04:05 pm
کیسی عورت کوبیوی بنائوں

کیسی عورت کوبیوی بنائوں

04:05 pm

ایک شخص یہ اعلان کر رہا تھا کہ اسے کسی ایسے عقلمند کی تلاش ہے جس سے وہ بوقت ضرورت مشورہ لے سکے. شہر والوں نے کہا ان کی نظر میں تو ایک پاگل سا انسان ہے جو سرکنڈے کا گھوڑا بنا کر اسے دوڑاتا پھرتا ہے.ظاہر میں تو دن رات گیند سے کھیلتا پھرتا ہے باطن میں اس نے کوئی خزانہ چھپا رکھا ہے. نام اس کا بہلول بتایا گیا سائل نے بہلول کے پاس جاکر کہا.اے سوار ذرا مہربانی فرما کر اس سرکنڈے کے گھوڑے کا رخ تو اس طرف پھیریے. بہلول نے ایسا کرنے کے بعد کہا جلدی بتا کیا بات ہے؟ کچھ پوچھنا ہے تو جلدی کر،
کہیں میرا گھوڑا تجھے دولتی ناں مار دے.وہ شخص بہلول کا بھید جاننا چاھتا تھا عرض کیا. میں نکاح کے لیے کسی عورت کی تلاش میں ہوں مجھے یہ بتائیے میں کیسی عورت کو اپنی بیوی بنائوں؟ آپ نے فرمایا!بھلے آدمی دنیا میں تیں قسم کی عورتیں ہوتی ہیں ان میں سے دو کھوٹی جبکۂ ایک چلتی سکہ ہوتی ہے ایک سے نکاح کرے گا تو وہ پوری کی پوری جورو بن کر رہے گی.دوسری جو ہے وہ آدھی تیری ہوگی اور آدھی تجھ سے الگ مگر یاد رکھنا تیسری بالکل تیری نیں ہوگی. سن لیا اب جا میرا راستہ چھوڑ دے. شیخ بہلول سرکنڈے کا گھوڑا دوڑاتے ہوئے نکل گئے اس نوجوان نے آواز دی. حضرت چلے کہاں ذرا ان تین قسم کی عورتوں کی شناخت اور پہچان تو بتا جایے آپ نے گھوڑا روکا اور فرمایا.اگر کنواری سے شادی کرے گا تو وہ پوری تیری ہوگی تو بے فکر ہو گا. جسے میں نے آدھی جورو بتایا وہ بیوہ ہوتی ہے اور تیسری جسے جورو گیری سے خارج بتایا وہ بال بچوں والی بیوہ ہوگی. ایسی عورت کی ساری محبت اور توجہ پہلے شوہر سے بچے ہوتے ہیں جا بھاگ جا راستہ چھوڑ دے.