پانی کی پلاسٹک والی بوتل میں دوبارہ پانی بھر کے پینے کا کیا نقصان ہے ؟ جان کر آپ اس کام سے توبہ کر لیں گے
  11  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل

اگر آپ بھی پانی کی استعمال شدہ بوتل میں دوبارہ پانی بھر کر پیتے ہیں تو جان لیجئے کہ یہ عمل آپ کی صحت کیلئے انتہائی مضر ثابت ہو سکتا ہے۔ٹریڈ مل ریویوز میگزین کی جانب سے کئے گئے ٹیسٹ میں ثابت ہوا ہے کہ پانی کی استعمال شدہ بوتل میں جراثیم کی 9 لاکھ کالونیاں ہوتی ہیں جن میں سے 60 فیصد آپ کو انتہئی بیمار بنانے کیلئے کافی ہوتے ہیں۔تحقیق میں ای ہفتے کیلئے چند کھلاڑیوں کی بوتلوں کا معائنہ کیا گیا، جس میں ثابت ہوا کہ ایک بوتل پر ٹوائلیٹ سیٹ سے زیادہ جراثیم موجود ہوتے ہیں۔ڈاکٹر میریلن گلین ول نے بتایا کہ بوتل کے پلاسٹک میں موجود چند کیمیکلز جسم کے ےقریباً ہر حصے کیلئے نقصاندہ ہیں۔ ڈاکٹر میریلن کا کہنا ہے کہ اپنی بوتل کو دوبارہ استعمال نہ کریں، لیکن اگر ضروری ہوتو کم سے کم اسے گرم پانی سے نہ دھوئیں۔

یہ عمل آپ کی صحت کیلئے انتہائی مضر ثابت ہو سکتا ہے۔ پانی کی استعمال شدہ بوتل میں جراثیم کی 9 لاکھ کالونیاں ہوتی ہیں جن میں سے 60 فیصد آپ کو انتہئی بیمار بنانے کیلئے کافی ہوتے ہیں۔تحقیق میں ای ہفتے کیلئے چند کھلاڑیوں کی بوتلوں کا معائنہ کیا گیا، جس میں ثابت ہوا کہ ایک بوتل پر ٹوائلیٹ سیٹ سے زیادہ جراثیم موجود ہوتے ہیں۔ڈاکٹر میریلن گلین ول نے بتایا کہ بوتل کے پلاسٹک میں موجود چند کیمیکلز جسم کے ےقریباً ہر حصے کیلئے نقصاندہ ہیں۔ڈاکٹر میریلن کا کہنا ہے کہ اپنی بوتل کو دوبارہ استعمال نہ کریں، لیکن اگر ضروری ہوتو کم سے کم اسے گرم پانی سے نہ دھوئیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
33%
ٹھیک ہے
33%
کوئی رائے نہیں
33%
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved