دھرنا! اور ناکام وزیر داخلہ
  15  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     کالمز   |  مزید کالمز

یہ جوگزشتہ 7 دنوں سے راولپنڈی اسلام آباد کے لاکھوں رہائشی... دھرنا پارٹی کے یرغمالی بنے ہوئے ہیں... اس کی ذمہ داری وزیر داخلہ اور مقامی انتظامیہ کی ناکام حکمت عملی کے ساتھ ساتھ ... اس پارلیمنٹ پر بھی عائد ہوتی ہے... کہ جس پارلیمنٹ نے کھلی آنکھوں کے ساتھ ختم نبوتۖ کے حلف نامے کو ... اقرار نامے میں تبدیل کیا تھا... شاید اتنے مظلوم تھرپارکر اور موہنجو دڑو کے عوام نہ ہوں... جتنے مجبور ' بے بس اور بے کس راولپنڈی اسلام آباد کے عوام ہیں... قصور ہوتا ہے حکمرانوں اور پارلیمنٹ کا ... مگر ''خراج،، دینا پڑتا ہے راولپنڈی' اسلام آباد کے عوام کو ... ''وزیر داخلہ احسن اقبال یہ تو کہتے ہیں کہ ڈیڑھ سو لوگوں کے مطالبے پر وزیر قانون زاہد حامد کو برطرف نہیں کیا جاسکتا۔،، لیکن وہ قوم کو یہ بتانے کے لئے تیار نہیں ہیں کہ اگر دھرنے کے شرکاء کی تعداد اتنی ہی کم ہے... تو پھر ان سمیت پوری حکومت... نے دھرنا پارٹی کے قائدین کے سامنے گٹھنے کیوں ٹیک رکھے ہیں؟ یہ حکومتی وزیر' مشیر خود تو بھاری بھر کم پروٹوکول میں رہتے ہیں... لیکن ان کی ناقص اور انتہائی غلط حکمت عملی کی وجہ سے راولپنڈی' اسلام آباد کے لاکھوں شہری... گزشتہ 7دنوں سے جس کربناک صورتحال سے دوچار ہیں اس کی تفصیلات نہایت طویل بھی ہیں... اور درد ناک بھی... مجھے دھرنے والوں سے زیادہ حکمرانوں کی نااہلی پر افسوس ہوتا ہے... نواز شریف کے حکم پر ختم نبوتۖ کے حلف نامے کو اقرار نامے میں تبدیل کرنے والے مکروہ چہروں کا سراغ لگانے کے لئے ... جناب راجہ ظفرالحق کی سربراہی میں ایک کمیٹی بنائی گئی... جس کمیٹی نے انکوائری مکمل کرکے رپورٹ نواز شریف کو دے دی... لیکن اس کے بعد حکومت نے اس رپورٹ کو چھپا لیا... حالانکہ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ جنہوں نے ختم نبوتۖ کے حلف نامہ پر ڈاکہ ڈالا تھا... حکومت خود انہیں اپنی صفوں سے نکال کر انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کرتی۔ لیکن حکومت نے ایسا نہ کرکے ... یہ بات ثابت کردی کی پارلیمنٹ کے ذریعے ختم نبوتۖ کے حلف نامے میں تبدیلی کی کوشش کی... مگر جب چوری پکڑی گئی تو پرانے حلف نامے کو بحال کرکے مغربی دنیا کو یہ پیغام دیا کہ ہم نے تو تمہارے ایجنڈے کے مطابق قادیانیوں کو ریلیف دینے کی کوشش کی تھی... مگر شدت پسند مولوی رکاوٹ بن رہے ہیں۔ حکومت جان بوجھ کر فیض آباد انٹر چینج پر انعقاد پذیر دھرنے کو بڑھاوا دے رہی ہے... تاکہ امریکہ اور دیگر مغربی دنیا کو پیغام جائے کہ مذہبی شدت پسندوں سے حکومت کو خطرہ ہے... حالانکہ تحفظ ختم نبوتۖ کی بات کرنا... شدت پسندی نہیں' بلکہ اسلام اور آئین کے عین مطابق ہے... افسوس تو ''مذہبی،، کہلوانے والی ان شخصیات اور جماعتوں پر ہے... کہ جو ختم نبوتۖ کے اہم ترین مسئلے پر بھی متحد ہونے کے لئے تیار نہیں ہیں... ہر ایک نے اپنی اپنی ڈیڑھ انچ کی مسجد بنائی ہوئی ہے... کوئی ہزار بندے لے کر ... دھرنے کے لئے نکل پڑتا ہے... تو کوئی پانچ ہزار بندے لے کر اس سے حکومت کے کانوں پر تو جوں بھی نہیں رینگی۔ البتہ راولپنڈی' اسلام آباد کے پچاس' ساٹھ لاکھ سے زائد انسان ''یرغمال'' بن کر رہ جاتے ہیں... تحریک لبیک یا رسول اللہ' کے قائد علامہ خادم حسین رضوی کو ''کوسنے،، کا کوئی فائدہ اس لئے نہیں ہے ... کیونکہ انہیں لاہور سے اسلام آباد تک ... دھرنے پر مجبور حکومتی کرتوتوں کی وجہ سے ہونا پڑا۔ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے گزشتہ ساڑھے 4 سالوں سے ... اسلام آباد کو جس طرح سے قادیانیت نوازی کا مرکز بنا دیا تھا... اس کا راستہ روکنے کے لئے سردھڑ کی بازی لگانے والے ''دیوانوں،، کی ہی ضرورت تھی... آج میرے سمیت راولپنڈی یا اسلام آباد کے ہر رہائشی کو فیض آباد پر دھرنے کی وجہ سے ... بلاشبہ بے پناہ تکالیف اور مشکلات کا سامنا ہے۔ مگر جب (ن) لیگی حکمرانوں کے حکم پر قائداعظم یونیورسٹی کے شعبہ فزکس کو گستاخ قادیانی عبدالسلام کے نام سے ... منسوب کیا جارہا تھا... جب ڈالر خور این جی اوز مارکہ وزیر اور بعض ناعاقبت اندیش سیاست دان... ''چھپر'' سے قادیانیوں کو مسلمان ڈکلیئر کرنے کی سازشیں کر رہے تھے... کاش کہ راولپنڈی اسلام آباد کی مذہبی جماعتیں... علماء اور عام مسلمان اس وقت صرف ایک دن ہی لاکھوں کی تعداد میں سڑکوں پر پرامن احتجاج کے لئے نکل آئے تو ممکن ہے کہ 7دنوں کی مسلسل خواری سے بچ جاتے' دھرنے کے شرکاء نے... ایک ایمبولینس کو روکا... جس کی وجہ سے ایک معصوم بچہ انتقال کر گیا... یہ خبر میرے لئے سوھان روح بن گئی... سنا ہے کہ اس مریض بچے کی ایف آئی آر دھرنا قائدین کے خلاف درج کرلی گئی... ''مجھے کیوں نکالا'' کے مشہور زمانہ جملے کے خالق ... نواز شریف کی جب ریلی لاہور کی طرف رواں دواں تھی... تو ریلی میں شریک ایک گاڑی کے ٹائروں تلے ... بچہ کچلا گیا تھا... اس بچے کے قتل کا پرچہ نواز شریف پر کیوں نہ کاٹا گیا؟ بلاول زرداری پروٹوکول کے ساتھ کراچی کے سول ہسپتال آرہے تھے لیاری کا ایک باپ... اپنے بیمار بچے کو ہسپتال لے جانا چاہ رہا تھا... مگر بلاول کی آمد کی وجہ سے اسے روکنے کی کوششیں کی گئیں... وہ باپ اپنے معصوم لخت جگر کو ہاتھوں پہ اٹھائے دیوانہ وار بھاگتے ہوئے ... ہسپتال تو پہنچ گیا مگر اس کا معصوم بچہ جان کی بازی ہار گیا' اس واقعہ کو تمام ٹی وی چینلز نے لائیو نشر کیا... سوال یہ ہے کہ اس بچے کی قتل کی ایف آئی آر بلاول پر درج کیوں نہ کی گئی؟ تحریک لبیک کے قائدین پر معصوم بچے کے قتل کی ایف آئی آر اس لئے درج کی گئی... کیونکہ وہ ''مولوی'' ہیں؟ یقینا راستے بند کرنا... غلط بھی ہے اور ظلم بھی... مگر یہ ظلم تو حکمران گزشتہ 70سالوں سے عوام کے ساتھ کرتی چلی آرہی ہے... سب سے پہلے بدترین غلطی پارلیمٹ نے کی ختم نبوتۖ کے حلف نامے میں تبدیلی کرکے ...جس غلطی کو... مولانا فضل الرحمن نے پارلیمنٹ کا اجتماعی گناہ قرار دیا۔

مکروہ دوسری سنگین غلطی... بلکہ جرم حکومت نے کیا کہ جن کرداروں نے ختم نبوتۖ کے حلف نامے کو تبدیل کرنے کی کوشش کی تھی... انہیں نہ سزا دی اور نہ ہی ان سے وزارتیں لیں... بلکہ حکومت ضد اور ہٹ دھرمی کی انتہا پر پہنچ کر وزیر قانون زاہد حامد کو نہ تو برطرف اور نہ ہی اس سے استعفیٰ لینے کے لئے تیار ہے ' پارلیمٹ اور حکمرانوں کی ... اس قدر سنگین غلطیوں کے ردعمل میں تحریک لیبک کے کارکنوں سے بھی یقینا غلطیاں سرزد ہو رہی ہیں... اور ان غلطیوں کا خمیازہ ہم عوام کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔ جو زبانیں... تحریک لبیک کے دھرنے والوں کے خلاف شعلے اگل رہی ہیں... وہ زبانیں حکومت کی قادیانیت نوازی پر خاموش کیوں ہو جاتی ہیں؟ مجھے حیرت ہوتی ہے ... بریلوی علماء اور قائدین پر کہ جنہوں نے ... تحریک لبیک یا رسول اللہ کو تنہا چھوڑ دیا ... بالکل اسی طرح جس طرح 2007ء میں دیوبندی علماء نے لال مسجد کے مولانا عبدالعزیز کو تنہا چھوڑ دیا تھا۔ اللہ ہمارے حال پر رحم فرمائے۔ آمین


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
100%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کالمز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved