پاکستان کے میر جعفر اور صادق
  16  مئی‬‮  2018     |     کالمز   |  مزید کالمز

قیام پاکستان سے بہت پہلے مسلمانوں کے اقتدار کو ختم کرانے میں فرنگیوں سے زیادہ مسلمانوں کے درمیان موجود غداروں نے اہم کردار ادا کیا تھا، تاریخ اسبات کی گواہ ہے کہ بنگال کے میر جعفر اور دکن کے صادق کا مسلمانوں کے خلاف کیا کردار رہاہے، اب پاکستان میں نواز شریف کی صورت میں ماضی کی تاریخ کے غداری پر مبنی کردار ہمارے سامنے آگئے ہیں، با الفاظ دیگر تاریخ اپنے آپکو دوہرارہی ہے، نااہل اور کرپٹ سابق وزیراعظم نے اپنے بیانات میں واضح طورپر پاکستان کے ممبئی کے واقعات میں ملوث ہونے کا بیان دیا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان کا ممبئی کے واقعات میں ہاتھ تھا جس میں 150افراد مارے گئے تھے، ان کے اس بیان کو بھارت کی میڈیا نے خوب اچھالا اور کہا ہے کہ نواز شریف نے ہمارے موقف کی تائید کی ہے کہ پاکستان ممبئی واقعات میں ملوث تھا، یقینا یہ نا اہل سابق وزیراعظم کے اس بیان سے پاکستان کی پوزیشن کو خاصہ نقصان پہنچا ہے، بلکہ پیچیدہ ہوگئی ہے، جسکی تلافی ہونی چاہئے۔ نواز شریف کا پاکستان کے خلاف بیان پاکستان کے آئین کے آرٹیکل 6کے زمرے میں آتاہے، ان پر کھلی عدالت میں مقدمہ چلناچاہئے اور قرار واقف سزا ملنی چاہئے، نواز شریف کے علاوہ اگر کسی چھوٹے صوبے کا کوئی سیاست دان یا سماجی کارکن اس قسم کا بیان دیتا تو ایوان اقتدار میں ہلچل مچ جاتی اور اس شخص کو فوراً گرفتار کرکے عدالت کے سامنے پیش کیا جاتا، لیکن نواز شریف کے سلسلے میں ایسا نہیں ہورہاہے، حالانکہ وہ اور اسکی بیٹی ہر روز عدلیہ اور فوج کے خلاف تقریریں کرکے پاکستانی معاشرے میں جس میں اکثریت ان پڑھ اور جاہل لوگوں پر مشتمل ہے' انہیں معززاداروں کے خلاف ورغلا ء کر پاکستان کے استحکام کو نقصان پہنچانے کی مذموم حرکتیں کررہے ہیں، اگر اسوقت اس شخص کو قانونی اور آئین کی روشنی میں لگام نہیں دی گئی تو پاکستان کو آئندہ نا قابل تلافی نقصان پہنچ سکتا ہے، دراصل بعض با خبر پاکستانیوں کا یہ خیال درست معلوم ہوتا ہے کہ نواز شریف انٹرنیشنل اسٹیبلیشمنٹ کا حصہ بن گئے ہیں، ان ہی کی ایما، اشارے اور ہدایت پر وہ پاکستان کو نا قابل تلافی نقصان پہنچانے پر تلے ہوئے ہیں۔ پاکستان مخالف بیانات دے کر جہاں وہ پاکستان کو عالمی سطح پر دہشت گردی کے حوالے سے بد نام کرنے کی کوشش کررہے ہیں، تو وہیں ان کی دلی خواہش ہے کہ بھارت پاکستان پر حملہ کردے، ان کا ایک اور موقف یہ بھی ہے کہ ان کی ناجائز دولت کے سلسلے میں ہونے والی تحقیقات کو روک دیا جائے، اور ان سے ''مذاکرات'' کئے جائیں ، لیکن ان کی وطن دشمنی اور قابل مذمت حرکتوں کے پیش نظر اب ایسا ممکن نظر نہیں آتا ہے اور نہ ہی عدلیہ کو اس مسئلہ پر کسی قسم کی سوچ بچار کرنی چاہئے، یہ نا اہل کرپٹ شخص کھل کر پاکستان کے خلاف کام کررہاہے۔ دراصل پاناما پیپرز کے سلسلے میں جو تحقیقات ہوئی تھیں وہ بالکل صحیح تھیں، لیکن انہیں سخت سزا نہیں دی گئی جسکو بعد میں انہوں نے عوام میں جاکر اپنے آپکو بے گناہ ثابت کرنے کی کوشش کی، یہاں تک کہ وہ عدلیہ کے فیصلے کو غلط قرار دینے میں کسی حدتک کامیاب ہوگئے تھے' لیکن جب اس نے ممبئی کے واقعات کے پس منظر میں کھلم کھلا پاکستان کے ملوث ہونے کا عندیہ دیا ہے تو صیاد خود اپنے دام میں پھنس گیاہے، عدلیہ اور عسکری اداروں نے نواز شریف کے اس بیان کو حقیقی معنوں میں غداری سے تعبیر کیاہے' یہ بات طے شدہ ہے کہ عدلیہ اور عسکری ادارے اب اس شخص سے متعلق کسی قسم کا حتمی فیصلہ ضرور کریں گے، ایک شخص نے جسکو جنرل جیلانی اور ضیاالحق نے سیاست میں متعارف کرایا تھا وہ اب اتنا دلیر ہوگیاہے کہ ان ہی اداروں کو متنازعہ بنارہاہے، جس کی آشیرباد سے یہ نامراد شخص بام عروج تک پہنچاہے۔

دراصل میاں نواز شریف اور ان کے پورے خاندان کا کوئی مناسب یا قابل ذکر سماجی پس منظر نہیں ہے، یہ ایک معمولی گھرانا تھا ، ان کے والد محمد شریف نے انتہائی چھوٹی سی لوہے کی بھٹی سے سے اتفاق فائونڈری بنانے میں کامیابی حاصل کی، پھر مرحوم نے بعض فوجی جرنیلوں کی کاسہ لیسی کرکے اپنے بیٹے نوازشریف کو سیاست میں متعارف کرایا، بعد میں جو کچھ ہوا یا پھر ہورہا ہے اب پاکستان کی تاریخ کا حصہ بن چکاہے، پاکستان کے عوام کی اکثریت نے نواز شریف کے بیان کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی ہے، اور مطالبہ کیا ہے کہ اس میر جعفر کو قرار واقعی سز ملنی چاہئے ورنہ یہ شخص اپنی ناجائز دولت اور ثروت کو بچانے کے لئے کیا کچھ نہیں کرسکتاہے، یہ بھارت کے وزیراعظم نریندرمودی کا غلام بن چکاہے، اور اس ہی کے اکسانے پر پاکستان کے خلاف بیانات داغ رہاہے، رہنما نا اہل کو یہ امید خام ہے کہ اگر انہیں کچھ ہوا تو بھارت اور امریکہ مدد کو آجائیں گے، کسی طرح آئیں گے؟ یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا، لیکن پاکستان کے عوام پاکستان کی عدلیہ اور عسکری اداروں کے ساتھ کھڑے ہوئے ہیں، اگر پاکستان کے خلاف دشمن ممالک نے کچھ نامناسب اقدامات اٹھائے تو اس کا پاکستانی قوم اجتماعی طورپر بھر پور جواب دے گی، اور دشمن کے دانت کھٹے کردیگی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
50%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
50%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کالمز

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved