06:04 pm
(داریل،تانگیرکواضلاع بنانے کااعلان)مخالفین خطے کی ترقی میں ٹانگ نہ اڑائیں(وزیراعلیٰ)

(داریل،تانگیرکواضلاع بنانے کااعلان)مخالفین خطے کی ترقی میں ٹانگ نہ اڑائیں(وزیراعلیٰ)

06:04 pm

چلاس(بیورورپورٹ)وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے چلاس داریل اور تانگیر کو دو الگ الگ اضلاع بنانے کا باقاعدہ اعلان کردیا۔چلاس میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ داریل اور تانگیر اضلاع کی اگلے ماہ نوٹیفیکشن ہوگی اور جون کے بجٹ میں داریل تانگیرکے دونوں اضلاع کی مکمل سیٹ اپ کیلئے 50کروڑ کی ایلوکیشن رکھیں گے، تاکہ دونوں اضلاع جلد فعال اور فنگشنل ہوسکے۔
انہوں نے کہا کہ جو لوگ چپڑاسی تک بھرتی نہ کرنے کے تانے دے رہے تھے وہ سن لیں اگلے ماہ داریل اور تانگیر دو الگ الگ اضلاع کا نوٹیفیکیشن اْن کیلئے بڑا پیغام ہوگا۔انہوں نے کہا کہ بعض لوگوں نے بیان بازی کرکے داریل اور تانگیر کو اضلاع بنانے کے منصوبے کو ثبوتاز کرنے کی کوشیش کی اور بیان بازی کے ذریعے کیڑے نکالتے رہے۔انہوں نے کہا کہ دیامر میں چار سو سے زائد نئی بھرتیاں عمل میں لائی لیکن عوام اپنے نمائندوں کو سمجھائیں کہ وہ ملازمتوں پر سٹے لیکر روزگار کے راہ میں رکاوٹ نہ بنیں۔وزیر اعلی نے کہا کہ نیا پاکستان بنانے والوں نے دیامر ڈیم کیلئے مختص رقم مہمند ڈیم کی تعمیر کیلئے فراہم کی جو کہ لمحہ فکریہ ہے۔انہوں نے کہا کہ چلاس میں دو سو بیڈ کا ہسپتال سات ماہ کے اندر مکمل ہوگااور عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کریں گے۔وزیر اعلی نے کہا کہ چلاس کی تعمیر و ترقی پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، محکمہ تعمیرات تعمیراتی منصوبوں کو مکمل کریں۔وزیر اعلی نے مزید کہا کہ گونر فارم تحصیل پر عملدرآمد ہوچکا ہے اور تحصیل فعال ہے۔چلاس پولو گرونڈ کی تعمیر کیلئے ایک کروڈ روپے دیئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ کیڈٹ کالج چلاس کی تعمیر کیلئے واپڈا کردار ادا کرے اور سی بی ایم کی تمام سکیموں پر کام کی معیار کو بہتر بنائیں۔انہوں نے کہا کہ چلاس ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی دور کریں گے اور ڈاکٹروں کے مسائل حل ہونگے۔وزیر اعلی نے کہا کہ چلاس کی سڑکیں پختہ بنائیں گے اور چلاس کو خوبصورت شہر بنایا جائیگا۔وزیر اعلی نے چلاس ہسپتال کا دورہ کیا اور ویمن اور چائلڈ بلاک کا جائزہ لیا کام کی معیار چیک کیا۔وزیر اعلی نے واپڈا کالونی کا بھی ویزٹ کیا اس موقع پر واپڈا حکام نے واپڈا کالونی سے متعلق وزیر اعلی کو بریفنگ دی۔وزیر اعلی نے چلاس سرکٹ ہاوس میں علمائ￿ عمائندین اور پارٹی کے وفود سے بھی ملاقتیں کی اور مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔چلاس(محمدقاسم)وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے چلاس میں پولو میچ کے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے داریل اور تانگیر کو دو الگ الگ ضلعے بنانے کا اعلان کر دیا۔دو روزہ دورہ دیامر کے موقع پر ان کے ہمراہ وزیر جنگلات عمران وکیل وزیر قانون اورنگزیب وزیر بلدیات فرمان علی مشیر اطلاعات شمس میر صوبائی ترجمان فیض اللہ فراق ڈویزنل صدر پی ایم ایل ن غندل شاہ و دیگر لیگی رہنماوں اور کارکنوں کی کثیر تعداد شریک تھی۔انہوں نے کہا کہ ہم نے وعدہ کیا تھا کہ وفاقی حکومت کے جانب سے گلگت بلتستان حکومت کو اختیارات ملتے ہی داریل اور تانگیر کو دو الگ الگ اضلاع میں تقسیم کریں گیاور آج دیامر کے عوام کے مطالعے پر داریل اور تانگیر کو دو الگ ضلعے بنائے گئے اور ایک مہنے کے اندر اندر تمام تر قانونی تقاضے پورے کر کے جون کے بجٹ میں بھر پور فنڈ کی فراہمی یقینی بنائی جائیگی اور جون بجٹ میں ابتدائی طور پہ پچاس کڑور روپے کی خطیر رقم مہیا کی جائیگی۔انہوں نے کیا کہ جو لوگ کہہ رہے تھے کہ صوبائی حکومت کو گریڈ ون بھرتی نہ کرنے کا اختیار نہیں وہ سن لیں دو اضلاح نئے بنانے کا اعلان کر دہا ہوں۔منافقت کی سیاست ختم کریں ہر چیز پہ بے جا طور پہ مداخلت اور ٹانگ اڑانے کی روش ترک کریں موجودہ حکومت نے خطے میں ہزاروں بے روزگاروں کو روزگار کے مواقع فراہم کئے.دیامر میں سیکڑوں پوسٹیں کریٹ کئے اور میرٹ کء بنیاد پہ بھرتیاں عمل میں لائی۔انہوں نے کہا کہ کمانڈر ایف سی این اے میجر جنرل احسان محمود خان نے داریل اور تانگیر کو دو الگ اضلاع میں تقسیم کرنے کی سفارش کی تھی۔انہوں نے کہا کہ میاں محمد نواز شریف نے دیامر بھاشہ ڈیم کی تعمیر اور متاثریں ڈیم کی آبادکاری کے لئے پچیس ارب روپے فراہم کئے تھے۔نیا پاکستان بنانے والوں نے اپنوں کو نوازنے کے خاطر مہمند ڈیم کے لئے رقم استعمال کی اور شاہراہ قراقرم رائکوٹ سے تھکاوٹ مرمت کے لئے مختص کی گئی رقم سے اپنے ممبروں کو نوازا۔جب کہ شاہراقرام کی بگڑتی ہوئی صورت حال سے مسافروں کو شدید ذہنی اور جسمانی پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہ۔ انہوں نے چلاس پولو گراونڈ کی مرمت و تزئین و آرائش کے لئے ایک کڑور روپے کا اعلان کیا اور گوہر آباد تحصیل ایک ماہ کے اندر اندر عملہ سمیت باقاعدہ کام کا آغاز کرے گا۔جب کہ دیامر استور ڈویزن میں سستا اور فوری انصاف کے لئے چیف کوٹ کا سرکٹ پنچ جولائی عملدامد شروع ہوگا۔اس موقع پہ انہوں نے کہا کہ موجود حکومت دیامر میں صحت تعلیم و ترقی پہ خصوصی دلچسپی لے رہی پے۔دیامر میں سکولوں کاجال بچھایا گیا ہے ہے۔پچیس مڈل سکول پچہتر پرائمری فی میل سکول ڈگری کالج اور کے آئی یو کیمپس دیامر کا قیام عمل میں لایا گیا جس سے دیامر میں تعلیمی انقلاب آئے گا۔گلگت بلتستان کی پچاس سالہ تاریخ میں اتنے سکول نہیں بنے تھے جتنی توجہ موجودہ حکومت نے جی بی اور دیامر میں علم کی حصول کے لئے دی جب کہ صحت کے شعبے میں مزید بہتری لائی جا رہی ہے ڈی ایچ کیو ہاسپیٹل چلاس میں میل فی میل بلاک کی تعمیر مکمل ہوگی ہے عنقریب مریض نیو بلڈنگ میں منتقل ہو جائیں گے جب کہ نیو ہسپتال اب گریڈ عمارت بھی جلد مکمل کرنے کے احکامات صادر کر دئے ہیں۔پولو میچ کے آغاز کے قبل ضلعی انتظامیہ نے مہمانوں کو روایتی تحائف پیش کئے۔گلگت ( اوصاف نیوز ) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاہے کہ داریل اور تانگیر کو الگ الگ ضلع بنایا جائے گا۔ جس کا نوٹیفکیشن ایک ماہ میں کیا جائے گا۔ چیف کورٹ سرکٹ بنچ جولائی سے دیامر میں کام کرے گا۔ منافقت کی سیاست کرنے والوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ جون میں نئے اضلاع کیلئے 50کروڑ روپے مختص کئے جائیں گے۔ نیا پاکستان بنانے والوں نے دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیر کیلئے مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف کی جانب سے مختص کردہ بجٹ کو مہمند ڈیم کی تعمیر کیلئے منتقل کیا ہے اور رائیکوٹ تھاکوٹ شاہراہ اور پل کیلئے مختص کردہ رقم اپنی جماعت کے ممبران قومی اسمبلی کو دیاہے۔ ڈیم کے نعرے لگاکر اقتدار میں آنے والوں کی منافقانہ سیاست اب واضح ہورہی ہے۔ نئے اضلاع کے قیام کیلئے فورس کمانڈر کا کردار خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ ان خیالات کااظہار وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے چلاس میں جشن بہاراں پولو ٹورنامنٹ کے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ چلاس ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کا افتتاح آج کیا جائے گا۔ دیامر ہمیشہ سے مسلم لیگ (ن) کے گڑھ رہاہے۔ چلاس کے عوام نے ہمیشہ مسلم لیگ (ن) کا ساتھ دیا ہے۔ 30 مئی سے قبل فیملی اور چلڈرن ہسپتال کو فعال کرنے کے احکامات دیئے ہیں۔ 7ماہ میں 200بیڈ ہسپتال کا کام مکمل ہوگا۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ آئندہ سال جون سے قبل کیڈٹ کالج چلاس میں طالب علموں کو شفٹ کیا جائے گا۔ مسلم لیگ (ن) کو اعزاز حاصل ہے کہ کیڈٹ کالج سکردو بھی ہمارے قائد محمد نواز شریف نے بنایا تھا اور ہماری جماعت ہی کیڈٹ کالج چلاس کو بھی بنائے گی۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ دیامر میں 70 سالوں میں اتنے طالبات کے سکول نہیں بنے جتنے پچھلے چار سالوں میں بنے ہیں۔داریل اور تانگیر کو اضلاع بنانے کا مطالبہ دیامر کے عوام کا ہے 2016ء میں ہم نے اعلان کیا تھا کہ ہمارے قائد محمد نواز شریف کی جانب سے گلگت بلتستان کو دیگر صوبوں کے برابر لانے کیلئے سرتاج عزیز کی سربراہی میں بنائی گئی کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں گلگت بلتستان کو آرڈر2018 کے تحت وہ تمام اختیارات مل چکے ہیں جو دیگر صوبوں کو حاصل ہیں۔ گلگت بلتستان میں مثالی امن قائم ہوا ہے جس کی وجہ سے گلگت بلتستان تعمیر و ترقی کی راہ پر گامزن ہوا ہے۔ ہم سب نے مل کر اس کی حفاظت کرنی ہے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے چلاس پولو گرائونڈ کی تزائن و آرائش کیلئے ایک کروڑ روپے کا اعلان کیا اور پولو جیتنے والے ٹیموں میں نقد اور ٹرافیاں تقسیم کئے۔ قبل ازیںوزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے زیر تعمیر کیڈٹ کالج چلاس کی رفتار میں تاخیر پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے واپڈا کے متعلقہ آفیسران کو ہدایت کی ہے کہ 11 سالوں میں واپڈا کی جانب سے سی بی ایم منصوبے کے تحت اس ایک منصوبے کا مکمل نہ ہونا افسوس کی بات ہے۔ اگر دیامر بھاشا ڈیم بنانا ہے تو واپڈا کو سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ سی بی ایم کے تحت منصوبوں میں تاخیرپر متعلقہ وزارت اور وزیر اعظم سے بات کی جائے گی۔ دیامر بھاشا ڈیم کا بجٹ مہمند ڈیم منتقل کرنا موجودہ تبدیلی حکومت کی نااہلی اور غیرسنجیدگی کا مظہر ہے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ماڈل کالونی واپڈا کے حوالے سے دیئے جانے والے بریفنگ کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے سپارکو کے تعاون سے دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیر کیلئے زمین کی خریداری کا عمل مکمل کیا لیکن موجودہ وفاقی حکومت سنجیدہ اقدامات کرنے کی بجائے ڈیم کی تعمیر میں مسائل پیدا کررہی ہے۔ واپڈا کے تحت دیامر میں تعمیر ہونے والے منصوبوں کے حوالے سے شکایات موصول ہورہی ہے کام کے معیار کو یقینی بنایا جائے۔