04:05 pm
پرانا صوفہ

پرانا صوفہ

04:05 pm


اسلام آباد(نیوز ڈیسک) یہ قدرت کا ایک نظام ہے کہ اکثر امیر ترین لوگ اتنی دولت ہونے کے باجود انتہائی بے ایمانی کا مظاہرہ کرتے ہیں جبکہ اکثر غریب ترین لوگ شدید مالی مشکلات کے باوجود ایمانداری کا کام ہاتھ سے نہیں جانے دیتے ایسا ہی ایک واقعہ امریکہ کے شہر واشنگٹن کی ریاست مشیگن میں پیش آیا۔ غریب افراد کیلئے قائم سٹور سے صوفہ خریدنے پر ہزاروں ڈالر نکل آئے، تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست مشیگن میں ایک انوکھا 
واقعہ پیش آیا جہاں غریب افراد کے لئے قائم سٹور سے صوفہ خریدنا پر شہری کے لئے اس وقت حیرانگی کا باعث بن گیا جب اس میں سے 43 ہزار سے زائد ڈالر ملے۔ بتایا گیا ہے کہ امریکی شہری کی بیوی اس کے لئے صوفہ خریدنے گئی۔استعمال شدہ چیزوں کی مارکیٹ جس کو غریبوں کے لئے قائم کیا گیا سے صوفہ خرید لائی۔ چند دن یہ صوفہ زیر استعمال رہا تاہم ایک دن کربی کو اس صوفے پر بیٹھتے بے چینی سی محسوس ہوئی۔ صوفے کی جانچ پڑتال شروع کردیگئی تاہم غور کرنے پر اس کو صوفے کی سائیڈ میں پھنسے نوٹ نظر آئے ۔ صوفے سے 43 ہزار ایک سو 73 روپے ملے۔ شہری کربی نے ان پیسوں کو اپنے پاس رکھنا غیر اخلاقی سمجھا۔ شہری کربی کی جانب سے یہ پیسے واپس مالک کو دینے کیلئے سٹور پہنچا تاہم معلوم ہوا کہ اس کا مالک انتقال کر چکا ہے،تاہم بیٹی زندہ ہے ۔ انتقال مالک کے ورثاء میں بیٹی کو جب 43 ہزار ڈالر کی رقم واپس کی گئی تو وہ حیران ہو گئی اور کہا کہ میں اس چیز سے ہمیشہ نا معلوم تھی ۔ تاہم شہری کربی نے کہا کہ میں چاہتا تو ان پیسوں سے اپنے گھر کی چھت ڈال سکتا تھا تاہم میں نے اخلاقی اصولوں کی پاسداری کرتے ہوئے پیسے واپس کرنا بہتر سمجھا۔ یہ بات بھی قابل غور رہے کہ رقم واپس کرنے والا شہری مالی مشکلات کا شکار تھا، اس کے گھر کی حالت بھی بدتر تھی ۔ تاہم اس نے رقم واپس لوٹا کر ایک جرات کا مظاہرہ کیا۔