دنیاکاکوئی نظام اسلام کے نظام معیشت کامقابلہ نہیں کرسکتا،علامہ انیس احمد
  5  دسمبر‬‮  2017     |     یورپ

ہڈرزفیلڈ (پ ر )جمعیت العلما برطانیہ کے زیر اہتمام ، جامع مسجد بلال ھڈرزفیلڈ میں سالانہ مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس سے خطاب کرتے ھوئے علما کرام و مشائخ عظام نے کہا کہ میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کا مقصد آپ کے سر پر تاج ختم نبوت سجا کر دین اسلام کو سابقہ تمام ادیان پر غالب کرانا تھا،آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ کا ایک دور ولادت تا بعثت ھے،اس چالیس سالہ دور میں مکہ والوں کی زبانوں پر حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے حسن و جمال اور صداقت و امانت کے چرچے تھے ،حالات موافق اور لوگ تعریفوں میں رطب اللسان تھے،لیکن جونہی حیات طیبہ کا دوسرا دور شروع ھوتا ھے یعنی بعثت تا رحلت جسے مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کہاجاتا تو حالات یکسر بدل جاتے ھیں،حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ بد زبانی بد کلامی ھر طرح کی ایذا رسانی مکے والے شروع کردیتے ھیں،ضرورت اس بات کی ھے کہ علما کرام مسلمانوں کے سامنے مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کو بیان کریں،تاکہ مسلمانوں کو بعثت تا رحلت نبوی کے حالات وواقعات کا بھی علم ھو ،توحید کسے کہتے ھیں اور اس کے بیان کرنے پر انبیا بالخصوص امام الانبیا علیہم السلام کو کیسے کیسے مصائب و آلام سے دوچار ھونا پڑا،مسلمانوں خصوصا نوجوان نسل کو سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کے تمام پہلوں سے آگاہ کرنا علما و مشائخ کی بنیادی ذمے داری ھے، تمام عقائد اسلامیہ کی بنیاد عقیدہ توحید ھے اور تمام اعمال صالحہ کی روح سنت محمدی صلی اللہ علیہ وسلم ھے، مقام افسوس یہ ھے کہ ان دونوں کی تبلیغ و اشاعت پر کام نہ ھونے کے برابر ھے، جمعیت العلما برطانیہ نے سالانہ مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنسوں کے انعقاد کا سلسلہ اسی غفلت اور کوتاھی کو دور کرنے کے لیئے پہلے قدم کے طور پر اٹھایا ھے، جامع مسجد بلال ھڈرزفیلڈ میں ھونے والی کانفرنس کی پہلی نشست سے صدارتی خطاب کرتے ھوئے امام اھلسنت حضرت العلامہ ڈاکٹر خالد محمود مدظلہ نے کہا کہ ھمارے نبی محترم صلی اللہ علیہ وسلم اپنے مشن رسالت میں پوری طرح کامیاب ھو کر اس دنیا سے تشریف لیکر گئے،انہوں نے کہا کہ یہ ایک حساس موضوع ھے ،اسی لیئے ھم اس مورچے پر پہرہ دار بن کر کھڑے ھیں ،اور جانتے ھیں کہ کون کون یہاں سے اسلام اور پیغمبر اسلام پر نقب لگانے کی کوشش کر رھا ھے،حافظ زین محمود نے انگلش میں اسی موضوع کو تفصیل سے بیان کیا ،مولانا منور محمودی نے خطاب کرتے ھوئے کہا کہ توحید کے مقابلے میں شرک ناقابل معافی جرم ھے جسے قرآن 'ظلم عظیم'کہتا ھے.اور سنت کے بالمقابل ھر بدعت گمراھی ھے اور ھر گمراھی جھنم کی طرف لیکر جانے والی ھے. مسلمانوں پر لازم ھے کہ ایمان کو شرک سے اور اعمال کو بدعات سے محفوظ رکھیں اور ان علما سے مضبوط تعلق رکھیں جو توحید و سنت کے داعی ھیں،ایسے علما اور پیروں سے خود کو بچائیں جو عقائد شرکیہ کا پرچار کر کے بدعت کی وکالت کرتے ھیں،دوسری نشست کی صدارت امیر جمعیت العلما برطانیہ مولانا سید اسد میاں شیرازی نے کی، مفسر قرآن علامہ انیس احمد قاسمی بلگرامی نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ھوئے کہا کہ مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم ایسا خوبصورت عنوان ھے جس پر گھنٹوں گفتگو کی جائے تو بھی وقت ختم اور موضوع باقی رھیگا.انہوں نے کہا کہ سارا قرآن حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت ھے،آپ صلی اللہ علیہ وسلم خود' امی'تھے لیکن نظام تعلیم ایسا دیا کہ جس سے بندے اور اس کے رب کا تعلق قائم ھو جاتا ھے،جس تعلیم کا آغاز رب کے نام کے بغیر ھو وہ خیر و برکت سے خالی شروفساد والی ھوتی ھے،حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے نظام عبادت ایسا دیا کہ آپ ص سے پہلے لوگ عبادت تو کرتے تھے پر سب کی ،حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے آکر صرف رب ھی کی عبادت کرنے کی تعلیم دی،اور بتایا کہ مال جس رب نے دیا تقسیم بھی اسی ھی کے نام پر ھونا چاھیئے، جس رب نے پیشانی دی یہ جھکنی بھی صرف اسی ھی کے آگے چاھیئے، حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے نظام معیشت نہ صرف دیا بلکہ عملا اسے نافذ کر کے اس پر عمل کرنے والوں کو جزااور عمل نہ کرنے والوں کی سزا بھی بتا دی. اسلام کے نظام معیشت کا مقابلہ دنیا کا کوئی نظام نہیں کرسکتا،علامہ بلگرامی کا کہنا تھا کہ جب تک مسلمان اسلامی اصولوں کے مطابق تجارت کرتے رھے ان کے اس عمل سے اسلام پھیلتا رھا ،مال عیب دار ھو تو گاھک کو بتانا، خراب مال صحیح میں چھپا کر نہ بیچنا، اور خریدا ھوا مال واپس لے لینا،مسلمان تاجروں میں آج کتنے فیصد موجود ھے ؟آج دھوکہ دینا ، حرام کمانا پھر کھانا،اور مال تجارت میں ملاوٹ کرنا ،بیچا ھوا مال واپس نہ لینا یہ سب کچھ کیا مسلمانوں میں موجود نہیں اس کے برعکس غیر مسلموں کی تجارت بھی ھمارے سامنیھے وہ کامیاب کیوں اور ھم ناکام کیوں؟یہ فیصلہ کرنا کوئی مشکل کام نہیں لھذا ھمیں میلاد منا کر مطمئن و خوش ھو جانے کی بجائے مقصد میلاد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کو سمجھنا اور اس پر عمل کرنا ھو گا،


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved