08:31 am
بھارت نے فالس فلیگ آپریشن کی منصوبہ بندی کی ناکامی پر پولیس افسر رویندر سنگھ کو قربانی کا بکرا کیسے بنایا ؟

بھارت نے فالس فلیگ آپریشن کی منصوبہ بندی کی ناکامی پر پولیس افسر رویندر سنگھ کو قربانی کا بکرا کیسے بنایا ؟

08:31 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )بھارت کی ایک اور فالس فلیگ آپریشن کی کوشش کا بھانڈا پھوٹ گیا۔ بھارت مقبوضہ کشمیر میں خود ریاستی دہشت گردی کا سرپرست نکلا۔ اپنے فالس فلیگ آپریشن کی منصوبہ بندی کی ناکامی پر پولیس افسر رویندر سنگھ کو قربانی کا بکرا بنا ڈالا۔ اسلحہ برآمد کیا گیا۔ اسی پولیس افسر کو بہادری پر 15 اگست 2019 کو صدارتی طلائی تمغہ دیا گیا تھا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی پولیس نے فالس فلیگ آپریشن کی منصوبہ بندی میں ناکامی پر پولیس افسر رویندر سنگھ کو گرفتار کرلیا۔ جو کولگام سے دو مبینہ دہشت گردوں کو اپنے ہمراہ لیکر دہلی جا رہا تھا ۔بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق افضل گرو نے بھی 2013 میں خط میں رویندر سنگھ کا ذکر کیا تھا،
افضل گروہ نے لکھا تھا رویندر سنگھ نے دہلی میں رہائش دی، مل کر پارلیمنٹ پر حملے کا کہا ہے۔فالس فلیگ آپریشن کے ذریعہ سے اپنے ہی لوگوں کو قتل کرکے الزام پاکستان کو دینا موجودی مودی رجیم کا پرانا طریقہ واردات ہے ، جو اب اپنے ہی ملک میں بے نقاب ہو چکا ہے ۔بھارتی عوام اس وقت جس بری طرح سے آر ایس ایس کے چنگل میں پھنسے ہوئے ہیں ،یہ صورتحال وہاں کے گاندھی بھگت پر امن شہریوں ، ارباب دانش ، اور سیاسی کارکنوں کے لئے چیلنج کی حیثیت رکھتی ہے ۔انہیں چاہئے کہ وہ اب مزید وقت ضائع کرنے کے بجائے اٹھیں اور معاملات کو انتہا پسندوں کے ہاتھ سے واپس لیں ، جنہوں نے ان کی شناخت تک کو مسخ کر ڈالا ہے ۔بھارت میں امن ،اور انسانی حقوق کو اہمیت دینے والے باغیرت شہریوں کی بنیادی ذمہ داری ہے کہ وہ اقلیتوں کو آر ایس ایس کی پر تشدد کارروائیوں سے بچائیں ،اگر انہوں نے موتی رجیم کا ہاتھ نہ روکا تو تباہی مقدر ہے ، یہ انتہا پسند ایسا انتشار بو کر جائیں گے ، جسے بھارت کی نسلیں صدیوں تک بھگتیں گی ، پاکستان نے اپنے حصے کی انتہا پسندی کا عذات بھگت لیا ہے ، بے پناہ قربانیاں دیکر تین دہائیوں میں ان اثرات سے نجات حاصل کی ہے ، مودی جس دلدل میں بھارت کو پھنسا رہا ہے ، اگر دیر ہوگئے تو بھارت کے لئے اس سے نکلنا ممکن نہیں ہو پائے گا ، اور یہ امن اور حقوق کے تسلیم کرنے والے پر امن بھارتی شہری خود کو مجرم سمجھیں گے مگر کچھ کر نہیں سکیں گے ، اس لئے اب وقت ہے کہ وہ اٹھیں اور مودی اور امیت شاہ جیسے انتہا پسندوں کا ہاتھ روکیں ۔


https://www.dailyausaf.com/epaper/popup.php?newssrc=issues/2020-01-14/101059/p10_01.gif

تازہ ترین خبریں