02:45 pm
وہ مسلمان لڑکی جس کے لیے مہاراجہ  رنجیت سنگھ کو کوڑے کھانے پڑے

وہ مسلمان لڑکی جس کے لیے مہاراجہ رنجیت سنگھ کو کوڑے کھانے پڑے

02:45 pm


اُن کی عمر محض اٹھارہ برس کے قریب تھی اور وہ پیشہ ور رقاصہ اور گائیک تھیں۔ مگر ایک ہی ملاقات میں اُن کے حُسن اور آواز کے سحر نے حاکمِ وقت کو اپنا اسیر بنا لیا تھا۔ یہاں تک کہ وہ اس لڑکی سے شادی کرنے کے لیے کوڑے کھانے پر بھی تیار ہو گئے۔یہ لڑکی امرتسر کی گل بہار تھیں۔ پنجاب کے حاکم مہاراجہ رنجیت سنگھ نے پہلی مرتبہ انھیں ایک شاہی محفل میں گاتے سُنا 
اور دیکھا۔ اسی وقت مہاراجہ نے گل بہار کا قرب حاصل کرنے کی کوشش کی۔ وہ انھیں اپنی محبوبہ بنا کر رکھنا چاہتے تھے۔ مگر گل بہار نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا۔پنجاب کی تاریخ پر نظر رکھنے والے محقق اور مصنف اقبال قیصر کے مطابق رنجیت سنگھ ان پر اس قدر فریفتہ تھے کہ اپنا سب کچھ لٹانے کو تیار تھے۔ ’گل بہار ایک مسلم گھرانے سے تعلق رکھتی تھیں اس لیے انھوں نے رنجیت کو کہا کہ وہ محبوبہ بن کر نہیں رہ سکتیں۔‘اس وقت مہاراجہ کی عمر 50 برس سے زیادہ تھی اور یہ وہ دور تھا جب انگریز نے برصغیر میں قدم جمانے شروع کر دیے تھے۔ گل بہار نے پیشکش کی کہ اگر مہاراجہ چاہیں تو وہ ان سے شادی کرنے کو تیار ہیں۔اقبال قیصر بتاتے ہیں کہ ’مہاراجہ رنجیت سنگھ اس قدر جذباتی ہوئے کہ انھوں نے یہ پیشکش قبول کر لی۔‘ پنجاب کے مہاراجہ نے گل بہار کے گھر والوں سے باقاعدہ طور پر ان کا ہاتھ مانگا۔ایک روایت کے مطابق گل بہار نے شادی کی پیشکش کے ساتھ یہ شرط رکھی کہ رنجیت سنگھ ان کے گھر والوں سے رشتہ مانگنے کے لیے خود پیدل چل کر لاہور سے امرتسر آئیں گے۔ تاہم اقبال قیصر کے مطابق مستند تاریخ کی کتابوں سے اس بات کی تصدیق نہیں ہوتی۔تاہم پنجاب کے مہاراجہ کے لیے بھی سکھ مذہب سے باہر ایک مسلمان لڑکی سے باقاعدہ شادی کرنا اتنا آسان نہیں تھا۔سکھ مذہب کے مذہی افراد نے رنجیت سنگھ کے اس فیصلے کا بہت بُرا منایا۔ مہاراجہ کو امرتسر میں واقع سکھوں کی مقدس عبادت گاہ اکال تخت پر طلب کر لیا گیا۔ اکال تخت کو سکھ مذہب میں زمین پر خالصہ کی اعلٰی ترین جائے حاکمیت تصور کیا جاتا ہے۔بعض تاریخی حوالوں کے مطابق اکال تخت نے گل بہار سے شادی کرنے پر سزا کے طور پر رنجیت سنگھ کو اپنے ہاتھوں سے پورے گرودوارے کے فرش کو دھونے اور اسے صاف کرنے کی سزا دی۔تاہم اقبال قیصر کہتے ہیں کہ ان کی تحقیق کے مطابق ایسا نہیں تھا۔ ’اکال تخت نے رنجیت سنگھ کو کوڑے لگانے کی سزا دی۔ اپنی اس ملکہ کے لیے رنجیت سنگھ نے یہ سزا بھی قبول کی۔‘اس وقت رنجیت سنگھ کی عمر 50 برس سے زیادہ تھی۔ لیکن مسئلہ یہ تھا کہ وہ مہاراجہ تھے جن کی سلطنت کی حدیں پنجاب سے باہر بھی چلی جاتی تھیں۔ اس قدر بااثر شخصیت کو کوڑے کون لگا سکتا تھا؟ دوسری طرف اکال تخت کا حکم بھی تھا جو رد کرنا رنجیت سنگھ کے لیے بھی ممکن نہیں تھا۔اقبال قیصر کے مطابق ’اس کا حل یہ نکالا گیا کہ ریشم کا کوڑا تیار کیا گیا اور اس کے ساتھ رنجیت سنگھ کو کوڑے لگائے گئے اور حد پوری کی گئی۔‘ وہ کہتے ہیں اس طرح مہاراجہ نے ’کوڑے بھی کھا لیے اور گل بہار کو بھی نہیں چھوڑا۔‘رنجیت سنگھ اور گل بہار کی اس شادی اور اس پر ہونے والے جشن کو کئی مؤرخین نے تفصیل کے ساتھ بیان کیا ہے۔ وہ لکھتے ہیں کہ جن بڑے بوڑھوں نے اس شادی کو لاہور اور امرتسر میں دیکھا تھا وہ بعد میں یاد کرتے تھے کہ یہاں کبھی ایسی شادی بھی ہوئی تھی۔محقق اقبال قیصر بتاتے ہیں کہ اس شادی کا احوال مؤرخ سجان رائے نے اپنی ایک کتاب ’خلاصہ تواریخ‘ میں تحریر کیا ہے۔ وہ لکھتے ہیں کہ ’مہاراجہ رنجیت سنگھ نے باقاعدہ طور پر مہندی لگوائی، طلائی زیورات زیب تن کیے، اپنا شاہی لباس پہنا اور ہاتھی پر سوار ہوئے۔‘امرتسر کے رام باغ میں ایک بنگلہ تھا جس میں یہ شادی کی تقریب منعقد ہونا تھی۔ اس بنگلے کو چند روز قبل بند کر دیا گیا اور کئی روز تک اس کی تزین و آرائش کی گئی۔ اس کو خالی کروا لیا گیا تھا اور اس کے بعد جو پہلا شخص اس میں داخل ہوا وہ گل بہار تھیں۔شادی کی تقریب سے ایک رات قبل اس میں محفلِ موسیقی منعقد ہوئی، مجرے ہوئے اور چراغاں کیا گیا۔ ’اس محفل میں گانے والوں کو انعام میں سات ہزار روپے دیے گئے۔ یہ اس وقت ایک بہت بڑی رقم تھی۔‘شادی کی تقریب دھوم دھام سے ہوئی جس کے بعد شاہی جوڑا امرتسر سے لاہور کے لیے روانہ ہوا۔ لیکن لاہور میں داخل ہونے سے قبل دریائے راوی کا ایک چھوٹا سا نالہ ان کے راستے میں حائل ہو گیا۔اگر کوئی اور ہوتا تو وہ پیدل چل کر اس کو عبور کر سکتا تھا لیکن گل بہار اب لاہور کی ملکہ تھیں۔ یہ کیسے ہو سکتا تھا کہ ملکہ پالکی سے اتر کر پیدل چل کر نالہ عبور کرتیں۔ گل بہار نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا۔

تازہ ترین خبریں

عید الفطر پر موسم کیسا رہے گا ؟ محکمہ موسمیات نے پیشگوئی کر دی

عید الفطر پر موسم کیسا رہے گا ؟ محکمہ موسمیات نے پیشگوئی کر دی

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے طلبا کیلئے اچھی خبر

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے طلبا کیلئے اچھی خبر

عمران خان کے یوٹرنز بہت۔۔ کوئی ان پر اعتبار کرنے کو تیار نہیں۔۔شہباز شریف

عمران خان کے یوٹرنز بہت۔۔ کوئی ان پر اعتبار کرنے کو تیار نہیں۔۔شہباز شریف

 شہباز شریف کو باہر جانے کی اجازت دینا قانون کے ساتھ مذاق ہے،فواد چوہدری

شہباز شریف کو باہر جانے کی اجازت دینا قانون کے ساتھ مذاق ہے،فواد چوہدری

عید الفطر کب ہوگی؟ ماہر فلکیات نے پیشگوئی کردی

عید الفطر کب ہوگی؟ ماہر فلکیات نے پیشگوئی کردی

سندھ حکومت نے عیدالفطر کی چھٹیوں کا اعلان کردیا،نوٹیفکیشن جاری

سندھ حکومت نے عیدالفطر کی چھٹیوں کا اعلان کردیا،نوٹیفکیشن جاری

سندھ میں شام 6 بجے کریانہ سمیت تمام دکانیں بند کرنے کا فیصلہ

سندھ میں شام 6 بجے کریانہ سمیت تمام دکانیں بند کرنے کا فیصلہ

وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کیوں کر رہے ہیں؟ بڑی وجہ سامنے آگئی

وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کیوں کر رہے ہیں؟ بڑی وجہ سامنے آگئی

عید سے قبل حکومت نے عوام کو بڑی خوشخبری سنا دی،ایسا اعلان کہ ہرکوئی خوشی سے باغ باغ ہوگیا

عید سے قبل حکومت نے عوام کو بڑی خوشخبری سنا دی،ایسا اعلان کہ ہرکوئی خوشی سے باغ باغ ہوگیا

50 کروڑ ڈالر کہاں سے آنیوالے ہیں ؟ملکی معیشت کیلئے شاندار خوشخبری

50 کروڑ ڈالر کہاں سے آنیوالے ہیں ؟ملکی معیشت کیلئے شاندار خوشخبری

گورنر بلوچستان ڈٹ گیا،خبر نے سیاسی ایوانوں میںکھلبلی مچادی

گورنر بلوچستان ڈٹ گیا،خبر نے سیاسی ایوانوں میںکھلبلی مچادی

قطر کے وزیر خزانہ کو گرفتار کرلیا گیا

قطر کے وزیر خزانہ کو گرفتار کرلیا گیا

کتنے قیدیوں کی سزا میں کمی اور کتنوں کو رہا کردیاجائیگا؟نوٹیفکیشن جاری، عید سے قبل بڑی خبر آگئی

کتنے قیدیوں کی سزا میں کمی اور کتنوں کو رہا کردیاجائیگا؟نوٹیفکیشن جاری، عید سے قبل بڑی خبر آگئی

شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

شہباز شریف کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ