حضورۖ اللہ کی بڑی نعمت اوراحسان،آپ کی آمدسے کائنات میں بہارآگئی،پیرعبدالقادرگیلانی
  4  دسمبر‬‮  2017     |     یورپ

لوٹن (پ ر) برطانیہ میں 12ربیع الاول شریف کو سب سے بڑی 34ویں سالانہ میلاد النبیۖ جامعہ غوثیہ لوٹن میں منعقد ہوئی۔ جامعہ اسلامیہ غوثیہ لوٹن میں بارہ ربیع الاول شریف کو 34 ویں سالانہ میلاد النبی صلی اﷲ علیہ وسلم کانفرنس منعقد ہوئی جس میں برطانیہ' پاکستان اور دیگر ممالک سے ممتاز علماء کرام' مشائخ' مذہبی دانشور' مذہبی سماجی رہنمائوں' کونسلرز' ممبران پارلیمنٹ' سفارت کاروں اور ہزاروں عاشقان رسول نے مل کر نبی آخر الزماں' سید العالمین' رحمت اللعالمین کے حصور نذرانہ عقیدت پیش کیا جبکہ ہائی کمشنر آف پاکستان کی بھرپور نمائندگی بھی موجود تھی اور بیڈ فورڈ شائر کے بشپ کے علاوہ دیگر مذاہب اور سرکاری محکموں کے افسران نے شمولیت کرکے مسلمانوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کرتے ہوئے جامعہ اسلامیہ غوثیہ ٹرسٹ کے بانی خطیب ملت علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی کی مذہبی اور سماجی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔ جامعہ اسلامیہ غوثیہ ٹرسٹ کی طرف سے اس موقع پر سالانہ خصوصی محفل نعت کا اہتمام بھی کیا گیا تھا جس میں پاکستان سے آئے ہوئے نصف درجن کے قریب نعت خوانوں نے شرکت کرکے محفل میں سماں باندھ دیا جبکہ پاکستان کی قومی اسمبلی اور ایوان صدر کے قاری صاحبزادہ قاری نجم مصطفی نے اپنی محسور کن انداز میں تلاوت قرآن سے ہر آنکھ فرط محبت سے اشک بار اور رقعت طاری تھی دوران کانفرنس جامعہ کے دونوں خوبصورت ہال تکبیر و رسالت کے نعروں سے گونجتے رہے۔ علماء کرام نے کہا کہ ربیع الاول شریف کی بارھویں تاریخ کائنات کے اندھیروں کو اجالوں میں تبدیل کرنے کیلئے آئی اس بابرکت و باعظمت تاریخ کو آقائے کائنات' سرود دو عالم' رحمت اللعالمین اور اﷲ رب العزت کے پیارے محبوب سب نبیوں کے امام و رسول حضرت محمد رسول اﷲ صلی اﷲ علیہ وسلم کی ولادت طیبہ ہوئی۔ رحمت خداوندی نے کائنات کی ہر شے پر باران نور کردی کائنات کے ذرے ذرے نے میلاد النبیۖ کا جشن منایا امام الانبیاء کی ولادت طیبہ کی مبارک ساعتیں اپنے اندر بے پناہ خیر و برکات اور انوار و تجلیات لارہی تھیں جن کی برکات و حسنات سے نہ صرف زمین و آسمان پر رہنے والی مخلوق فیض یاب ہورہی تھی بلکہ کائنات کے ہر گوشے میں آمد مصطفی کی دھوم مچی تھی اور آوازیں آرہی تھیں آگیا وہ نور والا جس کا سارا نور ہے اور کوئی کہہ رہا تھا خوشی ہے آمنہ کے لال کی تشریف لانے کی۔ مرکزی جماعت اہل سنت یو کے اینڈ اوورسیز ٹرسٹ کے بانی و سرپرست اعلیٰ مفکر اسلام علامہ ڈاکٹر پیر سید عبدالقادر گیلانی نے اپنے صدارتی خطاب میں فرمایا قرآن مقدس نے ارشاد فرمایا ہے کہ دنوں کی یاد منائو ' اﷲ کی نعمتیں ملنے پر اس کا شکر بھی ادا کرو اور حصول نعمت اور اس کے فضل پر خوشیاں منائو مسرتوں کا اظہار کرو ہمارے پیارے نبی کریم اﷲ کے حبیب ہیں وہ اﷲ کی طرف سے عطا کردہ سب سے بڑی نعمت اور احسان ہیں انہوں نے قرآن پاک سے استدلال پیش کرتے ہوئے کہا کہ قرآن کہتاہے کہ ''اﷲ نے مومنوں پر احسان فرمایا اور ان میں عظمت والے رسول کو مبعوث فرمایا جو پڑھتا ہے ان پر اﷲ کی آیتیں اور پاک کرتاہے انہیں اور سکھاتا ہے انہیں کتاب و حکمت اگرچہ وہ اس سے پہلے کھلی گمراہی میں تھے'' حصور نبی پاک کی آمد سے پوری کائنات میں بہار آگئی کفر و ضلالت و گمراہی میں گری ہوئی مخلوق راہ ہدایت پر گامزن ہوگئی اور بتوں کے پجاری اﷲ رب العزت کے حضور سجدہ ریز ہوگئے آج پورا عالم اسلام اﷲ کے حضور شکر کا سجدہ ادا کرکے اس نعمت کبریٰ جو حضور کی شکل میں عطا کی گئی ہے جشن میلاد منا کر مسرتوں کا اظہار کررہے ہیں۔ کانفرنس کے میزبان جامعہ اسلامیہ غوثیہ کے بانی و مہتمم مرکزی جماعت اہل سنت کے جنرل سیکرٹری خطیب ملت علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نے کہا کہ ہم گزشتہ 34 سال سے اس مخصوص دن کو جشن میلاد منا کر اس مبارک دن کی برکات و حسنات سے فیض یاب ہورہے ہیں اور اس کا ظاہراَ بھی اثر نظر آرہا ہے کہ زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والے لوگ ہمارے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر آقا کریم کے حضور درود و سلام کے نذرانے پیش کررہے ہیں۔ ہم جب اتحاد و اخوت و یک جہتی کا اظہار کرتے ہوئے ایک دوسرے کے ساتھ کندھے سے کندھا ملاتے ہیں تو اﷲ کریم اپنے اور اپنے حبیب کے صدقے سے ہمارے دلوں کو ملا دے گا۔ حضور اس دنیا میں محبتوں کو بانٹنے اور نفرتوں کو مٹانے کیلئے آئے وہ لوگ جو آپ کی آمد سے قبل چھوٹی چھوٹی باتوں پر ایک دوسرے کو قتل کردیتے تھے اور نسلوں تک یہ رنجشیں اور دشمنیاں چلتی رہتیں مگر نبی رحمت نے محبتوں اور پیار و خلوص کا درس دیا کہ ایک دوسرے کے دشمن آپ میں بھائی بھائی بن گئے قرآن بھی پکار اٹھا کہ یہ آپس میں بڑے حلیم الطبع اور سلیم الطبع ہیں یہ ایسے خوش بخت بن گئے کہ پوری دنیا میں محبتیں تقسیم کیں اور نفرتوں کو مٹایا۔ مولانا چشتی نے کہا کہ میں اپنے آپ کو خوش نصیب سمجھتا ہوں کہ میری دعوت پر جشن میلاد میں تاریخ ساز اجتماع دیکھنے میں آرہا ہے۔ ہائی کمشنر آف پاکستان عزت مآب فیر پاکستان سید ابن عباس کی نمائندگی کرتے ہوئے سیکنڈ سیکرٹری محمد جواد اجمل اور ڈائریکٹر ہائی کمیشن ڈاکٹر لقمان مسعود نے کہا کہ ہمیں اس خوبصورت اور ایک بڑے اور حسین اجتماع جو محبت رسول اور عشق رسول کے حوالے سے منعقد ہورہا ہے شمولیت کرکے دلی مسرت ہوئی آج کے دن دو باتوں کا خصوصی خیال رکھیں ایک تو اس ملک میں ہم اسلام کے نمائندے اور سفیر ہیں اور دوسرا ہم اسلامی جمہوریہ پاکستان کے نمائندے اور سفیر ہیں ہمیں اپنے عمل اور کردار اور قول و فعل کے ذریعے باور کرانا ہوگا کہ ایک مسلمان اور محب وطن کا کیا کردار ہے اور یہ اسی صورت میں ممکن ہوسکتا ہے کہ ہم نبی پاکۖ کے اسوہ حسنہ کو اپنا لیں اور قرآن نے بھی ہمیں یہی درس دیا ہے کہ تمہارے لئے نبی پاک کا اسوہ حسنہ ایک بہترین نمونہ عمل ہے۔ انہوں نے خصوصی طور پر علامہ چشتی کا شکریہ بھی ادا کیا اور کہا کہ کمیونٹی کا اتحاد ہی ہمارے وقار کا ضامن ہے۔ پاکستان کے ممتاز عالم دین علامہ مفتی محمد اقبال چشتی نے کہا کہ آج کا دن اﷲ کریم کے حصور سجدہ شکر بجا لانے اور اس کے محبوب کی بارگاہ اقدس میں درود و سلام بھیجنے کا باعظمت دن ہے میرے آقا نے فرمایا کہ میں اس پتھر کو بھی جانتا ہوں جو اعلان نبوت سے قبل مجھے سلام کیا کرتا تھا اگر میرے پیارے رسول پتھر کو جانتے ہیں تو آج جامعہ غوثیہ لوٹن میں ایک امتی عشق و محبت سے سجائی جانے والی محفل درود و سلام کے نذرانے پیش کرے گا تو پھر امت کے والی روز محشر اس کی شفاعت فرمائیں گے۔ علامہ قاری واجد حسین چشتی امام ہذا مسجد نے کہا کہ حضور نبی پاک کا ذکر اﷲ نے بلند کردیا ہے آج پوری دنیا میں ایسا کوئی وقت نہیں جہاں آذان نہ ہورہی ہے اور کلمہ نہ پڑھا جارہا ہے یہ اﷲ کی شان ہے کہ اپنے ذکر کے ساتھ اپنے محبوب کے ذکر کو شامل کرلیا جہاں اﷲ کا ذکر ہوگا وہاں اﷲ کے حبیب کا بھی ذکر ہوگا۔ آج ہی اس خصوصی کانفرنس میں پاکستان سے آنے والے نوجوان خطیب علامہ صاحبزادہ محمد طیب الرحمان ہزاروی نے کہا کہ اسلام ایک عالم گیر اور امن و سلامتی کا پیام بر ہے۔ حضور نبی کریم ایسے رحمت کے پیامبر ہیںکہ صحابہ کی جماعت کے ساتھ تشریف لارہے تھے تو رستہ تبدیل فرما دیا کہ آگے رستے میں ایک کتیا بچوں کو دودھ پلا رہی تاکہ ہماری وجہ سے اس کے آرام میں خلل نہ آئے جو کریم آقا جانوروں کے حقوق کا خیال رکھنے اور ان کے حقوق کا محافظ ہو وہ کبھی بھی دہشت کی تعلیم نہیں دے سکتا۔ آج کے دور میں جو دہشت گردی کی راہ پر چل کر امن عالم کو تباہی کے راستے پر گامزن کرنا چاہتے ہیں ان کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں۔ لوٹن سائوتھ کے ممبر آف پارلیمنٹ گیوں شوگر نے کہا کہ لوٹن کی مسلم کمیونٹی نے اس شہر کی ترقی و کامیابی میں ایک بڑا کردار ادا کیا ہے اور ہم سب ایک خاندان کی طرح رہ رہے ہیں اور فلسطین کے مسلمانوں کے حقوق کیلئے ہم نے ہمیشہ آواز کو بلند کیا ہے اور ان پر ظلم و بربریت کی مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مولانا چشتی نے ہمیشہ اخلاص سے کمیونٹی کی آواز کو بلند کیا ہے اور ان کے حقوق کی پاسداری کی ہے جس کے لئے وہ مبارکباد کے مستحق ہیں اور یہ اجتماع مسلمانوں کیلئے ایک بہت مبارک دن ہے۔ برطانیہ کے اپوزیشن لیڈر اور لیبر پارٹی کے لیڈر ممبر آف پارلیمنٹ Jerey Corbyon جیری کوربن نے اپنے خصوصی پیغام میں کہا کہ آج بارہ ربیع الاول شریف کا مبارک دن پوری ملت اسلامیہ کے لئے خوشی اور مسرت کا دن ہے اور پیغمبر اسلام جو پوری انسانیت کے لئے رحمت کے پیغام لیکر آئے ان کی ولادت کا دن ہے میں اس کانفرنس کے ذریعے تمام مسلمانوں کو مبارکباد دیتا ہوں۔ بشپ آف بیڈ فورڈ Revened Bisho Rec------ نے کہا کہ آج کی اس خوبصورت کانفرنس کے ذریعے عیسائی مذہب کے ماننے والوں کے لئے محبتوں کا پیغام ملے گا اور ایک دوسرے کے قریب آنے کے ساتھ ساتھ اس ملک کی اقدار اور ویلیو کو سمجھنے میں اضافہ ہو گا اور آپس میں باہمی روابط بھی بڑھیں گے جس سے کمیونٹی کو متحد ہونے کا موقع ملے گا۔ بیڈ فورڈ کے سینئر کارنر آفیسر Ian Peer نے کہا کہ اس قسم کی کانفرنس کے انعقاد سے ایک دوسرے کو سمجھنے کا موقع ملتا ہے اور آپس میں خوشیاں بانٹی جاتی ہیں ایسے موقع پر جب کرسمس بھی جلد آنے والی ہے اس کانفرنس سے ایک اچھا پیغام اور اثر ملے گا مولانا چشتی بھی مسلم کمیونٹی اور ہمارے درمیان ایک پل کا کردار ادا کررہے ہیں۔ لیڈر آف کونسل کونسلر ہیزل سیمن اپنی اچانک بیماری کی وجہ سے کانفرنس میں شامل نہ ہوسکیں۔ جن دیگر نے اظہار خیال کیا ان میں کارنر آفیسر پیٹر لوٹن رجسٹرار آفس کی نمائندہ تبسم' ممبر آف پارلیمنٹ کیون ہوپکن' کونسلر محمد ریاض بٹ' کونسلر طاہر ملک' کونسلر راجہ وحید اکبر' کونسلر راجہ محمد اسلم' پروفیسر محمد ممتاز بٹ' ملک محمد شبیر' راجہ محمد یعقوب' ملک محمد آزاد' پروفیسر امتیاز حسین' راجہ مشتاق خان' محمد فیصل خان' محبوب خان چشتی' سید امجد علی کاظمی' صاحبزادہ سید افتخار حسین' صوفی کرامت حسین' حاجی کرامت حسین قادری' صاحبزادہ قاضی ضیاء المصطفی ' عبدالرشید پیر' حاجی نذیر حسین عباسی و دیگر شامل ہیں جبکہ اس موقع پر خصوصی محفل نعت کا اہتمام کیا گیا جس میں پاکستان کے ممتاز نعت خوانوں نے جن میں صاحبزادہ سید الطاف حسین کاظمی' الحاج شہباز قمر فریدی' خالد حسین خالد' رشید صدیقی' قاری شاہد محمود اور دیگر نے گلہائے عقیدت پیش کرکے سماں باندھ دیا۔ دوران کانفرنس دونوں ہال نعرہ تکبیر و رسالت سے گونجتے رہے۔ صاحبزادہ قاضی عطاء الکبریا نے نظامت کے فرائض سرانجام دیئے۔ تمام شرکاء کے لئے دن بھر لنگر جاری رہا آخر میں درود و لام کے بعد خطیب ملت علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نے امت مسلمہ کیلئے اجتماعی دعا کی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved