روضہ رسول پر سرخ دائرہ میں موجود کھڑکی
  12  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     اوصاف سپیشل

بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں بارش نہیں برس رہی تھی قحط سالی پڑ گئی ۔کچھ صحابی اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها کی خدمت میں حاضر ہوئے اور عرض کی کہ اماں جان کوئی ایسا وظیفہ کوئی ایسا امر بتائیں کہ قحط سالی ختم ہو جائے اور ابر رحمت برسنے لگے۔

تو اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ طاہرہ طیبہ رضی اللہ عنها فرمانے لگیں کہ روضئہ رسولؐ کی چھت پر جو روشندان یعنی کھڑکی رکھی گئی ہے اسے کھول دو۔جب روضئہ رسول کا اور آسمان کا سامنہ ہوا تو خوب بارش برسنے لگی یہاں تک کہ لوگ دوبارہ ام المومنین کی بارگاہ میں حاظر ہوئے اور بارش روکنے کے وظائف و تدابیر دریافت کرنے لگے۔تو اماں عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها نے فرمایا کہ روضئہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی وہ کهڑکی دوبارہ بند کر دو۔چنانچہ کھڑکی بند کرتے ہی بارش تھم گئی۔ اگر یہ معلومات اچھی لگے تو اپنے دوست احباب کے ساتھ بھی شیئر کریں۔اور مجھے بھی اپنی دعائوں میں یاد رکھیئے جزاک اللہ خیر‎


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
91%
ٹھیک ہے
3%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
6%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved