08:24 am
قصہ کالے کوّے پر سفید رنگ پھیرنے کا!

قصہ کالے کوّے پر سفید رنگ پھیرنے کا!

08:24 am

٭ایمنسٹی بل، کالے کوّے پر سفید رنگ، صدر نے دستخط کر دیئےO سپریم کورٹ توہین عدالت کیس، ’’شیخ رشید نے حکم دیا، عدالت کی پروا نہ کرو‘‘ درخواست گزار۔ سپریم کورٹ برہمO آصف زرداری فریال تالپورکی اسلام آباد ہائی کورٹ میں ضمانت قبل از گرفتاری کی نئی درخواستیں O سپریم کورٹ شہباز شریف کے وکیل اشتر اوصاف عدالت میں بے ہوش ہو کر گر پڑے O ہوائی اڈے پر چینی افراد کو ویزے کی سہولت بند کی جائے، چینی سفارتخانہ کا مراسلہ O فیصل آباد: وزیراعلیٰ کا 24 گاڑیوں کا پروٹوکول O پشاور: 9 ہزار کلو لیموں کا ذخیرہ برآمد، مالک گرفتار، ایک لاکھ جرمانہ۔
٭تحریک انصاف نے اقتدار میں آنے سے پہلے شریف حکومت کی طرف سے ایمنسٹی قانون کے اعلان پر شدید نکتہ چینی اور لعن طعن کی، تحریک انصاف نے اقتدار میں آنے سے پہلے سرعام آئی ایم ایف کے پاس جانے کو خود کشی قرار دیا…اور…اور پھر تحریک انصاف نے اقتدار میں آ کر آئی ایم ایف کے سامنے کشکول رکھ دیا، ایمنسٹی بل کے ذریعے حرام کو حلال قرار دے دیا اور ہر بار اعلان کیا کہ کالے کوے پر سفیدی پھیر کر اسے سفید کر دیا گیا ہے، پہلے حرام تھا اب حلال ہو گیا ہے! کچھ قارئین نے پوچھا ہے کہ حرام کو حلال کیسے قرار دیا جا سکتا ہے؟ میں کیا کہہ سکتا ہوں، یہ شرعی معاملہ ہے، صرف یہ کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے اور ایمنسٹی کو خود تحریک انصاف کے سربراہ نے حرام قرار دیا تھا! وہی جواب دے سکتے ہیں۔ ’شریف‘، لوگ عمران خان کو ایک شعر میں جواب دے سکتے ہیں کہ’’ تمہاری زلف میں آئی تو حُسن کہلائی…وہ تِیرگی جو میرے نامہ سیاہ اعمال میں ہے۔‘‘ میری منطق تو یہ ہے کہ کالے کوّے کو کتنا بھی نہلائو، اس پر کتنا ہی سفید رنگ پھیرو، وہ سفید نہیں ہو گا۔ اس کی آواز اسی طرح بیزاری پیدا کرے گی۔کوّے کی داستان کچھ زیادہ ہو گئی۔ کسی مستحکم منصوبہ بندی، سنجیدہ مشاورت اور گہری سوچ بچار کے بغیر ہلڑبازی میں اقتدار میں آنے کے یہی نتائج ہوتے ہیں جو سامنے آ رہے ہیں۔ ایمنسٹیی کے قانون کی تفصیلات اخبارات میں موجود ہیں، بس یہ ہے کہ جس طرح حرام مال کی بازیابی کے لئے نیب پلی بار گینگ کرتی ہے کہ دس کروڑ کھائے ہیں تو ایک کروڑ دے کر چھوٹ جائو! اسی طرح آپ بھی ملک کے اندر اور باہر جو بھی حرام مال جمع کر رکھا ہے اس پرآپ بھی کالے دھن پرچند فیصد ٹیکس دے کر باقی مال پر عیش کرو! وہ جو ڈاکوئوں چوروں سے ایک ایک پیسہ واپس لانے کی باتیں کی جاتی تھیں، وہ محض سیاسی باتیں تھیں! کون فرانس جائے گا آصف زرداری کے محل کا یا لندن میں شریف خاندان کے فلیٹوں کا جائزہ لینے؟ کون دبئی میں زرداری خاندان کے پلازوں اور فارم ہائوس اور اسحاق ڈار کے اربوں کے کاروبار کی چھان بین کرے گا؟
قارئین! پے درپے بوجھل خبروں سے دماغ مائوف ہو رہا ہے۔ سیاسی سرکسوں کے کرداروں اور جوکروں نے اپنی ہڑبونگ سے ملک کا کیا حال کر دیا ہے کہ چینی اوباش لفنگے جوق در جوق پاکستان آرہے ہیں اور یہاں سے پاکستانی لڑکیاں خرید رہے ہیں!اور…اور خود چینی سفارتخانہ نے مراسلہ بھیجا ہے کہ چینی باشندوں کو پاکستان کے ہووائی اڈے پر ویزا دینے کا سلسلہ بند کیا جائے۔ چین کے سفارتی ذرائع کے مطابق گزشتہ ایک سال میں 142 پاکستانی باشندوں کو ویزے دیئے گئے تھے۔ اس سال صرف چار ماہ میں یہ تعداد 140 ہو گئی ہے۔ یہ ویزے پاکستانی لڑکیوں کو چین لے جانے کے لئے حاصل کرنے کی کوشش کی گئی ہے ان میں سے 60 ویزے منظور کئے گئے اور 90 روک لئے گئے ہیں! چینی شادیوں کے بارے میں ایک تازہ ترین واقعہ: پسرور کی ایک بستی میں پاکستان کا ایک ایجنٹ دو نہائت غریب 16 سالہ اور 18 سالہ مسیحی بہنوں کو چین میں کار کوٹھی اور دولت کا جھانسہ دے کر باپ کے ساتھ اسلام آباد لے گیا۔ وہاں دو چینی افراد سے نکاح کرایا اور ہدائت کی کہ ایک ہفتے کے اندر رخصتی کا انتظام کرو۔ لڑکیو ںکے باپ کو اطلاع ملی کہ اس کی لڑکیو ںکو اس پاکستانی ایجنٹ نے 16 لاکھ روپے میں چینی افراد کو فروخت کیا ہے۔ اس پر والد نے رخصتی سے انکار کر دیا اور لڑکیوں کو اپنے رشتہ داروں کے ہاں بھیج دیا۔ ایک ہفتے بعد وہ ایجنٹ چند چینی افراد کو لے کر آ گیا۔ اب جھگڑا ہو رہا ہے! اور، کیا انکشاف ہوا ہے کہ پاکستان کی مسلم اور مسیحی لڑکیوں کو خریدنے والے چینی باشندوں کو چین میں موجود جعلی مولوی اور جعلی پادری اسلام یا مسیحی مذہب قبول کرنے کے سرٹیفکیٹ جاری کر رہے ہیں!!
٭سپریم کورٹ میں راولپنڈی کی گرلز گائیڈ ایسوسی ایشن کی طرف سے شیخ رشید وغیرہ کے خلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ برہم ہو گئی کہ اس کے واضح حکم امتناعی کے باوجود وزیراعظم عمران خان کا ہیلی کاپٹر اتارنے کے لئے گرلز گائیڈز ایسوسی ایشن کی دیوار گرا دی گئی، درخت کاٹ دیئے گئے اور گیس کا کنکشن ختم کر دیا گیا۔ درخواست گزار کی وکیل عائشہ حامد نے بتایا کہ ضلعی انتظامیہ کو دیوار گرانے کے بارے میں سپریم کورٹ کا حکم امتناعی دکھایا گیا تو شیخ رشید نے ڈپٹی کمشنر کو حکم دیا کہ عدالت کی پرواہ نہ کرو، میں دیکھ لوں گا، تم لوگ اپنا کام کرو۔اس کے بعد شیخ رشید کے بھتیجے راشد شفیق نے موقع پر پہنچ کر دیوار گرانے کا حکم دیا اور اسے گرا دیا گیا۔ اس پر گرلز گائیڈز کی طرف سے توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی گئی۔ عدالت نے کمشنر،ڈپٹی کمشنر اور دوسرے افراد کو طلب کر لیا۔ جسٹس عظمت سعید اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل عدالت اپنے حکم کے ساتھ ایسے سلوک پر شدید برہم ہوئی۔ کمشنر نے کہا کہ ’’میں روزے سے ہوں، میں نے ایسا حکم نہیں دیا‘‘ عدالت نے کہا کہ روزے کا ذکر مت کرو قانون کی بات کرو۔ ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ’’میں اس روز لاہور میں تھا،‘‘ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ ’’کیا مریخ پر چلے گئے تھے؟ تم اس عہدے کے اہل نہیں ہو اس پر نہیں رہو گے، اڈیالہ جیل میں بھیجیں گے، ایک ہفتہ جیل میں گزارو گے تو ہوش آ جائے گا۔‘‘ اس موقع پرایڈووکیٹ جنرل پنجاب کی طرف سے بتایا گیا کہ گرلز گائیڈز کی دیوار ایک رات میں تعمیر کر دی گئی ہے اور گیس کا کنکشن بھی آج ہی بحال کیا جا رہا ہے۔ ضلعی افسروںنے غیر مشروط معافی مانگ لی۔ اسے سپریم کورٹ نے مسترد کر دیا اور قرار دیا کہ توہین عدالت کے باقاعدہ نوٹس بھیجے جائیں گے۔ اہم بات یہ کہ واقعہ کئی روز پہلے کا ہے جب وزیراعظم نے چلڈرن ہسپتال کے افتتاح کے لئے جانا تھا۔ ضلعی انتظامیہ نے ہسپتال تک جانے کا راستہ بنانے کے لئے وزیراعظم کی آمد سے چند روز پہلے گرلز گائیڈز ایسوسی ایشن کو حکم دیا کہ وزیراعظم کا ہیلی کاپٹر اتارنے کے لئے دیوار گرا دی جائے۔ ایسوسی ایشن نے عدالت سے حکم امتناعی لے لیا مگر دیوار گرا دی گئی، متعدد درخت کاٹ دیئے گئے اور گیس کا کنکشن کاٹ دیا گیا۔ یہ دیوار گزشتہ روز تک بحال نہیں کی گئی نہ ہی گیس کا بحال ہوئی۔ سپریم کورٹ نے توہین عدالت کا نوٹس دیا تو ایک رات میں دیوار دوبارہ بن گئی اب تک گیس بھی بحال ہو چکی ہو گی! پرانی پنجابی کہاوت یاد آ رہی ہے کہ ’’ڈنڈا پیر اے وگڑیاں تگڑیاں دا‘‘ (ڈنڈا بگڑے ہوئوں کا پیر ہوتا ہے)
٭ایک خبر: ملک بھر میں لیموں 400 روپے کلو تک بک رہے ہیں۔ گزشتہ روز پشاور پولیس نے فوڈ اتھارٹی کے ساتھ ایک گودام پر چھاپہ مار کر 9 ہزار کلو لیموں برآمد کر لئے یہ لیموں مارکیٹ میں فروخت کر دیئے گئے، مالک کو گرفتار کر کے ایک لاکھ روپے جرمانہ بھی کر دیا گیا۔ کیا یہ شخص مسلمان کہلانے کا مستحق ہے؟ روزہ داروں کو لوٹنے والے ایسے لوگوںکا واحد علاج ہے، سرعام کوڑے!!
٭ایک دلچسپ بات: رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ ’’باجی فردوس عاشق اعوان کابینہ کے اجلاس میں خالی پرس لے کر جاتی ہیں، بھرا ہوا پرس باہر لاتی ہیں۔‘‘ مجھے یہ جملہ سمجھ میں نہیں آ رہا، شائد قارئین کچھ بتا سکیں۔
٭میں نے یوفون کی ایجنسی پر400 روپے جمع کرائے۔ یوفون کا پیغام آیا ہے کہ 309 روپے جمع کرانے کا شکریہ!

تازہ ترین خبریں