07:46 am
عمران خان کیساتھ کچھ روحانی شخصیات کیساتھ والدہ کی دعائیں ہیں اور مولانا ایک بہت پہنچے ہوئے عامل ہیں

عمران خان کیساتھ کچھ روحانی شخصیات کیساتھ والدہ کی دعائیں ہیں اور مولانا ایک بہت پہنچے ہوئے عامل ہیں

07:46 am

لاہور(نیوز ڈیسک)بین الااقوامی شہرت یافتہ آسٹرو پامسٹ پروفیسر فضل کریم خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان اومولانا فضل الرحمان کے تنازعہ میں روحانی شخصیات روحانی بھی ایک دوسرے کے مد مقابل ہیں۔ پیرو و فقیر وں کے ساتھ مرحومہ والدہ کی ابدی دعائیں عمران خان کے ساتھ ہیں جبکہ مولانا افضل الرحمان مذہبی رہنما اور سیاستدان ہونے کے ساتھ پہنچے ہوئے عامل بھی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ وہ بینظیر بھٹو،نواز شریف اور جنرل پرو یز مشرف کے چہیتے رہے۔ پروفیسر فضل کریم خان نے کہا کہ زائچہ کے مطابق عمران خان اور فضل الرحمان کے ستارے انتہائی روشن ہیں۔ عمران خان کے اقتدار کو فی الحال کوئی خطرہ نہیں،اسی طرح مولانا فضل الرحمان بھی مزید مقبولیت حاصل کریں گے، آئندہ انتخابات میں ملک کی خاتون وزیر اعظم ہوں گے۔
زائچہ کے مطابق مولانا فضل الرحمان اور عمران خان کی زندگیوں کو سخت خطرات ہیں اس لئے انہیں چاہیے کہ اپنی سکیورٹی میں کوتاہی نہ بڑھیں اور اسے مزید بڑھائیں۔ مریم نواز کی ضمانت کے بعدنواز شریف علاج کیلئے بیرون ملک چلے جائیں گے۔دوسری جانب معروف پیر پنجر سرکار آستانہ عالیہ کوہ قاف شریف راولپنڈی نے خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے تہلکہ خیز پیش گوئیاں کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کی موجودہ حکومت صرف چوبیس ماہ رہے گی، عمران خان خود قومی و صوبائی اسمبلیاں توڑکر صدارتی نظام نافذ کر دیں گے ۔ قریب میں ملک پر دو اڑھائی سال عورت حکمرانی کرتی دکھائی دے رہی ہے ,2024 تک صدارتی نظام آئے گا ،پنجاب کی سیاسی بساط پلٹنے والی ہے‘ کپتان سمیت پوری ٹیم ہٹ وکٹ ہوگی اور ریزو کھلاڑی پر مشتمل نئی ٹیم تشکیل دی جائے جائے گی، گی، اقتدار کا ہما شہباز شریف کے سر پر منڈلاتا دکھائی دے رہا ہے جبکہ زمینی حقائق اس کے برعکس ہیں،آصف زرداری کی پیپلزپارٹی کا سیاسی کھیل ختم ہوجائے ہوجائے ،فاطمہ بھٹو پی پی کی کمان سنبھالیں گی, 2029 تک کشمیر آزاد ہوجائے گا اور کشمیر کی آزادی کے ساتھ ہی خالصتان کی صبح ہوگی،مولانا فضل الرحمان کی سیاست ختم ہوجائے گی وہ بہت جلد پجارو سے سائیکل پر ہوں گے،پاکستان میں نظام مصطفی نافذ ہوگا،اسلام آباد اسلام کا ہیڈکواٹر نظر آئے گا،تمام کرپٹ عناصرجیل جائیں گے جس کا سہرا عمران خان کو جائے گا.آصف زرداری اور بلاول بھٹو بھی جیل جائیں گے مگر سندھ کارڈ اور ریمورٹ کنٹرول ساتھ لے کر جائیں گے, مسلم لیگ(ن)کی قیادت مریم نواز سنبھالیں گے،حمزہ شہباز کا سیاسی مستقبل نہیں ہے،چین تیسری دھائی میں سپر پاور بن جائے گا اور میزائل امریکہ اور روس پر داغ دے گا, 2262میں انسان روٹی اور گوشت کھانا چھوڑ دے گا اور وٹامن کے کیپسول کھائے گا۔ 2266 تک ٹائم ٹریول ممکن ہوجائے گا جس سے انسان کیلئے ایک سیارے سے دوسرے سیارے تک رسائی ممکن ہوسکے گی۔معروف پیر پنجر سرکار نے جہلم ویلی میں اے این این کو تہلکہ خیز انٹرویو دیتے ہوئے پیشگوئی کی ہے کہ عمران خان تمام اسمبلیاں توڑ کر ملک میں صدارتی نظام نافذ کردیں گے، ملک کی لوٹی ہوئی ایک ایک پائی واپس لائی جائے گی اور عمران خان اس ملک میں اللہ کے نبی ﷺ کا دین نافذ کریں گے۔ پیر پنجر سرکار کا کہنا ہے کہ عمران خان کام دکھائے گا اور موجودہ نظام کو کھینچ کر اور توڑ کر صدارتی نظام نافذ کرے گا۔ قومی اور صوبائی اسمبلیاں زمین بوس کرکے بلدیاتی نظام کو طاقت دے گا۔ پاکستان کے لوٹے ہوئے مال کو واپس لائے گا۔ ملک کے لوٹے ہوئے خزانے کی ایک ایک پائی برآمد ہوگی۔ پچھلی حکومت کا سربراہ فاسد آدمی ہے۔ انہوں نے پیشگوئی کرتے ہوئے کہا کہ فوج میں 28 ویں بریگیڈ بنائی جائے گی۔ ملک صدارتی نظام کی طرف بڑھ رہا ہے اور اس کی راہ ہموار ہورہی ہے۔ عمران خان بیٹھا ہوا ہے تو پاکستان میں اللہ کے نبی ﷺ کا دین نافذ ہوگا۔ اللہ کا دین نافذ ہونا ہی ہونا ہے کیونکہ یہ ملک دین کیلئے بنا ہے۔ اسلام آباد اسلام کا ہیڈ کوارٹر ہوگا۔ معروف روحانی شخصیت پیر پنجر سرکار نے پشین گوئی کی ہے کہ عمران خان قوم کا مسیحا بنے گا اور کرپٹ لوگوں سے اس معاشرے کو پاک کرے گا، قوم عمران خان کی پشت پر ہو گی. پاکستان اگلے دو تین سال میں معاشی طور پر دنیا کے 4بڑے ممالک کی صف میں شامل ہوگا۔پیر پنجر سرکار نے چند ماہ پہلے پیشن گوئی کی تھی کہ سابق وزیراعظم نواز شریف اب کبھی بھی اقتدار میں نہیں آئیں گے۔ وہ جلد ضمانت پر رہا ہوں گے لیکن ایک اور کیس میں انہیں سزا ہو گی اور دوبارہ جیل میں چلے جائیں گے۔ شہباز شریف کے حوالے سے انہوں نے کہا ہے کہ شہباز شریف کرپشن کیسز میں گرفتار ہو جائیں گے اسکے بعد مسلم لیگ ن کی64نشستیں کم ہو کر41پر آ جائیں گی، لیگی ممبران اسمبلی تحریک انصاف اور مسلم لیگ ق میں شمولیت اختیار کریں گے۔ مولانا فضل الرحمن کے بارے میں پیشن گوئی کرتے ہوئے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کی سیاست اپنے انجام کو پہنچ گئی اب وہ کبھی ممبر اسمبلی نہیں بن سکتے وہ جلد پجارو سے سائیکل پر آ جائیں گے۔ سیاست میں حمزہ شہباز شریف کا کوئی مستقبل نہیں۔ مسلم لیگ ن کی قیادت مریم نواز کے ہاتھ جائے گی مگر وہ پارٹی کو مضبوط نہیں کر سکے گی۔ مسلم لیگ ن کے حصے بخرے ہو جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں صدارتی نظام ہو گا اور یہ نظام 2024ء کے بعد آئے گا۔ جنرل (ر) راحیل شریف ملک کے صدر ہوں گے۔ بلاول بھٹو زرداری کے حوالے سے انہوں نے پیشن گوئی کی کہ بلاول کا سیاسی مستقبل کوئی نہیں، پیپلز پارٹی کی قیادت فاطمہ بھٹو کرے گی۔ عدلیہ کے حوالے سے انہوں نے پیش گوئی کی کہ موجودہ چیف جسٹس جسٹس ثاقب نثار سے بھی اچھے کام کرے گا، عدلیہ کا وقار بحال رہے گا، کرپٹ لوگ تیزی سے قانون کے شکنجے میں آئیں گے. کوئی بھی کرپٹ نہیں بچ سکتا۔ پیر پنجر سرکار نے یکم اگست 1993ء کو عمران خان کے حوالے سے پیشن گوئی کی تھی کہ وہ ہنگامی سربراہ کے طور پر سامنے آئے گا جو سچ ثابت ہوئی ہے۔ پیپلز پارٹی قیادت فاطمہ بھٹو کریں گی۔

تازہ ترین خبریں