یا رسول اللہ کیا ہم قیامت کے دن اللہ تعالیٰ کی ذات کو دیکھ سکیں گے؟ آپ ﷺ نے فر ما یا کہ دوپہر کےوقت جب۔۔۔۔
  11  اکتوبر‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل

حضرت ابو خدریؓ سے روایت ہے کہ نبیﷺ سے چند لوگوں نے عرض کی کہ یا رسول اللہﷺ کیا ہم قیامت کے دن اللہ تعالیٰ کی ذات کو دیکھ سکیں گے؟ آپ ﷺ نے فرمایا ہاں دیکھو گے۔ دوپہر کے وقت جب ابر وغیرہ کچھ نہ ہو اور موسم صاف ہو تو سورج کی روشنی دیکھنے میں کچھ احتلاف ہے؟عرض کیا نہیں اس کے آپﷺ نے فرمایا چودھویں کی رات کو جب ابر موجود نہ ہو تو کیا تمہیں چاند دیکھنے میں کوئی احتلاف ہے؟عرض کیا نہیں یا رسول اللہﷺ۔

تو نبیﷺ نے فرمایا کہ پس اسی طرح قیامت کے روز تم رب تبارک تعالیٰ اور کوئی دقت نہیں ہو گی جیسے سورج اور چاند دیکھتے نہیں ہوتی۔ اور قیامت کا دن ایسا دن ہو گا کہ پکارنے والا پکارے گا کہ تم جو آدمی جس کو پاجتا تھا اسی کے ساتھ ہو لے لہذا اللہ کے سوا پرستش کرنے والا کوئی باقی نہیں رہے گا۔چنانچہ جھوٹے بجاری اپنے چھوٹے معبودوں کے ساتھ دوزخ میں گریں گے۔ اور صرف وہی باقی رہ جائیں گے جو صرف اللہ کی زات کو پوجتے تھے۔ اس میں اچھے برے سب ہی ہوں گے۔ پھر کچھ اہل کتاب یعنی یہودی بلائے جائیں گے اور ان سے کہا جائے گا کہ تم اللہ کی زات کے علاوہ کسی کو پوجتے تھے تو وہ جواب دیں گے کہ ہاں ہم حضرت عزیز کو پوجتے تھے کہ وہ خدا کے بیٹے تھے۔ تو ان سے کہا جائے گاکہ تم جھوٹ کہتے ہو کیونکہ نا اللہ کی بیوی ہے اور نہ ہی بیٹا پھر ان سے پوچھا جائے گا کہ تم کیا چاہتے ہو؟ وہ کہیں گے کہ ہم کو پیاس لگی ہے تھوڑا سا پانی مل جائے گالہذا ان کے لیے ریتے کا ایک میدان بنایا جائے گا جو پانی کی طرح چمک رہا ہو گا حالانکہ وہ دوذخ ہو گا اور ان کو اس کے پاس بھیجا جائے گا اور وہ ان کو جلا کر بھسم کر دے گااور اس کے بعد انصاریٰ کو بلایا جائے گا اور ان سے بھی یہی سوال ہو گاوہ بولیں گے کہ ہم یسوع مسیح ؑکو پوجتے تھے وہ خدا کے بیٹے ہیں جواب ملے گا کہ تم لوگ کازب ہوکیونکہ خدا تعالیٰ کی کوئی بیوی یا بیٹا نہیں ہے۔ اور وہ دوزخ میں گر پڑیں گے۔ پھر میدان میں وہی ہوں گے جو اللہ کی عبادت کرتے ہوں گے۔ اور ان میں اچھے برے سب ہی ہوں گے۔ مگر اللہ ان کی صورت پر نظر نہیں آئے گا جس کو وہ جانتے تھے تو ان سے کہا جائے گا کہ تمہیں کس کا انتظار ہے؟حالانکہ ہر فرقہ اپنے ٹھکانے پر جا چکا ہو گا۔ جواب دیں گے کہ ہم اس معبود برحق کی راہ دیکھ رہےہیں جس کی عبادت کرتھے تھے پھر اللہ تعالیٰ فرمائے گا کہ میں تمہارا رب ہو ں پھر سب لوگ کہیں گے ہم اللہ کے ساتھ کسی کو شریک اور ساجھی نہیں بناتے یہ جملہ دو تین بار کہیں گے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
88%
ٹھیک ہے
6%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
6%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved