فوری ضرورت
  15  اپریل‬‮  2018     |     کالمز   |  مزید کالمز

جیسا کہ آپ کو بخوبی معلوم ہے عام انتخابات رواں برس کے درمیان متوقع ہیں جس کے لیے تمام جماعتیں تیاریوں میں مصروف ہیں ملک کے طول و عرض میں جلسے ہو رہے ہیں ریلیاں اورجلوس نکل رہے ہیں مخالفین کوللکارا جا رہا ہے الزام تراشی سے حریفوں کوبدنام کرنے کی مُہم زوروں پر ہے ہر جماعت کو بُرابھلا کہنے میں ہماری جماعت کا پہلا نمبر ہے مثال کے طورپر اوئے نواز شریف کا نعرہ ہمارا ہی ایجاد کردہ ہے دھرنوں کی طویل تاریخ ہم نے ہی رقم کی ۔ نیا پاکستان کا نعرہ بھی ہم نے لگایا ہے یہ مت سمجھنا کہ ہم صرف باتوں پر یقین رکھتے ہیں ایک ارب پودے لگانے کاکاغذی ٹارگٹ ہماری جماعت کی صوبائی حکومت نے حاصل کر چُکی ہے۔ہم کسی سے نہیں ڈرتے بس طالبان سے ڈر محسوس ہواتھاسراسمیگی میں ہم نے اُنھیں دفتر کھولنے کی پیشکش کی مگر بھلا ہو عسکری قیادت کا جس نے شرپسندوں کا خاتمہ کر دیا لیکن دہشت گردی کے خاتمے کا جس طرح کریڈٹ نواز شریف لینے کی کوشش کر رہے ہیں اُسی طرح ہم بھی صوبے میں امن قائم کرنے کے دعویدار ہیں جب کو ئی صحافی حقائق بتانے کی کوشش کرتا ہے تو ہم اُس کی بات ہی نہیں سُنتے اِس لیے مجبوراََسب کو ہماری سُننا پڑتی ہے با ت کرنا اور بات سے پِھر جانا ہمارا وہ کارنامہ ہے جسے نواز شریف اور زرداری سب تسلیم کرتے ہیں اور اکثر ہمیں یوٹرن کا لقب دیتے ہیں کہنے کا مقصد یہ ہے کہ سیاست میں جدت ہماری لائی ہے زرداری سے ہماری مخاصمت ہے لیکن اُس کے امیدوار سے نہیں اسی لیے آپ سے التماس ہے سلیم مانڈوی والا کی حمایت کو آصف زرداری کی حمایت سے تعبیر نہ کریں اگر کوئی ایسی حرکت کا مرتکب ہواتو ہم اُسے بھی مودی کا یاراورلُٹیرا کہنے میں دیر نہیں لگائیں گے ۔ مسلم لیگ ن ہو یا پیپلز پارٹی ہمارے نزدیک سب کر پٹ ہیں لیکن دونوں جماعتوں کے جو رہنما ہماری جماعت میں شامل ہو جائیں اُنھیں ہم سات خون بھی معاف کردیتے ہیں اسی لیے کوئی کرپٹ ہے یا بدکردار ہم اپنی جماعت میں شامل کرتے نہیں ہچکچاتے کیونکہ جب تک کوئی بندہ مزکورہ بالا جماعتوں میں رہے تب تک ہی وہ کرپٹ ہے بدکردار ہے اور مودی کا یا ر بھی۔جونہی ہماری جماعت میں آگیا سمجھ لیں وہ پاک صاف ہو گیا۔ ایسے ہی جو لوگ دوسری جماعتیں چھوڑ کر ہمارے ساتھ مل رہے ہیں یا داغ دار ماضی کی وجہ سے ایسے لوگوں کواُن کی جماعتیں نکال ر ہی ہیں ہم اُنھیں بخوشی اپنے ساتھ ملا رہے ہیں کیونکہ ہمارے ساتھ آملنے والے کی تمام بدنامیاں ختم ہو جاتی ہیں نذرگوندل اورفردوس عاشق اعوان کی مثالیں آپ کے سامنے ہیں ایسے لوگوں کو شامل ہونے پر ہم انھیں دیانتداری پر لیکچر دینے کی زمہ داری سونپ دیتے ہیں لہذا آپ سے التماس ہے کہ کوئی بھی بدنامِ زمانہ شخص آپ کی نظر میں ہے تو اُسے ہماری جماعت میں شامل کرائیں تاکہ بدنامیوں کو نیک نامیوں کا پیراہن پہنانے کا کا م جلد ممکن ہو ۔ کہیں باتوں باتوں میں بھول نہ جاؤں مجھے آپ سے کہنا تھا کہ کچھ بدنام چہروں کی ضرورت ہے کیونکہ ہم نے انتخاب جیتنا ہے جس کے لیے نیک نام یا پارسا ہونا ہی کافی نہیں بلکہ کچھ سرمایہ دار ہونابھی لازم ہے تاکہ انتخابی اخراجات کا متحمل ہو سکے اسی لیے ہم چاہتے ہیں ملک کے بدقماش اور بدنام چہرے ہماری جماعت میں آجائیں ظاہر ہے جو بدقماش یا بدنام ہوں گے انھوں نے مال پانی بھی وافر جمع کر رکھا ہو گا اگر وہ انتخاب میں حصہ نہ بھی لیں تو ہمارے امیدواروں پر سرمایہ لگا کر نیک نامی کا سرٹیفکیٹ حاصل کر سکتے ہیں چاہے کوئی گیس چوروں کا سرغنہ ہو اور گیس چوری کراکر فیکٹریوں سے ماہانہ بھتہ لیتا ہو ہمیں اعتراض نہیں ہماری جماعت کے سب کے لیے دروازے چوپٹ کُھلے ہیں رشتہ داروں کے کاروبار میں پیسہ نہ لگا کر منافع بٹورنے اور بعد میں حصہ دار ہونے کا دعویٰ کرکے کروڑں وصول کرنے والے بھی ہمارے ساتھ شامل ہو سکتے ہیں رشتہ داروں کامال کھانے کے لیے جیل جانے سے نہ گھبرانے والے فوری ملاقات کے لیے آئیں سروس فیکٹری میں پی پی کو حلف دیکر ٹکٹ لے کر کونسلر منتخب ہونے اور پھر منحرف ہو کرچوہدری بردران کی حمایت کرنے والوں کی بھی اشد ضرورت ہے شرط یہ ہے کہ جناح کیپ استعمال کر تے ہوں اور چندہ دیتے ہوئے حساب کتاب کے چکروں میں نہ پڑیں۔ ہماری جماعت نے گیس چوروں،رشتہ داروں کا مال کھانے والوں اور حلف دیکر مُکر جانے والوں کے لیے خاص اورمنفرد پروگرام شروع کیا ہے ایسے لوگوں کو شامل ہونے کے لیے جماعت کی تمام قیادت ہمہ وقت دستیاب ہے وقت لینے کے چکروں میں نہ پڑیں سیدھے گھر آئیں بقول نصیبو لال کُنڈی نہ کھڑکا سِدھا اندرآ۔ بیعت کریں آپ چندہ دیں پھر آپ کی تمام بدنامیاں ختم کرانے کے لیے پوری جماعت محنت و لگن سے کام کرے گی اور قوم سے آپ کو نیک نام منوا کر دم لے گی جلسوں میں ناچ گانے کی اضافی تربیت پارٹی کے زمہ ہوگی یادرہے ہماری ضرورت محدود نہیں لا محدود ہے اِس لیے یہ مت سمجھیں کہ ایسے لوگوں کے لیے ہمارے پاس چند ہی آسامیاں ہیں جہاں بھی جتنے لوگ بھی تحریر پڑھیں جب بھی موقع ملے آجائیں سب کو خوش آمدید کہا جائے گا اور صبح کا بھولا شام کوگھر آنے کے مصداق لوٹ مار کے متعلق کوئی باز پُرس نہ ہونے کی یقین دہانی کرائی جاتی ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved