08:19 am
جنوبی پنجاب میں رواں سال کپاس کا صرف 10 فیصد ہدف پورا ہو سکا

جنوبی پنجاب میں رواں سال کپاس کا صرف 10 فیصد ہدف پورا ہو سکا

08:19 am

اسلام آباد(نیو زڈیسک) ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر میں محکمہ زراعت کی عدم دلچسپی اور موسمی تبدیلی کے باعث رواں سال کپاس کا صرف 10 فیصد ہدف ہی پورا ہو سکا ہے جس سے نہ صرف کاشتکار پریشان ہیں بلکہ روئی کی ایکسپورٹ بھی متاثر ہونے کا امکان ہے۔ملتان ڈویژن کے اضلاع وہاڑی، خانیوال اور لودھراں میں رواں سال کپاس کی کاشت کا ہدف 49 لاکھ ایکڑ رقبہ مقرر کیا گیا لیکن محکمہ زراعت کی عدم توجہ اور ہوا میں نمی
کا تناسب بڑھنے کے باعث تاحال صرف 9 لاکھ 80 ہزار ایکٹر رقبے پر ہی کپاس کی کاشت مکمل ہو سکی ہے جس سے کاشتکار بھی پریشان ہیں۔کپاس کے زیر کاشت رقبے میں خاطر خواہ کمی کی وجہ سے رواں سال روئی کی برآمد میں بھی واضح کمی کا اندیشہ ہے تاہم محکمہ زراعت کے حکام کا کہنا ہے کہ کپاس کی کاشت ملکی معیشیت میں اہم کردار ادا کرتی ہے اس لئے کاشتکار رواں ماہ کے آخر تک زیادہ سے زیادہ کپاس کی کاشت کو یقینی بنائیں۔کپاس کی کاشت میں تاخیر سے نہ صرف پیداواری لاگت میں اضافہ ہو گا بلکہ فی ایکڑ اوسط پیداوار میں بھی واضح کمی ہو گی جس سے زراعت کے شعبے کو نقصان پہنچے گا۔

تازہ ترین خبریں