اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر پر سہ فریقی کانفرنس کا اہتمام کرے،صابرگل
  13  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     یورپ

ہائی ویکمب(مسرت اقبال) ریاست جموں کشمیر کی قومی آزادی و خودمختاری پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔ کشمیری عوام آر پار آٹانومی کو مسترد کرتے ہیں، مسئلہ کشمیر کا پائیدار حل یہی ہے اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر پر سہ فریقی کانفرنس کا اہتمام کرے۔ بصورت دیگر اقوام متحدہ کشمیر کی 13اگست 1947ء سے قبل آزاد و خودمختار ریاست بحالی کرنے کا اعلان کرے۔ ان خیالات کا اظہار برطانیہ میں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے صدر محمد صابر گل نے دورہ وٹفورڈ کے دوران صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ محمد صابر گل نے مقبوضہ کشمیر سابق کٹھ پتلی وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ اور آزاد کشمیر کے سابق وزیراعظم سردار سکندر حیات کے بیان پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ریاست جموں کشمیر کوئی رقبہ خالصہ سرکار نہیں ہے کہ اسکو مذہبی بنیادوں پر اور نہ ہی اسے اندرونی آٹانومی کی بنیاد پر تقسیم کیا جاسکتا ہے کشمیری عوام آزادی کی خاطر ایک لاکھ سے زائد قربانیاں دے چکے ہیں۔ ان شہدائے کشمیر نے تقسیم کشمیر کیلئے نہیں بلکہ وطن کی آزادی کیلئے قربانیاں دے رہے ہیں۔ محمد صابر گل نے کہا یہ المیہ ہے فاروق عبداللہ 1974ء میں دورہ میرپور آزاد کشمیر میں کھلے عام جلسوں و جلوس مین کشمیر کی آزادی کے نعرے لگاتے تھے۔ آج تقسیم کشمیر اور ریاست کی آٹانومی کا مطالبہ کر رہے ہیں یہ ان کا دوہرا معیار ہے۔ صابر گل نے سردار سکندر حیات کے بیان پر سخت تنقید کرتے ہوئے سوال کیا آپ کے والد سردار فتح محمد نکیالوی اور دیگر رہنماؤں نے 1931ء میں مہاراجہ ہری سنگھ کی متحدہ ریاست جموں کشمیر کیخلاف کالے قوانین کے نام پر ریاست کیخلاف بغاوت کیوں کی تھی؟ جو آپ آج کشمیر کو مذہبی بنیادوںپر تقسیم کرنے پر تیار ہوگئے ہیں۔ آپ کو شہدائے کشمیر اور کرنل محمد خان فاتح پونچھ کی برسی میں شامل ہونا آپ کی شان کیخلاف ہے۔ آپ کا یہ رویہ شہدائے جموں کشمیر کی روح کیخلاف ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved