05:43 pm
جی بی کے عوام سے زیادتی برداشت نہیں کرینگے(آصف زرداری)

جی بی کے عوام سے زیادتی برداشت نہیں کرینگے(آصف زرداری)

05:43 pm

اسلام آباد (پ ر) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت عوام کی منتخب اور نمائندہ حکومت نہیں ہے اس لیئے پورا ملک مشکلات کا شکار ہے۔جمعہ کے روز سابق صدر سے پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صوبائی صدر امجد حسین ایڈووکیٹ کی قیادت میں ایک وفد نے زرداری ہاؤس اسلام آباد میں ملاقات کی وفد میں سابق وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سید مہدی شاہ۔محمد موسی۔محمد علی اختر، جاوید حسین، جمیل احمد اور محمد ایوب شاہ شامل تھے
، وفد نے سابق صدر کو بتایا کہ وفاق میں پیپلز پارٹی حکومت میں نہیں تو گلگت بلتستان کے عوام بھی مشکلات کا شکار ہیں، وفد نے گلگت بلتستان کو خود مختاری دے کر بااختیار بنانے اور عوام کو شناخت دینے پر سابق صدر زرداری کا شکریہ ادا کیا، آصف زرداری نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے شہید قائد عوام گلگت بلتستان کے عوام سے بہت پیار کرتے تھے، محترمہ بینظیر بھٹو شہید نے ہمیشہ گلگت بلتستان کے عوام کے حقوق کی بات کی، آپ کی پارٹی کی حکومت نے گلگت بلتستان کو صوبہ کا درجہ دیکر محترمہ بینظیر بھٹو شہید کے خواب کی تعمیر کی۔آصف زرداری نے کہا کہ پیپلز پارٹی دوبارہ اقتدار میں آکر گلگت بلتستان کی بھر پور خدمت کریگی۔ وفد نے صدر زرداری کو بتایا کہ گلگت بلتستان کے عوام بلاول بھٹو سے بہت پیار کرتے کی بات پر پارٹی رہنماؤں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ آپ بلاول بھٹو کی طاقت بنیں۔ ملاقات میں ملکی موجودہ صورتحال اور گلگت بلتستان کے تمام مسائل پر گفت و شنید کی گئی۔ وفد نے وفاقی حکومت کی جانب سے جوڈیشل آرڈر 2019 کے نفاذ کے بغیر سپریم اپلیٹ کورٹ میں ججوں کی تقرری کا جو طریقہ کار اختیار کیا گیا ہے اس پہ تحفظات کا اظہار کیا گیا۔ صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ گلگت بلتستان کے حقوق کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلے پر عملدرآمد کے لئے پارٹی کے قانون ماہرین سے مشاورت کا عمل شروع کیا جائے گا. پیپلزپارٹی پارٹی نے ہمیشہ گلگت بلتستان کے عوام کی خدمت کی ہے اور ان کے حقوق کا تحفظ کیا ہے آئندہ بھی جی بی کے عوام کی حقیقی معنوں میں ترجمانی کرتے رہیں گے۔ اور کسی بھی پارٹی کی حکومت کی جانب سے جی بی کے عوام کے ساتھ کوئی بھی زیادتی برداشت نہیں کی جائے گی۔ سندھ حکومت بہت جلد چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کے گلگت بلتستان کے دورے پر کئے گئے اعلانات پر عملدرآمد کرے گی جس پر سندھ حکومت نے باقاعدہ کام شروع کیا ہے۔