11:20 am
وزیراعظم اورسردارسکندرملکراپنےمعاملات یکسو کریں،سمیرا شاہد

وزیراعظم اورسردارسکندرملکراپنےمعاملات یکسو کریں،سمیرا شاہد

11:20 am

وزیراعظم اورسردارسکندرملکراپنےمعاملات یکسو کریں،سمیرا شاہد آزاد کشمیر میں جاری سیاسی بحران ریاستی وقار کو نقصان پہنچا رہاہے ، گفتگو کسگمہ (نمائندہ اوصاف ) سمیرا شاہد صدر (ن)لیگ خواتین ونگ آزاد کشمیر برطانیہ و نومنتخب کونسلر لوٹن برطانیہ نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر میں جاری سیاسی بحران ریاستی وقار کو نقصان پہنچا رہاہے وزیر اعظم آزاد کشمیر کی نجی گفتگو کو بار بار سوشل میڈیا پر وائرل کرکے سرحد پار ایک منفی پیغام پہنایا جارہا ہے جبکہ تحریک آزادی کشمیر کے بیس کیمپ کو اقتدار کی رسہ کشی کے لیے بطور میدان استعمال کیا جارہاہے جو کہ انتہائی افسوس ناک عمل ہے موجودہ حالت میں حکومت آزاد کشمیر کو ڈی ریل نہیں ہونا چاہیے اس سے ریاستی عوام کو ناقابل تلافی نقصان ہوگا سردار سکندر حیات خان ہمارے لیے قابل احترام بزرگ سیاسی قائد ہیں جبکہ راجہ فاروق حیدر خان بطور وزیر اعظم ہمارے لیے ریاستی تشخص کی علامت ہیں دونوں کو مل بیٹھ کراپنے معاملات کو یکسو کرنا چاہیے اور پوری کابینہ کو اس میں مثبت کردار ادا کرنا چاہیے نا کہ عدم اعتماد تحریک پیش کر کے تاریخ میں ہمیں رسوا ہونا چاہیے ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن)آزاد کشمیر کی حکومت نے راجہ فاروق حیدر خان کی قیادت میں گذشتہ حکومتوں کی نسبت عوام کی بہترین خدمت کی ہے میرٹ کی بحالی ،تعمیر وترقی اور بنیادی مسائل کو حل کرنے میں فاروق حیدر حکومت کا بڑا کردار ہے جبکہ حکومت کا مزید تسلسل ہی ریاستی عوام کی خوشحالی کا باعث بن سکتا ہے۔ انسان میں جہاں بہت سی خوبیاں ہوتی ہیں وہیں کوئی نہ کوئی خامی بھی ضرور ہوتی ہے ریاستی سیاسی قائدین کی زبان کو عوام بخوبی جانتے ہیں جو نجی محفلوں میں ہمیشہ منفی قسم کی ہی چلتی ہے لیکن کسی نجی اور آف دی ریکارڈ گفتگو کو منظر عام پر لا کر اپنے سیاسی اعزائم کی تکمیل کسی طور درست نہیں ریاست آزاد جموں وکشمیر تحریک آزادی کا بیس کیمپ ہونے کی وجہ سے انتہائی اہمیت کی حامل ہے جس میں سیاسی قائدین کو ہر لمحہ بے حد سنجیدگی اور پختگی کا مظاہر کر کے ایک بڑے مقصد تحریک آزادی کشمیر کی تکمیل کی جانب بڑھنا ہے لیکن حالیہ اقتدار کی رسہ کشی میں دنیا بھر میں ریاست آزاد جموں وکشمیر کے سیاسی قائدین کی غیر سنجیدگی کو بلاشبہ مانیٹر کیا جارہا ہے میرا بطور صدر (ن)لیگ خواتین ونگ آزاد کشمیر برطانیہ اپنی لیگی قیادت سے مطالبہ ہے کہ حکومت کو آرام سے کام کرنے دیاجائے ایک دوسرے کو ذہنی اذیت نہ دی جائے اور آپس کے معاملات کو مل بیٹھ کر حل کیا جائے ورنہ نتائج نہ صرف سیاسی قیادت کو رسوا کریں گے بلکہ اس کا سب سے بڑا نقصان ریاست کی عوام کو ہوگا جنہوں نے تمام ممبران اسمبلی کو اپنے بنیادی مسائل کے حل کے لئے اسمبلیوں میں بھیجا ہے اس موقع پر مسز سمیرا شاہد نے آڈیولیکس میں استعمال ہونے والی گفتگو پر بھی دکھ کا اظہار کیا لیکن انہوں نے وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کی قیادت میں ساری کابینہ کو متحد ومنظم ہو کر کام کرنے کا مشورہ بھی دیا اور کہا کہ بعض قوتیں پاکستان سے جمہوری نظام کو مکمل ختم کرنا چاہتی ہیں جبکہ ریاست میں موجود اس سیاسی ماحول سے ان قوتوں کی سیاسی نظام بارے سوچ کو تقویت مل رہی ہے ۔ سمیرا شاہد

تازہ ترین خبریں