08:24 am
پاک بھارت کشیدگی میں کمی کے باوجود اسٹاک مارکیٹ سنبھل نہ سکی

پاک بھارت کشیدگی میں کمی کے باوجود اسٹاک مارکیٹ سنبھل نہ سکی

08:24 am

کراچی(نیو زڈیسک) پاک بھارت کشیدگی کم کرنے میں سعودی عرب کے کردار ادا کرنے اطلاعات کے باوجود پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں جمعہ کو چوتھے سیشن میں اتارچڑھاو کے بعد مندی کاتسلسل قائم رہا جس سے انڈیکس کی 39000پوائنٹس کی نفسیاتی حد بھی گرگئی۔پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی کے سبب 71اشاریہ17 فیصد حصص کی قیمتیں گرگئیں جبکہ سرمایہ کاروں کے مزید41ارب 53 کروڑ 19لاکھ91 ہزار605 روپے ڈوب
گئے۔ماہرین اسٹاک کا کہنا تھاکہ آئی ایم ایف بیل آوٹ پیکیج سے متعلق کوئی مثبت اطلاع موصول نہ ہونے پر سرمایہ کاروں نے محتاط طرز عمل اختیارکیا جسکے نتیجے میں کاروباری حجم کے اعدادوشمار رواں ماہ کے کم ترین سطح پر آگئے۔کاروباری دورانیئے میں ایک موقع پر29پوائنٹس کی تیزی بھی رونماہوئی لیکن سیمنٹ اورایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن سیکٹر میں بڑھتی ہوئی فروخت کے سبب تیزی ایک موقع پر439پوائنٹس کی مندی میں تبدیل ہوئی تاہم اختتامی لمحات میں نچلی قیمتوں پر کریداری سرگرمیاں بڑجنے سے مندی کی شدت میں کمی واقع ہوئی نتیجتاًکاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس343اشاریہ 87 پوائنٹس کی کمی سے 38950اشاریہ23 ہوگیا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس 203اشاریہ 30پوائنٹس کی کمی سے 18580 اشاریہ37 ، کے ایم آئی30 انڈیکس915 اشاریہ21 پوائنٹس کی کمی سے64383اشاریہ01 اور پی ایس ایکس کے ایم آئی انڈیکس 175اشاریہ18 پوائنٹس کی کمی سے 18918 اشاریہ 83ہوگیا۔کاروباری حجم جمعرات کی نسبت11 فیصدکم رہااور مجموعی طورپر 7کروڑ39 لاکھ 84ہزار760 حصص کے سودے ہوئے جبکہ کاروباری سرگرمیوں کا دائرہ کار 333 کمپنیوں کے حصص تک محدود رہا جن کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں نمایاں اضافہ ہوا ان میں فلپس موریس کے بھاو 148روپے 99پیسے بڑھ کر 3128 روپے89پیسے اور باٹا پاکستان کے بھاؤ 87 روپے 54 پیسے بڑھ کر 1838 روپے 45پیسے ہوگئے جبکہ پاک سروسز کے بھاؤ51 روپے کم ہوکر 972روپے اور وائتھ پاکستان کے بھاؤ 22روپے66پیسے کم ہوکر1200 روپے 67 پیسے ہوگئے۔