07:09 am
حکومت آزادکشمیر نے غیر معیاری اور ماحول مخالف پلاسٹک بیگز خاتمے کیلئے تاجروں سے تجاویز طلب کر لیں

حکومت آزادکشمیر نے غیر معیاری اور ماحول مخالف پلاسٹک بیگز خاتمے کیلئے تاجروں سے تجاویز طلب کر لیں

07:09 am

کڑہ(بیورورپورٹ)حکومت آزادکشمیر نے غیر معیاری اور ماحول مخالف پلاسٹک بیگز (پولی تھین بیگز)کے خاتمے کیلئے تاجروں سے تجاویز طلب کر لیں ۔ ماحول مخالف پلاسٹک بیگز کے خاتمہ کیلئے آزاد جموں وکشمیر انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی کے زیر اہتمام کشمیر انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ میں گزشتہ روز ایک سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔ سیمینار میں آزادکشمیر کے وزیر ماحولیات و تعلیم بیرسٹر افتخار گیلانی ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات 

ڈاکٹر سید آصف حسین، سیکرٹری بہبود آبادی و ڈائریکٹر جنرل ادارہ تحفظ ماحولیات راجہ محمد رزاق خان ، صدر انجمن تاجران شوکت نواز میر، عبدالرزاق خان ، تاجروں ، سول سوسائٹی ودیگر نے شرکت کی۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے وزیر ماحولیات بیرسٹر افتخار گیلانی نے کہا کہ نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ سے نئے ماحولیاتی مسائل نے جنم لیا ہے ۔ دریائے نیلم کا رخ موڑنے کی وجہ سے دارالحکومت میں آلودگی، سیوریج اور پانی کی کمی جیسے مسائل پیدا ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ نیلم جہلم پراجیکٹ لگنے سے پہلے ماحولیاتی مسائل کی جانب اگر توجہ دی جاتی تو آج ہمیں یہ چیلنجز درپیش نہ ہوتے۔ انہوںنے کہاکہ ماحول مخالف شاپنگ بیگ کی فروخت پر مکمل پابندی اور اس پر عملدرآمد کے حوالہ سے تاجر رہنماء اپنی تجاویز دیں ، حکومت ماحولیاتی تحفظ کیلئے ہر ممکن اقدام اٹھائے گی۔انہوں نے کہاکہ انوائر پروٹیکشن اتھارٹی اس سلسلہ میں تاجر رہنمائوں کے ساتھ مکمل تعاون کریگی۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات ڈاکٹر سید آصف حسین نے کہاکہ غیر معیاری اور ماحول مخالف( پولی تھین بیگز )کا استعمال نہ صرف انسانوں بلکہ جنگلی اور آبی حیات کیلئے بھی مضر ہے ۔ انہوںنے کہاکہ جن ممالک میں پولی تھین بیگز کا استعمال ممنو ع اور اس کی فروخت پر مکمل پابندی ہے ہمیں ان کو فالو کرتے ہوئے قدرتی ماحول کا تحفظ کرنا ہوگا ۔تاجر رہنمائوں شوکت نواز میر اور عبدالرزاق خان نے اپنے خطاب کے دوران EPAکے ساتھ بھرپور تعاون کرنے کا اعادہ کیا۔ ڈائریکٹر جنرل کشمیر انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ بریگیڈئیر ریٹائرڈ اختر حسین شاہ نے کہاکہ ماحول کے تحفظ کے کیلئے ای پی آئی کی کاوشیں لائق تحسین ہیں۔ قبل ازیں ڈائریکٹر جنرل ادارہ تحفظ ماحولیات راجہ محمد رزاق خان نے سیمینار کے شرکاء کو آزاد ریاست جموں وکشمیر میں پولی تھین بیگ کی تیاری اور اس کی فروخت پر پابندی کے قانون کے بارہ میں آگاہ کیا جوکہ2013متعارف کروایا گیااور اس قانون کے تحت درجن سے زائد دوکانداروں کو پولی تھین بیگ کی فروخت پر گرفتار کیاگیا لیکن ادارہ تحفظ ماحولیات کے پاس اس وقت لیبارٹری موجود نہ تھی جس کی وجہ سے عدالت میں ان دوکانداروں کے خلاف لیبارٹری ٹیسٹ مہیا نہ کیے گئے اور شک کی بنیاد پر دوکانداروں کو چھوڑ دیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ اب ادارہ تحفظ ماحولیات نے 09ملین روپے کی لاگت سے لیبارٹری کا قیام عمل میں لایا ہے جس میں باقاعدہ پولی تھین بیگز کے ٹیسٹ کیے جا سکتے ہیں

تازہ ترین خبریں