قرب الٰہی کی منازل تلاوت قرآن سے حاصل ہوسکتی ہیں،علمائ
  9  اکتوبر‬‮  2017     |     یورپ

ہازلنگٹن (پ ر )تعلیمات اسلامی میں اللہ تعالی کا ولی اور خاص بندہ بننے کے لیئے کسی مخصوص ٹوپی پگڑی یا جبہ ودستار پہننے کی ضرورت نہیں .قرب الٰہی کی منازل تلاوت قرآن سے حاصل ھو سکتی ھیں. والدین اپنی اولاد کے سامنے ہمیشہ سچ بولیں اور کوئی ایسا وعدہ اپنے بچوں کے ساتھ نہ کریں جو پورا نہ ھو سکے. موبائل کے بے جا استعمال نے گھروں کے ماحول کو بھی ایسا خراب کردیا ھے کہ بیٹھے ایک کمرے میں ھوتے ھیں لیکن ایک دوسرے سے ناراض لگتے ھیں.رابطے سے تعلق اور تعلق سے رشتے مضبوط ھوتے ھیں. ایک وقت تھا کہ لوگوں کے ھاتھوں میں بٹیرے ھوتے تھے پر وہ ایک دوسرے سے باتیں بھی کرتے تھے لیکن موبائل کی تباہ کاریاں جہاں اور ھیں ان میں نمایاں فیملی کی آپس کی بات چیت پر برے اثرات ڈالنا بھی ھے.یہ لمحہ فکریہ ھے. ھر چیز کے لیئے وقت مقرر ھو تو اعتدال رھتا ھے جب بے جا استعمال ھو تو بے راہ روی پھیلتی ھے.جیسا کہ موبائل کی وجہ سے گھروں میں خاموش خاموش رھنے کا پھیلا ھوا المیہ ھے.والدین. اساتذہ پہلے خود موبائل کے استعال پر کنٹرول کریں پھر اپنے بچوں اور شاگردوں کو اس کے بوقت ضرورت استعمال کی تلقین کریں. مساجد و محافل اور گھر کے اجتماعی ماحول میں موبائل بند یا کم از کم سائلنٹ پر ضروری ھونے چاہئیں.ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز لنکاشائر کے شہر ھا زلنگٹن میں مفتی محمد ادریس کے صاحبزادے محمد عقبہ کے ناظرہ قرآن پاک کی تکمیل کے موقع پر ایک پر وقار تقریب سعید سے مقررین نے اردو .پشتو. اور انگریزی میں خطاب کرتے ھوئے کیا. پروگرام کی صدارت محترم حاجی محمد مصطفی نے کی .میزبانی کے فرائض محمد عقبہ کے نانا حاجی محمد شعیب نے ادا کیئے. مہمان خصوصی سواداعظم اہل سنت والجماعت کے ناظم اعلی اور جمعیت العلما برطانیہ کے مرکزی رہنما مولانا قاری عبدالرشید آف اولڈھم تھے . مفتی محمد زکریا نے انگریزی میں مفت محمد ادریس نے پختو اور قاری عبدالرشید نے اردو میں خطاب کیا. اس موقع پر خواتیں بھی کثیر تعداد میں شریک تھیں جن کے سننے کے لیئے علیحدہ باپردہ جگہ کا انتظام کیا گیا تھا.اس موقع پر جن دوسرے علما کرام حفاظ و قرا کرام اور معززین نے خصوصی شرکت کی ان میں مولانا محمد حامد خان. مولانا محمد ظہیر. قاری محمد اسماعیل. قاری محمد طیب. حافظ محمد سلیم.حافظ آدم حسین. حافظ ذوالکفل. حافظ محمد یوشع.اور دیگر شامل ھیں.تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ھوئے مولانا قاری عبدالرشید نے کہا کہ حضرت انس رضی اللہ عنہ روایت کرتے ھیں کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا قرآن کریم سے تعلق رکھنے والے لوگ اللہ والے اور اس کے خاص بندے ھوتے ھیں.حضرت ابو ذر رضی اللہ عنہ کو حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے وصیت فرمائی کہ تو اپنے اوپر تلاوت قرآن کو لازم کر لے یہ زمین پر تیرے لیئے نور اور آسمان پر تیرے لیئے ذخیرہ ھو گا.ان ارشادات کی روشنی میں مسلمانوں کے ھر فرد پر قرآن کریم سے مضبوط تعلق اس کے احکامات پر عمل اور روزانہ قرآن کی تلاوت کرنا ضروری ھے.مفتی محمد زکریا نے انگریزی میں خطاب کرتے ھوئے کہا کہ قرآن کریم ایسی مقدس کتاب ھے جس کو دیکھنا .چھونا .پڑھنا. پڑھانا اور تعلیم قرآن میں تعاون کرنا ثواب ھی ثواب ھے.آج ھمارے ھاتھوں میں موبائل آگئے ھیں بڑا ھی افسوس کا مقام ھے کہ اب مساجد میں بھی قرآن کریم ھاتھ میں لیکر تلاوت کرنے والے مسلمانوں کی تعداد بہت کم ھو چکی ھے.یہ لمحہ فکریہ ھے.ہمیں اپنا نظام الاوقات بنانا چاہیے تاکہ ایک خاص وقت میں ھم روزانہ تلاوت قرآن کرکے اپنے دلوں اور گھروں میں نور جمع کر سکیں. داعی تقریب مفتی ادریس نے پختو میں خطاب کرتے ھوئے کہا کہ بچوں کی اچھی تعلیم و تر بیت والدین کی بنیادی ذمے داری ھے انہوں نے کہا کہ میں اس مجلس میں 'ام عقبہ ' کی ایک خاص صفت کاذکر بطور ترغیب دیگر والدین کرنا انتہائی ضروری سمجھتا ھوں وہ یہ کہ آج تک مجھے نہیں یاد کہ میرے بچے کی والدہ نے اس سے کوئی جھوٹا وعدہ کیا ھو یا اس کے ساتھ جھوٹ بولا ھو .یہی وجہ ھے کہ آٹھ سال کی عمر میں اس بچے نے سارا قرآن اپنی والدہ سے پڑھنا سیکھا اور آج اس کی تکمیل آپ کے سامنے ھو رھی ھے.ان کا کہنا تھا کہ بچوں کے لیئے والدین کی زندگی اور گھر کا ماحول پہلی درسگاہ ھوتا ھے.


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved