06:59 am
امریکہ نے اوقات دکھادی

امریکہ نے اوقات دکھادی

06:59 am

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل میں جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کی کوششوں پر امریکا نے پاکستان پر زور دیا ہے کہ دہشت گردوں کے خلاف فوری کارروائی کی جائے. امریکی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے بھارتی سیکرٹری خارجہ وجے گوکھیل کے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے دہشت گردوں کے خلاف فوری کارروائی کی ضرورت پر زور دیا. امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق یو این ایس سی میں یہ قرار داد آج 13 مارچ کو پیش کیے جانے کا امکان ہے
تاہم سلامتی کونسل کے مستقل رکن چین کا کہنا ہے کہ معاملے کا ذمہ دارانہ حل صرف بات چیت کے ذریعے ہی ممکن ہے. اس حوالے سے چینی وزارت خارجہ کے ترجمان لو کانگ نے اس معاملے پر چینی موقف جاننے کے لیے پوچھے گئے سوال کے جواب میں عالمی برادری کو اس قسم کے مسائل اجاگر کرنے کے ساتھ مسئلہ کشمیر کی طرف بھی توجہ دینے کا کہا انہوں نے کہا کہ 1267 پابندی کمیٹی کی جانب سے کسی دہشت گرد کی حیثیت پر چین کا موقف اصولی اور واضح ہے. انہوں نے کہا کہ چین نے ذمہ دارانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے کمیٹی کے طریقہ کار اور قواعد و ضوابط پر عمل کیا جبکہ ذمہ دارانہ طریقے سے ہی بحث میں حصہ لیا‘چینی عہدیدار نے کہا کہ صرف بات چیت کے ذریعے ہی ہم مسائل اک ذمہ دارانہ حل نکال سکتے ہیں. واشنگٹن میںموجود سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکا جس نے برطانیہ اور فرانس کے ہمراہ اس قراداد کو پیش کیا ہے چاہتا ہے کہ اس مرتبہ اقوامِ متحدہ کی سیکورٹی کونسل اسے منظور کرلے.جس کے لیے امریکا نے چین سے مذکورہ قرار داد کو ویٹو نہ کرنے کا مطالبہ اور اس معاملے پر چینی مخالفت نرم کرنے کے لیے پاکستان پر اپنے اثر رسوخ کا استعمال کیا ہے. ایک جانب امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے بھارتی ہم منصب سے ملاقات کی تو دوسری جانب امریکی مشیر برائے قومی سلامتی جان بولٹن نے پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو فون کر کے کئی امور پر تبادلہ خیال کیا. امریکی مشیر سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے کہا تھا کہ انہیں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے یقین دہانی کروائی ہے کہ ان کا ملک دہشت گردوں کے خلاف بھرپور کارروائی کرے گا.

تازہ ترین خبریں