05:34 pm
چیف کورٹ کی شاندارکارکردگی،ساڑھے 3ماہ میں388مقدمات نمٹادیئے

چیف کورٹ کی شاندارکارکردگی،ساڑھے 3ماہ میں388مقدمات نمٹادیئے

05:34 pm

گلگت ( اوصاف نیوز ) گلگت بلتستان چیف کورٹ کی تین ماہ 14دن کی شاندار کارکردگی یکم جنوری تا 19اپریل 2019تک دیوانی ، فوجداری ،اور رٹ پٹیشن پر مشتمل چار سو 44مقدمات دائر ، فاضل عدالت نے تین سو 88مقدمات کو نمٹا دیا ، تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس چیف کورٹ جسٹس وزیر شکیل احمد کی منظوری سے تشکیل چیف جسٹس وزیر شکیل احمد ، جسٹس ملک حق نواز اور سکردو سرکٹ بنچ میں فوجداری ، دیوانی اور
رٹ پٹیشن پر مشتمل یکم جنوری تا 14اپریل 2019تک دائر چار سو 44مقدمات کی سماعت کرتے ہوئے تین سو 88مقدمات کو نمٹا دیا گیا ، چیف کورٹ کی سنگل اور ڈویژن بنچوں میں دائر دیوانی ، فوجداری اور رٹ پٹیشن کے مقدمات کو تین ماہ 14دن میں نمٹائے درجہ ذیل تفصیلات پر مشتمل ہیں ، متفرقات درخواستیں دائر 153فیصلہ 104، فوجداری ، متفرقات درخواستیں دائر 91، فیصلہ 91، دیوانی نظرثانی دائر 50فیصلہ 42فوجداری نظرثانی دائر 18فیصلہ 18، دیوانی فرسٹ اپیلیں دائر 27فیصلہ 27دیوانی سیکنڈ اپیلیں دائر 2فیصلہ 1رٹ پٹیشن دائر 83فیصلہ 76فوجداری اپیلیں دائر 10 فیصلہ 10دیوانی دعویٰ جات دائر 2فیصلہ ایک جبکہ توہین عدالت کے آٹھ مقدمات دائر ہوئے چار پر فیصلہ دیکر نمٹایا گیا ، چیف جسٹس چیف کورٹ جسٹس وزیر شکیل احمد نے چیف کورٹ میں زیر سماعت مقدمات کو ہنگامی بنادوں پر نمٹانے اور سستے اور فوری انصاف کو یقینی بنانے کیلئے سال 2019کے ابتداء میں تمام معزز ججز صاحبان کی مشاورت سے سستے اور فوری انصاف اولین ترجیح پالیسی مرتب کرکے منظوری دیتے ہوئے مختلف بنچز کی تشکیل دیدی تھی تمام ججز صاحبان کے تعاون سے چیف کورٹ گلگت بلتستان نے تین ماہ 14دن میں( یکم جنوری تا 14اپریل2019) چار سو 44مقدمات دائر ہوئے جبکہ فاضل عدالت نے تین سو 88مقدمات کو نمٹا کر ہدف مکمل کر لیا

تازہ ترین خبریں