07:39 am
وزیر اعظم کے حکم کے بغیر ہی FBRنے پٹرول کی قیمتیں بڑھا دیں

وزیر اعظم کے حکم کے بغیر ہی FBRنے پٹرول کی قیمتیں بڑھا دیں

07:39 am

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )وزیر اعظم کے حکم کے بغیر ہی FBRنے پٹرول کی قیمتیں کتنی بڑھا دیں ؟ پاکستانیوں کیلئے ہوشربا خبر ۔۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے پٹرولیم مصنوعات پرٹیکس میں اضافے کانوٹیفکیشن جاری کر دیاہے۔اعلامیے کے مطابق اب پٹرول کی نئی قیمت9روپے اضافے کے ساتھ 108 روپے فی لٹر ہو گی جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت 122 روپے 32 پیسے فی لٹرہو گئی ہے۔
نوٹیفکیشن کے مطابق لائٹ ڈیزل کی قیمت 86 روپے 94 پیسے فی لٹر اور مٹی کے تیل کی قیمت 96روپے 77 پیسے ہو گئی یے۔ ذرائع کے مطابق ایف بی آرنے پٹرولیم مصنوعات پرجی ایس ٹی میں اضافے کانوٹیفکیشن کابینہ کی منظوری کے بغیرجاری کیا ہے۔ایف بی آر نے مٹی کے تیل پر جی ایس ٹی 8 فیصد سے بڑھا کر 17 فیصد کر دیا ہے جبکہ ڈیزل پر جی ایس ٹی 13 فیصد سے بڑھا کر 17 فیصد اور پٹرول پر جی ایس ٹی 2 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کردیا گیا ہے۔ایف بی آر نے یہ اضافہ کابینہ کی منظوری سے پہلے ہی کردیا ہے اور اس کا نوٹیفکیشن بھی جا ری کر دیا گیا ہے۔ایف بی آر کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق پٹرول پرسیلزٹیکس کی شرح 2 فیصد سے بڑھاکر 12 فیصدکردی گئی ہے اور ٹیکس کے بڑھنے سے پٹرول کی قیمت108روپے فی لٹرہوگئی ہے جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل پر سیلزٹیکس 4 فیصدبڑھا دیا گیا ہے جس کے بعد ہائی سپیڈ ڈیزل4 روپے89پیسے فی لٹرمہنگا ہو گیااور ڈیزل کی نئی قیمت 122روپے 32پیسے فی لٹرہو گئی ہے۔

تازہ ترین خبریں