06:11 am
 سو گرام آئس پر سات سال قید ،ایک کلو پر سزائے موت یا عمر قید ہوگی،صوبائی کابینہ نے  ایکٹ کی منظوری دیدی

سو گرام آئس پر سات سال قید ،ایک کلو پر سزائے موت یا عمر قید ہوگی،صوبائی کابینہ نے ایکٹ کی منظوری دیدی

06:11 am

پشاور(بیورو رپورٹ)خیبرپختونخوا کے ضلع مہمند میں ہونے والے صوبائی کابینہ کے اجلاس نے آئس نشہ کے خلاف قانون کے علاوہ خیبرپختونخوا جوڈیشل اکیڈمی ترمیمی بل اور محکمہ اعلٰی تعلیم میں سکالرشپ رولز بنانے سمیت کئی قوانین کی منظور دے دی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے کہا کہ صوبے کو آئس نشہ سے پاک کریں گے بیچنے والے اور پینے والے سب قانون کے گرفت میں ہونگے صوبائی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ کابینہ اجلاس نے آئس نشہ کی روک تھام سے متعلق ایکٹ کی منظوری دے دی جسکے مطابق سو گرام آئس پر سات سال قید اور تین لاکھ جرمانہ ہوگاایک کلو آئس اور اس سے زیادہ پر سزائے موت یا عمر قید کے علاوہ چودہ لاکھ روپے جرمانہ ہوگا اُن کا کہنا تھا کہ آئس نشہ کی روک تھام کے لئے وسیع پیمانے پر آگاہی مہم چلائی جائے گی ۔ صوبے کو آئس نشہ سے پاک کرینگے بیچنے والے اور پینے والے سب قانون کے گرفت میں ہونگے انہوں نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں صوبائی محتسب سیکرٹریٹ سروسزاورخیبرپختونخوا جوڈیشل اکیڈمی ترمیمی بل کی منطوری دے دی انہوں نے کہا کہ صوبائی کابینہ کے اجلاس نے محکمہ اعلی تعلیم میں سکالرشپ رولزبنانے پاک آسٹریا انسٹیوٹ کے لئے ضمنی گرانٹ کی بھی منظوری دی شوکت علی یوسفزئی نے بتایا کہ لوکل گورنمنٹ ایکٹ فائنل ہے کابینہ کے اگلے اجلاس میں منظوری دی جائے گی اس دوران وزیر اعلی کے مشیر برائے ضم اضلاع اجمل وزیرنے بتایا کہ 28ہزار لیویز اورخاصہ داروں کے لیئے چار ارب روپے کے فنڈز مختص کئے جا چکے ہیں ان کے لئے تمام انفراسٹرکچر چھ مہینے میں مکمل ہوگا ہیلتھ کارڈ کے ذریعے ہر خاندان کو سات لاکھ بیس ہزار روپے علاج کی مد میں ملینگے انصاف روزگار اور صحت کارڈ سکیم کا افتتاح آج ہوگیا۔