01:24 pm
یوم قائد اعظم ؒاور تقریب عہد نو

یوم قائد اعظم ؒاور تقریب عہد نو

01:24 pm

انجینئر جاوید کی حب الوطنی، خلوص اور میزبانی کو صد سلام کہ امارات میں 14سال کے قیام میں پہلی دفعہ کسی ایسے پروگرام میں شرکت کرنے کا موقع ملا کہ جس میں تمام شرکاء  کے چہرے
انجینئر جاوید کی حب الوطنی، خلوص اور میزبانی کو صد سلام کہ امارات میں 14سال کے قیام میں پہلی دفعہ کسی ایسے پروگرام میں شرکت کرنے کا موقع ملا کہ جس میں تمام شرکاء  کے چہرے کچھ کر گزرنے کے جذبے سے چمکتے ہوئے نظر آئے۔ یہ پروگرام بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح ؒکے یوم پیدائش کی یاد میں رکھا گیا تھا جس عظیم ہستی کے بارے میں گاندھی نے کہا تھا، ’’تاریخ عموما رینگتے ہوئے سفر کرتی ہے مگر میں نے قائداعظمؒ کی قیادت میں اسے ڈگ بھرتے ہوئے دیکھا ہے‘‘۔ تحریک قیام پاکستان کے اس تیز ترین سفر کو قائداعظم ؒکے رہنما اصولوں، ہارڈ ورک اور اپنے مشن سے اخلاص کے جزبے نے پایہ تکمیل تک پہنچایا تھا۔ تاریخ پاکستان کے طالب علم جانتے ہیں کہ علامہ اقبال رحمتہ اللہ علیہ نے 30دسمبر 1930 ء کو اپنے خطبہ آلہ آباد میں متحدہ ہندوستان کے مسلمانوں کے لئے علیحدہ وطن کا خواب دیکھا تھا جس کی تعبیر کو قائداعظم محمد علی جناح کی ولولہ انگیز قیادت نے ممکن بنایا۔
قائد اعظم ؒنے 1945 ء میں جب لارڈ لنلتھگوو کے دور میں مسلم لیگ کراچی کے اجلاس میں ’’تقسیم کرو اور نکل جائو‘‘کا نعرہ لگایا تھا تو اس وقت کسی کے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ فقط 3سال کے مختصر ترین عرصے میں نہ صرف پاکستان معرض وجود میں آ جائے گا بلکہ قائد اعظمؒ کی تاریخی جدوجہد آزادی کی وجہ سے ہندوستان کو بھی آزادی مل جائے گی۔ متحدہ  ہندوستان کے باسی محکوم قوم رہے تھے اور ان پر ہمیشہ  بیرونی حملہ آوروں نے حکومت کی تھی۔ انڈین عوام کی اکثریت ان پڑھ تھی اور اپنے جائز حقوق سے نابلد تھی۔ تاریخ بتاتی ہے کہ ہندوں کے سیاسی حقوق کے لئے دسمبر 1885ء میں آل انڈیا کانگریس کی پہلی بنیاد بھی ہندوستانی لیڈرشپ کی بجائے ایک انگریز ریٹائرڈ کلرک اے او ہیوم کی تجویز پر رکھی گئی تھی۔ بلکہ ہندوستانی سیاست دان تقسیم ہند کے بھی خلاف تھے۔ حتیٰ کہ غلامی کے ہندوستانی سحر کے زیر اثر مولانا ابوالکلام آزاد بھی ہندوستان کی تقسیم کے خلاف ہو گئے اور جب انڈیا کو آزادی ملی تو انہیں ’’انعام‘‘کے طور پر ہندوستان کا پہلا وزیر تعلیم بنا دیا گیا۔ اس طرح انڈین بزدل رہنمائوں نے قائداعظمؒ کو بھی قیام پاکستان کے مطالبہ سے دستبردار ہونے کی صورت میں  بھارتی وزارت عظمی کی پیش کش کی تھی۔ لیکن قائداعظم ؒدھن کے پکے نکلے جو اپنے مشن پر ڈٹے رہے اور پاکستان حاصل کر کے دم لیا۔ یہاں تک کہ پاکستان کا قیام ہندوستان سے پہلے عمل میں آ گیا یعنی پاکستان کی آزادی کا اعلان 14اگست کو اور ہندوستان کی آزادی کا ہوکہ 15اگست کو لگایا گیا۔   
قائداعظم ؒکی پیدائش کا دن اس تقریب میں کیا منایا گیا، ایسا لگ رہا تھا کہ ’’تحریک تکمیل پاکستان‘‘کا عہد کیا جا رہا ہے۔ پاکستان بننے کے ایک ہی سال بعد زیارت میں قائداعظمؒ کی 11سمبر 1948 ء کو بے یارومددگار رحلت ہوئی اور لیاقت علی خان کو بھی 16اکتوبر 1951ء کو لیاقت باغ میں شہید کر دیا گیا۔ پاکستان جس مقصد کے لیئے بنا تھا بہت جلد اسے ادھورا چھوڑ دیا گیا۔
 جب سرمد خان، عارف شاہد اور راقم بر دبئی ابراہیمی ریسٹورنٹ پر پہنچے تو استقبالیہ پر موجود عملہ ہمیں ایک بڑے گول میز پر لے گیا ۔ تھوڑی دیر بعد راس الخیمہ سے سفر کرتے ہوئے تقریب کے میزبان انجینئر جاوید صاحب بھی پہنچ گئے، جنہوں نے آتے ہی کھانے کے اس سب سے بڑے میز پر پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے جھنڈے لہرائے اور میز پر قائداعظم کی تصویر کو بھی نمایاں کیا۔
 گول میز پر بیٹھے مہمان (جن کو دیکھ کر ’’گول میز کانفرنس‘‘ یاد آتی رہی)ملکی مسائل، ان کے حل اور قائداعظم کے فرمودات کی روشنی میں پاکستان کے بہتر اور خوشحال مستقبل کے لیئے اتنے پرجوش تھے کہ سب کے سب  گھنٹہ بھر مذاکرات کرتے رہے جن میں پاکستان سے آئے ہوئے میڈیا پرسنز ڈاکٹر شاہد استقلال اور علی رضا (نظام ٹی وی)، ڈیلی ٹائمز کے کامران (جن کا تعلق قبائلی علاقہ وزیرستان سے تھا)جیٹ اونر اور چارٹر بروکر کیپٹن عامر شاہ (Midline Aviation Services)، لاہور کے معروف سیاست دان عظیم ملک اور پاک خیبر کے ندیم احمد صاحب شامل تھے۔ ان سب شرکا نے مہمانوں پر زور دیا کہ سمندر پار پاکستانیوں کے لیئے کردار سازی کا لائحہ عمل طے کیا جائے تاکہ امارات اور دیگر دنیا میں پاکستان کا امیج بہتر بنایا جا سکے۔تقریب کی دلچسپ بات کیک کے ذریعےپیغام تھا، بڑے کیک پر ملائم اور کوٹڈ کاغذ کی ایک شیٹ رکھی گئی جس پر قائداعظم ؒ کا ایک ارشاد، جو قائد نے اجلاس آل انڈیا مسلم سٹوڈنٹس فیڈریشن منعقدہ 15نمبر 1942ء  میں فرمایا تھا جلی حروف میں لکھا تھا:’’مجھ سے اکثر پوچھا جاتا ہے کہ پاکستان کا طرز حکومت کیا ہو گا؟ پاکستان کے طرز حکومت کا تعین کرنے والا میں کون ہوتا ہوں۔ مسلمانوں کا طرز حکومت آج سے تیرہ سو سال قبل قرآن کریم نے وضاحت کے ساتھ بیان کر دیا تھا۔ الحمدللہ قرآن مجید ہماری رہنمائی کے لئے موجود ہے اور قیامت تک موجود رہے گا۔‘‘اس تقریب کا اہتمام ’’ورلڈ ایشیئن ورکرز آرگنائزیشن‘‘کے بانی اور روح رواں مکرمی انجینئر جاوید  نے کیا تھا۔ 
 

تازہ ترین خبریں

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد

پاک فوج اور رائل سعودی لینڈ فورسز کی مشترکہ فوجی تربیتی مشقوں کا انعقاد

پی ٹی آئی  نے شیر افضل مروت کو شوکاز نوٹس جاری کردیا، وجہ سامنے آ گئی

پی ٹی آئی نے شیر افضل مروت کو شوکاز نوٹس جاری کردیا، وجہ سامنے آ گئی

مشکلات سے کبھی مایوس نہیں ہوئے،جو ناکامی سے ڈرتا ہے وہ کبھی کامیاب نہیں ہوتا، نواز شریف 

مشکلات سے کبھی مایوس نہیں ہوئے،جو ناکامی سے ڈرتا ہے وہ کبھی کامیاب نہیں ہوتا، نواز شریف 

پاکستانی گلوکارہ شازیہ منظور نے ٹی وی شو میں مذاق کرنے پر کامیڈین کو تھپڑدے مارے ،دیکھیں ویڈیو 

پاکستانی گلوکارہ شازیہ منظور نے ٹی وی شو میں مذاق کرنے پر کامیڈین کو تھپڑدے مارے ،دیکھیں ویڈیو 

یوٹیلٹی سٹورز اشیاء ضروریہ عام مارکیٹ  سے بھی مہنگے داموں فروخت کرنے  لگے ،قیمتوں میں فرق دیکھیں اس خبر میں

یوٹیلٹی سٹورز اشیاء ضروریہ عام مارکیٹ سے بھی مہنگے داموں فروخت کرنے لگے ،قیمتوں میں فرق دیکھیں اس خبر میں

مریم نواز اچھی اور قابل وزیراعلیٰ ثابت ہوں گی،ن لیگی قائد نواز شریف کا دعویٰ 

مریم نواز اچھی اور قابل وزیراعلیٰ ثابت ہوں گی،ن لیگی قائد نواز شریف کا دعویٰ 

ملک میں صدارتی الیکشن کس تاریخ  کو ہونیوالے ہیں ؟دیکھیں خبرمیں

ملک میں صدارتی الیکشن کس تاریخ کو ہونیوالے ہیں ؟دیکھیں خبرمیں

سندھ اسمبلی کے باہر سیاسی جماعتوں کا احتجاج، کارکنان گرفتار،ٹریفک نظام درہم پرہم 

سندھ اسمبلی کے باہر سیاسی جماعتوں کا احتجاج، کارکنان گرفتار،ٹریفک نظام درہم پرہم 

سندھ اسمبلی کے نومنتخب ارکان نے حلف اٹھا لیا،کراچی میں ایک ماہ کے لیے دفعہ 144 نافذ،دیکھیں خبر

سندھ اسمبلی کے نومنتخب ارکان نے حلف اٹھا لیا،کراچی میں ایک ماہ کے لیے دفعہ 144 نافذ،دیکھیں خبر

راولپنڈی، گیس لیکج کے باعث   خوفناک دھماکہ، تفصیل جانیں

راولپنڈی، گیس لیکج کے باعث خوفناک دھماکہ، تفصیل جانیں

پابندی کے باوجود میں بسنت منانے پر  سینکڑوں افراد کو گرفتارکر لیا گیا ،دیکھیں تفصیل 

پابندی کے باوجود میں بسنت منانے پر  سینکڑوں افراد کو گرفتارکر لیا گیا ،دیکھیں تفصیل 

الیکشن کمیشن کی جانب سے قومی اسمبلی کے لیے تازہ ترین پارٹی پوزیشنز شیئر کر دیں گئیں 

الیکشن کمیشن کی جانب سے قومی اسمبلی کے لیے تازہ ترین پارٹی پوزیشنز شیئر کر دیں گئیں 

حمزہ شہباز کو مرکز میں رکھنے کا فیصلہ کر لیا گیا ،دیکھیں تفصیل 

حمزہ شہباز کو مرکز میں رکھنے کا فیصلہ کر لیا گیا ،دیکھیں تفصیل 

تعلیمی اداروں میں26 فروری کو تعطیل کا اعلان، نوٹیفکیشن جاری،تفصیل خبر میں

تعلیمی اداروں میں26 فروری کو تعطیل کا اعلان، نوٹیفکیشن جاری،تفصیل خبر میں