سپین کے وزیراعظم کاکاتلونیاکوبراہ راست حکمرانی کانوٹس
  11  اکتوبر‬‮  2017     |     یورپ

بارسلونا( او صا ف نیو ز )سپین کے وزیراعظم نے کاتلونیا کو نوٹس دے دیا ہے کہ وہ اس علاقے میں براہ راست حکمرانی نافذ کر سکتے ہیں۔ ماریانو راجوئے نے کاتلان لیڈر چارلس پیجمانٹ سے اس بات کی تصدیق کرنے کو کہا ہے کہ آیا انہوں نے آزادی کا اعلان کیا ہے یا نہیں۔ یہ پیشرفت کاتلونیا کی خودمختاری معطل کرنے کے لئے آرٹیکل 155 کو فعال کرنے کی جانب پہلا قدم ہے۔ منگل کے روز چارلس پیجمانٹ نے اعلان آزادی پر دستخط کر دئیے تھے لیکن مذاکرات کا موقع دینے کے لئے اس پر عملدرآمد روک دیا گیا۔ ماریانو راجوئے نے چارلس پیجمانٹ پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ دانستہ الجھائو پیدا کر رہے ہیں اور ہم یقینی صورتحال بحال کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس کال، جو آئین کے آرٹیکل 155 کے تحت حکومت کی طرف سے کوئی اقدام کرنے سے پہلے دی گئی ہے، کا مقصد شہریوں کو اس حد تک وضاحت اور سلامتی دینا ہے جس کا تقاضا اس نوعیت کا اہم سوال کرتا ہے۔ ماریانو راجوئے کا کہنا تھا کہ کاتلونیا اس وقت جس صورتحال سے گزر رہا ہے اسے ختم کرنا انتہائی ضروری ہے تاکہ تحفظ اور امن وآشتی بحال ہو اور یہ کام جلد ازجلد ہو جانا چاہئے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved