09:19 am
پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی،سرمایہ کاروں کے مزید44ارب74کروڑ روپے سے زائدڈوب گئے،انڈیکس نفسیاتی حد سے بھی گر گیا

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی،سرمایہ کاروں کے مزید44ارب74کروڑ روپے سے زائدڈوب گئے،انڈیکس نفسیاتی حد سے بھی گر گیا

09:19 am

کراچی (این این آئی)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مندی کا تسلسل جاری کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کو بھی مندی رہی اورکے ایس ای100انڈیکس31700پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے بھی گرگیا،مندی کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کے مزید44ارب74کروڑ روپے سے زائدڈوب گئے،کاروباری حجم گذشتہ روزکی نسبت12.02فیصدزائد جبکہ50.95فیصد حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیاگیا۔حکومتی مالیاتی اداروں مقامی بروکریج ہاؤسز سمیت دیگرانسٹی ٹیوشنز کی جانب سے سیمنٹ، توانائی۔ اسٹیل، فوڈزاور بینکنگ سیمت منافع بخش سیکٹرکی نچلی سطح پر آئی ہوئی قیمتوں پر خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہواٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس 31775پوائنٹس کی سطح
 
پر بھی ریکارڈ کیاگیاتاہمکراچی: مقامی سرمایہ کار گروپوں نے اعتماد کے فقدان اورمستقبل میں افراط زر اور شرح سود میں ممکنہ اضافے کے خدشات کے پیش نظرتازہ سرمایہ کاری کے بجائے حصص کی آف لوڈنگ کوترجیح دی جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور دوران ٹریڈنگ کے ایس ای100انڈیکس 31485پوائنٹس کی نچلی سطح پر بھی دیکھا گیاتاہم بعدازاں غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے مارکیٹ میں سرمایہ کاری کی گئی، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس کی 31600کی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاؤ کا سلسلہ سارادن جاری رہا۔ مارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس 76.11پوائنٹس کمی سے 31658.12پوائنٹس پر بندہوا۔ماہرین اسٹاک کے مطابق میوچل فنڈز کے علاوہ سرمایہ کاری کے دیگر شعبوں کی جانب سے بھی فروخت کا رجحان غالب ہونے اور لسٹڈ کمپنیوں کی جانب سے مالیاتی نتائج توقعات کے مطابق نہ ہونے کی وجہ سے مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کی دلچسپی گھٹتی جارہی ہے۔منگلکو مجموعی طورپر314کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے160کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،134کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ20کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں 44ارب74کروڑ86لاکھ40ہزار677روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر63کھرب60ارب54کروڑ34لاکھ37ہزار834روپے ہوگئی۔منگل کومجموعی طور پر5کروڑ12لاکھ88ہزار820شیئرزکاکاروبارہوا،جوپیرکی نسبت55لاکھ3ہزار790شیئرززائد ہیں۔قیمتوں کے اتارچڑھاؤ کے حساب سے ایبٹ لیبارٹریزکے حصص سرفہرست رہے،جس کے حصص کی قیمت15.06روپے اضافے سے371.73روپے اوراٹلس ہنڈالمیٹڈکے حصص کی قیمت14.95روپے اضافے سے313.95روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی نیسلے پاکستان کے حصص میں ریکارڈکی گئی،جس کے حصص کی قیمت273.25روپے کمی سے5555.00روپے اوریونی لیورفوڈزکے حصص کی قیمت175.00روپے کمی سے5600.00روپے ہوگئی۔منگل کومیپل لیف سیمنٹ کی سرگرمیاں 47لاکھ33ہزارشیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں، جس کے شیئرزکی قیمت57پیسے کمی سے17.51روپے اورٹی آر جی پاک لمیٹڈسرگرمیاں 38لاکھ19ہزار500شیئرزکے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی،جس کے شیئرزکی قیمت34پیسے اضافے سے12.17روپے ہوگئی۔منگل کوکے ایس ای30انڈیکس34.47پوائنٹس کمی سے15069.94پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس5.44پوائنٹس اضافے سے49798.02پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس162.04پوائنٹس کمی سے23032.79پوائنٹس پربندہوا۔

تازہ ترین خبریں