علامہ اقبا ل ماں کے قدموں میں!
  9  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     کالمز   |  مزید کالمز

٭بہت سی باتیں، مختصر مختصر! آج شاعر اسلام، مفکر پاکستان علامہ اقبال کا یوم ولادت ہے۔ مضمون الگ چھپ رہاہے۔ یہاں ان کی ایک بہت چھوٹی سی بات! ایک جگہ لکھتے ہیں کہ ''لوگ مجھے علامہ ، ڈاکٹر، حکیم الامت اور جانے کیا کیاکہتے ہیں ۔ میں سیالکوٹ میں اپنی والدہ کے پاس گیا۔ گھر کے اندر داخل ہوا تو سامنے دیوار کے ساتھ ایک پِیڑھی پر بیٹھی بزرگ والدہ مجھے دیکھ کر پکار اٹھیں ''لو! میرا بالی آگیا!''۔ میں ما ں جی کے قدموں میں جھُک گیا مجھے یوں لگا جیسے میں عظمت کے ایک بہت بڑے پہاڑ کے قدموں میں ایک ذرہّ کی حیثیت رکھتا ہوں…!'' ٭جو کام حکومتیں نہ کرسکیں، جنرل قمر جاوید باجوہ نے کر دکھایا۔ ایران میں وہاں کے سپر قائد آئت اللہ علی خامنہ ای نے ان سے ملاقات میں کشمیر ی عوام کے حق خودارادیت کی حمائت کردی! ٭پنجا ب کے وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کہا ہے کہ چھ ارب روپے لوٹنے والے آصف زرداری اب واسکٹ پہن کر تقریریں کرتے پھرتے ہیں…''( میاں نوازشریف کے چھوٹے بیٹے حسن نواز کا لندن میں گھر چھ ارب روپے کا ہے۔ آصف زرداری کو صرف دبئی کے چار اٹھارہ اٹھارہ منزلہ پلازوں سے تقریباً12ارب روپے سالانہ کرایہ ملتا ہے)۔ ٭لاہور میں56 نجی کمپنیوں کی سرکاری عہدوں پر80ارب کی کرپشن کا معاملہ۔ لاہورمیں صاف پانی کی ٹھیکیدار کمپنی کا مینجر ملک وارث گرفتار۔125 ارب روپے کا کام200ارب میں کیا پھر بھی70فیصد نامکمل! 75 کروڑ غائب ہوگئے۔ ٭امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کی رپورٹ: سعودی عرب میں گرفتار کیے جانے والے گیارہ شہزادوں، 38 حالیہ اورسابق وزراء سمیت400 بڑے ناموں والے قیدیوں کو فائیو سٹار ہوٹل کا رلٹن کو خالی کراکے ایک بڑے ہال میں فرش پر گدوں پر لٹا دیاگیا ۔ ان سے بھاری کرپشن کے الزام میں تحقیقات شروع ہو گئیں۔32 سالہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلطان نے فوج ، داخلہ، قومی سلامتی وغیرہ کے اہم عہدے سنبھال لیے۔ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے شہزادہ محمد بن سلمان کی طرف سے گرفتاریوں کی مکمل حمائت کااعلان کردیا۔ نیو یارک ٹائمز کا تجزیہ کہ ٹرمپ کی مجبوری ہے کہ سعودی عرب نے امریکہ سے 30ارب ڈالر کا اسلحہ خریدنے کا آرڈر دیا ہے جو ایران کے خلاف استعمال ہوسکتا ہے۔ اخبار کے مطابق شہزادہ محمد بن سلمان نے اپنے اقدام کے لیے اپنے والد شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی حمائت کو ناکافی سمجھتے ہوئے امریکہ کے صدر کی مضبوط حمائت کو زیادہ اہمیت دی ہے۔ اخبار نے یہ بھی لکھا ہے کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیزنے ڈونالڈ ٹرمپ کی اس تجویز کو قبول نہیں کیا کہ سعودی عرب میں دنیا کی سب سے بڑی تیل کی ریفائنری''آرامکو'' کو امریکہ منتقل کردیا جائے۔ یہ کمپنی1950ء کے عشرہ سے سعودی عرب میں کام کررہی ہے۔ اب اسے ایران اور یمن کے حوثی باغیوں کے میزائلوں کا خطر ہ رہتا ہے۔ اس کمپنی کو ابتدا ہی سے امریکی ماہرین چلا رہے ہیں مگر اب سعودی حکومت نے اس کے چیئرمین کا عہدہ خود سنبھال لیا ہے۔ ٭احتساب عدالت نے شریف خاندان کے نواز شریف ،حسین نواز، حسن نواز اور مریم نواز کے بار ے میں الگ الگ کی بجائے صرف ایک ہی ریفرنس دائر کیا جائے۔ عدالت نے یہ درخواست مستر د کردی اور نئے سرے سے تین ریفرنسوں کی فرد جرم عائد کردی۔ عدالت میں نواز شریف الائچی اورپرویز رشید اور مشاہد اللہ چیونگم کھاتے کھاتے سو گئے۔ مریم نواز تسبیح پڑھتی رہیں…! 15 نومبر کو پھر حاضری ہوگی۔ ٭احتساب عدالت میں نواز شریف پہلی بار45، پھر40،پھر30 اور اب 21گاڑیوں کے ساتھ آئے۔ قیاس کیاجارہاہے کہ اگلی بار گاڑیوں کی تعداد مزید کم ہوسکتی ہے ۔ دریں اثناء احتساب عدالت کی طرف سے ریفرنس اکٹھے کرنے کی درخواست مسترد ہونے پر مریم نوازشریف شدید غصے میں آگئیں۔ ایک اخبار نے لکھا کہ '' مریم بپھر گئیں''، دوسرے نے لکھا ''پھٹ پڑیں''۔ ایک نے لکھا ''غصے سے بے قابو ہوگئیں''۔ مریم نواز نے صاف کہا کہ '' اس عدلیہ نے نوازشریف کو گاڈ فادر اور سسلین مافیا کہہ کر ہمیں گالی دی۔…سپریم کوٹر کے جج متعصب ہیں، انصاف اورقانون کا خون کیا جارہاہے''۔ ٭عمران خاں نے پھرآصف زرداری کو چیلنج کیا ہے کہ '' زرداری میں آرہاہوں''۔ دسمبر کے شروع میں سندھ میں تمہاری طرف تین روزہ مارچ ہوگا۔ ٭میاں نواز شریف نے سخت غصے میں کہا ہے کہ 12نومبرکوایبٹ آباد میں سب کچھ بتاؤنگا ۔ سیاسی پنڈتوں کے مطابق تحریک انصاف کے روزانہ مسلسل 9جلسوں کے بعد اب مسلم لیگ ن کے نہائت گرم جلسے شروع ہو رہے ہیں۔ ان میں شدید تلخ نوائی سے ملک بھر میں سخت اشتعال انگیز مقابلے شروع ہوسکتے ہیں۔ جو ملک کے امن وامان کے لیے مسئلہ بن سکتے ہیں۔ صورت حال زیادہ خراب ہوئی تو کچھ بھی ہوسکتا ہے۔یہ سطریں لکھی جارہی تھیں کہ ٹیلی ویژن پر تحریک انصاف کا اعلان آگیا کہ 11نومبر کو تونسہ، 19 نومبر کولیہ ،24 نومبر کو حافظ آباد اور26 نومبر کو مانسہرہ میں تحریک انصاف کے جلسے ہوں گے۔ اس کے بعد سندھ میں مسلسل ریلیاں اورجلسے شروع ہو ں گے۔ ایک ماہر جلسیات کے مطابق ماضی میں دریوں پر جلسے ہوتے تھے۔ اب ہزاروں مہنگی کرسیاں لگتی ہیں۔ دوسرے انتظامات اس کے علاوہ ہیں۔ ایک چھوٹے جلسہ کے اخراجات بھی ایک کروڑ تک پہنچ جاتے ہیں۔ بڑے جلسے میں چار سے پانچ کروڑ لگتے ہیں! ان پارٹیوں کے پاس کہیں سے یہ بے پناہ دولت آگئی ہوگی! ٭الیکشن کمیشن نے اپنے پاس درج352 سیاسی پارٹیوں کو31دسمبر تک دو لاکھ روپے رجسٹریشن فیس جمع کرانے کی ہدائت کی ہے۔ تمام پارٹیوں کی فیس ایک ارب80 کروڑ روپے بنتی ہے۔

٭بہترین حکمرانی، شاندار انتظامات !! بے پناہ عوام دوستی!! لاہور میں انڈے ایک رات میں 110 روپے سے 130روپے درجن، ڈبل روٹی ایک رات میں65 روپے سے80 روپے ،کھلا دودھ 70سے80روپے، دہی 90روپے سے 100روپے، کلودودھ کا ایک لٹر کا پیکٹ120 سے140 روپے ،پیاز بدستور 100 روپے کلو !اسلام آباد میں پتہ نہیں کیا حال ہوگا؟ بجلی مزید سوا روپے یونٹ اضافہ ! بیشتر وقت ملک سے باہر آرام کرنے والے حکمران غربت کی بجائے غریب کوختم کرنے کی ''صحیح '' پالیسی پر جارہے ہیں۔ ٭شدید دھند اورسموگ نے امرتسر سے دہلی تک سارا علاقہ لپیٹ میں لے لیا ہے۔ دہلی میں سینکڑوں افراد بیمار ہوگئے اور ٹریفک بند ہوگئی ہے۔ ٭پاکستان کی ایف آئی اے نے دبئی میں سرمایہ کاری اور اقامے رکھنے والوں کے بارے میں اعلیٰ سطح پر تحقیقات شروع کردی ہیں۔ ان میں آصف زرداری، اسحاق ڈار، اسفندیارولی، پرویز مشرف، عشرت العباد کے نام شامل ہیں۔خواجہ آصف، احسن اقبال کے پاس بھی اقامے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کالمز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved