کو یہ کہتے ہوئے ایک اور تھپڑ مار دیا کہ میرے پاس 50 روپے نہیں، 100 کا نوٹ ہے، تو یہ 100 ہی رکھ لے!
٭ایک سال پہلے، 6 اپریل 2018ء کا راوی نامہ! امریکی طیاروں نے افغانستان کے شہر قندوز میں ایک دینی مدرسے پر اندھا دھند بم برسائے، وہاں قرآن مجید حفظ کرنے والے 150 طلباء شہید ہو گئے۔
٭پاکستان اور بھارت کی فضائوں میں ایک دوسرے کے طیاروں کی پروازیں شروع ہو گئیں۔ ایک بھارتی مسافر طیارہ پاکستان کی فضا سے گزر کرجرمنی پہنچا۔
٭عارف والا بس میں مردہ مرغیوں کا چھ من گوشت لے جانے والا شخص طاہر پکڑا گیا۔ ایک عرصے سے یہ کام کررہا تھا۔ دوسرے شہروں میں گوشت جاتا تھا۔
٭مولانا فضل الرحمن نے اعلان کیا ہے کہ پورے ملک کا رائونڈ ختم کر کے حکومت گرانے کے لئے اسلام آباد پر ہلّہ بول دوں گا۔ مولانا کے مطابق اب تک 9 ملین مارچ والی 9 ریلیاں نکل چکی ہیں  (90 لاکھ ) اسلام آباد پر 30 لاکھ افراد کی ریلی کا حصہ ہو گا!


 

تازہ ترین خبریں