باب گلڈاف کافریڈم آف دی سٹی ایوارڈواپسی کااعلان
  13  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     یورپ

ڈبلن( ا و صا ف نیو ز )باب گلڈاف نے کہا ہے کہ وہ میانمر کی رہنما آنگ سان سوچوئی کے خلاف احتجاج کے طور پر اپنا فریڈم آف دی سٹی آف ڈبلن ایوارڈ واپس کر دیں گے۔ آنگ سان سو چوئی بھی یہ ایوارڈ حاصل کر چکی ہیں۔ باب گلڈاف کا کہنا تھا کہ ہمارے شہر کے ساتھ ان کی وابستگی ہم سب کے لئے شرم کی بات ہے۔ سو چوئی کو میانمر کے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف نسل کشی کے الزامات سے نمٹنے میں ناکامی پر شدید تنقید کا سامنا ہے۔ پچاس لاکھ سے زائد روہنگیا حالیہ تشدد کے بعد بنگلہ دیش کی طرف منتقل ہو چکے ہیں۔ موسیقار اور بینڈ ایڈ کے بانی باب گلڈاف نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ ہم نے انہیں اعزاز دیا تھا لیکن اب انہوں نے ہمیں شرم سے دوچار کر دیا ہے۔ وہ اپنا یہ ایوارڈ سوموار کو آئرلینڈ کے دارالحکومت کے سٹی ہال میں واپس کر رہے ہیں۔ کئی بین الاقوامی رہنما اور انسانی حقوق کے گروپ آنگ سان سو چوئی کی مذمت کر چکے ہیں کہ وہ فوجی تشدد کو تسلیم کرنے سے گریزاں ہیں جس کے بارے میں اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ یہ نسل کشی کی نصابی کتب والی مثال ہے۔ آنگ سان سوچوئی سے نوبل امن انعام بھی واپس لینے کے مطالبات کئے جا رہے ہیں جو انہیں 1991 میں دیا گیا۔ باب گلڈاف کے بیان پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ڈبلن سٹی کونسل کے لارڈ میئر مائیکل میک ڈوناچا نے کہا کہ میرے لئے یہ بات مضحکہ خیز ہے کہ ایک طرف وہ یہ ایوارڈ واپس کر رہے ہیں اور دوسری جانب دنیا بھر میں برطانوی سامراج کے شرمناک ریکارڈ کے باوجود انہوں نے آرڈر آف دی برٹش امپائر کی طرف سے نائٹ کمانڈر کا اعزاز برقرار رکھا ہوا ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved