ٹاکنگ ٹام
  14  فروری‬‮  2018     |     اوصاف سپیشل

ایک گاہک آئی پیڈ کی ٹُوٹی ہوئی سکرین ری پلیس کروانے کے لیے آیا تو دکاندار نے ایسے ہی پوچھ لیا "کیسے ٹوٹی" تو اُس نے خالصتاً پنجابی لب و لہجے میں جو پس منظر بتایا وہ سُن کر ہم بہت دیر تک محظوظ ہوتے رہے۔۔ اس نے بتایا کہ اس کا چھوٹا بیٹا جو ابھی تین سال کا ہے اور ٹھیک سے بولنا سیکھ رہا ہے میرے سیل فون کے پیچھے پڑا رہتا تھا۔۔ میں نے بیگم کی فرمائش پر اسے یہ آئی پیڈ نئی لے کر دے دی۔۔ آج اسے لیے دوسرا دِن تھا کہ صبح صبح میں نے اس میں "ٹاکنگ ٹام" ایپلیکیشن انسٹال کر دی۔۔۔ ۔

کچھ دیر بعد بچہ ٹاکنگ ٹام سے باتیں کرنے لگا وہ جو کوئی لفظ منہ سے نکالتا ٹاکنگ ٹام اسے ریپیٹ کردیتا۔۔۔ تھوڑی دیر بعد جب اس کا موڈ خراب ہوا تو اس نے ٹاکنگ ٹام سے کہا "چُپ کر جاؤ" ٹاکنگ ٹام نے بھی آگے سے یہی کہا "چُپ کرجاؤ" "تم چپ کر جاؤ" ٹاکنگ ٹام نے بھی وہی الفاظ دہرا دئیے "اثر نہیں ہوتا؟" "اثر نہیں ہوتا؟" "ابھی طبیعت ٹھیک کرتا ہوں" "ابھی طبیعت ٹھیک کرتا ہوں" ۔ اُس نے جِھلّا کر چمچ اٹھایا اور ٹاکنگ ٹام کی طبیعت ٹھیک کردی ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اوصاف سپیشل

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved