11:08 am
 ہر دس قدم پر پرائیویٹ اسکولوں کی اوپننگ روز کا معمول بن گیا

ہر دس قدم پر پرائیویٹ اسکولوں کی اوپننگ روز کا معمول بن گیا

11:08 am

مظفرآباد(نمائندہ خصوصی)محکمہ تعلیم کی نااہلی ،بے بسی ٗ پرائیویٹ اسکول کی بھرمار اب تو مونوگرام کے نام پر بھی طلبا و طالبات کے والدینوں کو لوٹنا شروع کردیا ہے،سیکرٹری تعلیم نہ تو نوٹس لینے میں دلچسپی رکھتے ہیں بلکہ ڈی او،ای او بھی خاموشی کا روزہ رکھ لیا ہے ، ہر دس قدم پر پرائیویٹ اسکولوں کی اوپننگ روز کا معمول بن گیا ہے ،NOCحاصل کرنے کیلئے چند منٹوں کی تکلیف برداشت کی جاتی ہے جو کہ ایک سوالیہ نشان ہے ۔تفصیلات کے
مطابق آزادکشمیر بھر سمیت مظفرآباد پرائیویٹ اسکولوں میں نمبرون پر ہے وہاں چہلہ پل تا نثار کیمپ تک 52سکولز قائم ہیں جبکہ اِن میں 2سرکاری سکول سمیت 24تعلیمی ادارے ہیں مگر وہاں افسوس کن بات ہے کہ اِن پرائیویٹ اسکولوں میں سوائے چند کے باقی تمام پرائیویٹ تعلیمی ادارے والدین کو لوٹنے میں مصروف ہیں جن کی بڑی وجہ کتابیں ،کاپیوں او ریونیفارم منتخب کردہ شاپ سے لینے کی ہدایت ،اگر دوسرے مقام سے کتابیں ،کاپیاں یا یونیفارم لیا گیا تو وہ قابل قبول نہیں جس کی بڑی وجہ عام مقامات پر جہاں کاپی 40روپے ،کتاب مثلاً50روپے کی ہوگی تو پرائیویٹ اداروں کی جانب سے منتخب کردہ شاپ میں سے وہ کتاب ساڑھے 7سو کی ملے گی جبکہ کاپی 150روپے کی ملے گی وجہ اُس پر سکول کی مونوگرام ہونا ضروری ہے جس کی وجہ سے والدین پریشانی سے دوچار ہیں ،سیکرٹری تعلیم فوری طور پر پرائیویٹ اسکولوں کے خلاف ایکشن لے کر کتابوں اورکاپیوں کی قیمتیں میں کمی پر عملدرآمد کریں ۔

تازہ ترین خبریں