پونے چھ ارب کے سیکنڈل کا استقبال
  3  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     کالمز   |  مزید کالمز

٭تاریکی میں سایہ کس طرح ساتھ چھوڑ دیتا ہے، ہوا کس طرح رُخ بدلتی ہے!1999ء میں جنرل پرویز مشرف نے وزیراعظم نوازشریف کو گرفتارکراکے پہلے عمر قید کی سزا دلائی پھر سعودی عرب بھیج دیا۔ نوازشریف کے سب سے قریبی ساتھی اسحاق ڈار کوبھی قید کیاگیا۔ وہ نوازشریف کے خلاف وعدہ معاف گواہ بننے پر رضا مند ہوگیا۔ نوازشریف کے خلاف متعدد الزامات پر مشتمل47 صفحات کا ایک گواہی نامہ اپنے ہاتھ سے لکھ کر جنرل مشرف کو دیا… وقت بدلا…نوازشریف نے واپس آکر وزیراعظم کا عہدہ سنبھالا اور اسحاق ڈار کووزیرخزانہ بنالیا۔ اسحاق ڈارکی سفارش پر وزیراعظم نے ایک بہت قریبی 'رضا کار' سعیداحمد کو سٹیٹ بینک کا گورنر بنادیا (50 لاکھ روپے ماہوار)… پھر نوازشریف ، اسحاق ڈار اور سعید احمد پر زوال آیا۔ گزشتہ روز سعید احمد نے اسحاق ڈار کے خلاف وعدہ معاف گواہ بن کر عدالت میں بیان دیا ہے کہ اسحا ق ڈارکی کمپنی نے میرے نام پر پانچ جعلی فارن کرنسی اکاؤنٹ کھلوائے تھے!! قارئین کرام! اس قصّے پر کون سا مشہور محاورہ آپ کے ذہن میں آرہا ہے؟ عدالت کے حکم پر اسحاق ڈار کے اثاثے منجمد ہو چکے ہیں اور بیٹوں کو عدالت میں طلب کیا جاچکا ہے۔ گزشتہ روز اسحاق ڈار عدالت میں پیش نہیں ہوئے ۔ بتایا گیا کہ علاج کے لیے لندن گئے ہیں! !اب 8 نومبر کو طلب کیاگیا ہے۔ آج نوازشریف بھی احتساب عدالت میں پیش ہونے والے ہیں! ٭اور عالم کیا ہے ۔ اس ملک کا ایک وزیراعظم ہے جو خود کوئی فیصلے نہیں کرتا۔ہر کام سابق وزیراعظم سے پوچھ کر کرتا ہے۔ اس سے ملاقات کے لیے کبھی لاہور، کبھی لندن چلاجاتا ہے۔ کسی بھی ملک کا اہم ترین محکمہ خزانہ کا ہوتاہے۔ اس ملک کا بھی ایک وزیر خزانہ ہے جو ایک عرصے سے اس سے لاتعلق ہے۔ اس کے خلاف منی لانڈرنگ اور دولت کے ناجائز ڈھیر لگانے کے نئے نئے کیس نکل رہے ہیں۔ احتساب عدالت میں پیشیاں ہورہی ہیں۔ وہ انجیو گرافی کے لیے کئی روز سے لندن میں بیٹھا ہواہے۔ پاکستان کے ہر شہر میں انجیو گرافی کا جدید ترین نظام موجود ہے مگر ان لوگوں کی انجیو گرافی صرف لندن میں ہوسکتی ہے۔ عدالت میں عدم حاضری پر اس کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوچکے ہیں۔ ایک شخص علی احمد نے 50 لاکھ روپے کی ضمانت جمع کرائی ہے، 8 نومبر کو اسحاق ڈار کی عدم حاضری پر یہ رقم ضبط ہو جائے گی۔ ملک کا چارسال سے کوئی وزیر خارجہ نہیں تھا، اب ایک عرصے سے کوئی وزیر خزانہ نہیں۔ عالمی بینک نے اسحاق ڈار کو وزیر خزانہ کے طور پر قبول نہیں کیا، وہاں وزیر داخلہ کو جانا پڑا۔ وزیرخزانہ نہ ہونے سے ملک کا سارا مالیاتی نظام رک گیا ہے، اور وزیر داخلہ احسن اقبال کا اعلان آرہاہے کہ ملک بہت ترقی کررہاہے۔ ٭عدل وانصاف! ! سپین پر امیرحکم حکمران تھا۔ اس کے حکم پر مسجدقرطبہ میں توسیع شروع ہوئی۔ ایک خاتون کا گھر زدمیں آگیا۔ اس نے قاضی یحییٰ کی عدالت میں اپیل کردی۔ قاضی نے سپین کے حکمران کو بلالیا۔ امیر حکم کسی پروٹوکول کے بغیر آکرکٹہرے میں کھڑا ہوگیا۔ عورت نے استغاثہ پیش کیا۔ امیر حکم نے اپنامؤقف بتایا اور قاضی یحییٰ نے عورت کے حق میں فیصلہ سنا دیا۔ امیر حکم نے کوئی احتجاج نہیں کیا اورفیصلہ تسلیم کرلیا… گزشتہ روز پونے چھ ارب روپے کی کرپشن کے ملزم شرجیل میمن کو جیل سے پھولوں سے لدی ایک گاڑی میں سندھ اسمبلی میں لایا گیا۔ وہاں بھی پھولوں سے استقبال ہوا۔ وہ ایک ہیرو کی طرح ایوان میں داخل ہوا۔ وزیراعلیٰ سمیت حکومتی ارکان نے پر جوش ڈیسک اور تالیاں بجائیں۔ پھر شرجیل میمن اوروزیراعلیٰ سندھ نے پاکستان میں 'عدل وانصاف' پر جوشیلی تقریریں کیں! ٭کچھ دوسروں کی باتیں:۔موہالی بھارت کے شہر چندی گڑھ کے نزدیک ایک شہر ہے۔ اس کے ایک نجی سکول میں پولیو زدہ ایک بچی واسو ہنسل وہیل چیر پر10برس تک آتی رہی۔ سکول کی لیبارٹریاں چوتھی منزل پر ہیں۔ سکول کی ایک آیا اس بچی کوگود میں اٹھا کر چوتھی منزل تک لے جاتی تھی۔ بچی بڑی ہوگئی تو اسے اٹھا کر اوپر لے جانا ممکن نہ رہا۔ اس پر سکول کی پرنسپل انورا دھا دعا نے سکول کی طرف سے14 لاکھ روپے( پاکستان کے 24 لاکھ)سے اس بچی کے لیے چوتھی منزل جانے کے لیے ایک لفٹ لگوادی ہے!! ایک واقعہ پہلے ہی لکھ چکا ہوں کہ جاپان میں ایک ریلوے ٹرین کوبہت دور ایک شہر تک جانے میں بہت خسارہ ہورہا تھا۔ انتظامیہ نے ٹرین بند کرنے کا فیصلہ کیا۔ معلوم ہوا کہ ایک طالبہ ہر روز اس ٹرین کے ذریعے اس دور دراز شہر میں پڑھنے جاتی ہے۔ اس کی تعلیم مکمل ہونے میں چھ ماہ باقی ہیں۔ انتظامیہ نے فیصلہ کیا کہ صرف اس بچی کے لیے ٹرین مزید چھ ماہ تک اسی طرح چلتی رہے گی! قارئین کرام! یہ دونوں واقعات دوسرے ملکوں سے تعلق رکھتے ہیں!! ٭پارلیمنٹ میں نیا انتخابی بل پیش کیاجارہاہے۔ اس کے مطابق دوسرے صوبوں کے لیے قومی اسمبلی کی نشستیں بڑھ گئی ہیں مگر پنجاب کی 9 نشستیں کم کردی گئی ہیں۔ ابھی تک پنجاب کے کسی لیڈر کا احتجاج سامنے نہیں آیا کہ کیا پنجاب کا رقبہ بہت سکڑ گیا ہے یا اس کی آبادی بہت کم ہوگئی ہے؟ ویسے ابھی تک تو یہی معلوم نہ ہو سکا کہ پنجاب کا لیڈر کون ہے؟ بہت عرصہ پہلے مصطفےٰ کھر نے پنجاب کا لیڈر ہونے کا اعلان کیا تھامگر ضیاء الحق کے مارشل لاء میں یہ لیڈر رات کے اندھیرے میں برطانیہ بھاگ گیا تو پنجاب اس کی لیڈری سے محرو م ہوگیا!! ٭آصف زرداری کی صدارتی حکومت کے دوران بڑھاپے کی عمر والے ملازمین کو زندگی کی سہولتیں فراہم کرنے کے لیے ''ای او بی آئی'' کے نام سے ایک منصوبہ تیار ہوا۔ مگر منصوبے کی ابتدائی فزیبلٹی رپورٹ ہی تیارنہ ہوسکی نہ ہی اس پر کوئی کام ہوا، اور ساڑھے پانچ ارب روپے خرچ ہوگئے! یہ رقم کھاپی کر2013ء میں منصوبہ بند کر دیا گیا۔ ساڑھے پانچ ارب کہاں گئے؟ کچھ پتہ نہیں! یہ بات گزشتہ روز اس منصوبہ کے چیئرمین نے قومی اسمبلی کی اکاؤنٹس کمیٹی کے اجلاس میں بتائی جس کی صدارت کمیٹی کے چیئرمین سید خورشید شاہ کررہے تھے۔ انہوں نے اس ساری داستان کا سخت نوٹس لیا اور کہا کہ یہ منصوبہ ختم نہیں ہونے دیاجائے گا۔ اس پر کیا لکھاجائے؟ کیاکہاجائے؟ ایک غریب مقروض ملک کا ایک منصوبہ بنا کر ساڑھے پانچ ارب روپے غائب کردیئے جاتے ہیں اور منصوبہ کسی کارروائی کے بغیر بند کردیاجاتا ہے! پھر یہ کہ اجلاس میں بتایاجاتا ہے کہ اتنے بڑے فراڈ کے سلسلے میں کوئی ایف آئی آر وغیرہ بھی درج نہیں ہوئی۔ پتہ نہیں ان خونخوار مگر مچھوں پر کب کوئی عذاب اترے گا!

٭اقبال راہی لاہور کے معروف شاعر اورادیب ہیں۔ روزنامہ اوصاف میں ان کا روزانہ قطعہ چھپتاہے۔ ان کے ساتھ المیہ پیش آرہاہے کہ دو جواں سال بیٹے اور ایک بیٹی خون کے تھیلیسیمیا مرض کے شکار ہوکر انتقال کر گئے۔ ان کا پیغام آیا ہے کہ بڑا بیٹا بھی اس مرض میں مبتلا ہوگیاہے۔ اس کی حالت روزبروز بگڑتی جارہی ہے۔ راہی صاحب نے قارئین سے اپیل کی ہے کہ بچے کی صحت یابی کے لیے دعا کی جائے۔ راہی صاحب کو علاج کے لیے مالی اعانت کی بھی ضرورت ہے۔ان کا رابطہ نمبر(0322-4534350)ہے۔ خدا تعالیٰ ان کے بیٹے کو صحت عطا فرمائے۔ ٭ضلع رحیم یارخاں میں محکمہ تعلیم کی250اسامیاں خالی پڑی ہیں۔ ان کے امیدواروں کو تاحال آرڈر جاری نہیں ہوئے۔ سکیل نمبر9کے امیدوار محمد حامد وقاص اور عائشہ بشیر نے سیکرٹری تعلیم اور ڈپٹی کمشنررحیم خاں سے اپیل کی ہے کہ ان اسامیوں کو فوری طورپر پر کرنے کے احکام جاری کیے جائیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کالمز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved