اتوار‬‮   21   جنوری‬‮   2018
امریکی پابندیوں کاپاکستان اورعوام پرکوئی اثرنہیں پڑے گا،سینیٹرسراج الحق
  8  جنوری‬‮  2018     |     یورپ

لندن(نمائندہ اوصاف) میاں نواز شریف نے عدل تحریک کا اعلان کرکے اپنی گزشتہ 3 دہائیوں پر مشتمل حکومتوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان رکھ دیا ہے میاں نواز شریف بتائیں کہ گزشتہ تیس سال سے اس ملک پر کرپٹ ٹولہ، معاشی دہشت گردوں، پٹواری اور جاگیرداری، سرمایہ دار طبقہ قابض نہیں ہے؟ اور غریب عوام کے وسائل پر غاصب بن کر کے غریب کو غریب تر کردیا ہے۔ سپریم کورٹ نے نواز شریف کو پانامہ لیکس میں نااہل قرار دے دیا ہے اسی طرح پانامہ کیس میں دیگر 430 لوگوں کے خلاف بھی مقدمات قائم کئے جائیں تاکہ ایسے تمام لوگوں کے گرد شکنجہ کسا جاسکے۔ کیونکہ جب تک بلاتفریق سب کا احتساب نہیں ہوگا ملک کے اندر کرپشن کا خاتمہ ناممکن ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ الیکشن کمیشن کو چاہئے کہ آئندہ الیکشن میںتمام کرپٹ اور بدکردار لٹیروں اور ڈاکوؤں کو الیکشن میں حصہ لینے سے نااہل قرار دے تاکہ عوام ایک صاف اور شفاف قیادت کو منتخب کرسکیں۔ ایک حقیقی احتساب سے ہی صحیح معنوں میں سیاست میں پاکیزگی آسکتی ہے۔ ہماری جدوجہد احتساب تک جاری رہے گی۔ مسائل کا حل نہ مارشل لاء ہے اور نہ ہی وڈیروں اور جاگیرداروں پر مشتمل حکومت ہے بلکہ باکردار لوگوں پر مشتمل حکومت ہی تمام مسائل کو حل کرسکتی ہے۔ان خیالات کااظہار امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے اپنے دورہ برطانیہ اور یورپ کے اختتام پر ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پریس کانفرنس اہتمام یو کے اسلامک مشن کے مقامی رہنماؤں سید شوکت علی اور دیگر نے معروف کلاچی ریسٹورنٹ میںکیا تھا۔ پریس کانفرنس میں برطانیہ پاکستانی شوز چینلز اور اخبارات کے نمائندگان اور بیوروچیفس میں شرکت کی۔ اس کے علاوہ معروف ایڈورٹائزنگ ایجنسی کے سجاد شال، فہیم فاروقی، یوسف حیدر اور دیگر بھی شریک ہوئے۔ ایک سوال کے جواب میں سینیٹر سراج الحق نے مزید کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ کی طرف سے پاکستان کے خلاف پابندیاں لگانے پر انشاء اللہ پاکستان کے عوام پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ امریکہ نے گزشتہ 70سالوں سے پاکستان کے حکمرانوں اور جاگیرداروں کو یرغمال بنارکھا ہے۔ امریکہ کے کہنے پر ہر وہ قدم اٹھانے کیلئے تیار ہوجاتے ہیں جسکی وجہ سے ملکی سالمیت کو خطرہ لاحق ہوجاتا ہے۔ امریکہ کی طرف سے افغانستان میں نیٹو اور امریکی افواج کی شکست کو پاکستان کے کھاتے میں ڈالنا کہاں کی انصاف پسندی ہے اس لئے ہمیں امریکہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو دوبارہ سے غور و فکر کے بعد اپنی خودداری کو مدنظر رکھ کر استوار کرنے چاہیں انہوں نے کہا کہ سابق ڈکٹیٹر جنرل(ر) پرویز مشرف اور لٹیرے حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ہمارے سکول تباہ کردئے گئے ادارے مکمل تباہ ہوچکے ہیں ہم امریکہ کی خاطر افغانیوں کے ساتھ لڑنے کیلئے تیار نہیں۔ ہمیں اپنے آپ کو اس دلدل سے نکالنا ہوگا۔ ہمیں اپنے پاؤں پر کھڑا ہونا سیکھنا چاہئے۔ اقبال نے اسی لئے فرمایا تھا اے طائر لاہوتی اس رزق سے موت اچھی جس رزق سے آتی ہو پرواز میں کوتاہی انہوں نے کہا خدا کرے امریکہ ہماری ہر قسم کی امداد بند کردے تاکہ اپنے پاؤں پر کھڑا ہوسکیں۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کرپشن سب سے بڑا مسئلہ ہے NAB کے ڈائریکٹر کے مطابق اس وقت ملک میں 12ارب کی روزانہ کرپشن ہوتی ہے اگر ہم اس کرپشن کو روکنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو ہمیں کوئی قرض لینے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔اوورسیز پاکستانیوںکے ووٹ کے حق بارے انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیز، پاکستان کی معیشت میں ایک ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں ان کو الیکشن پراسس سے باہر رکھنا یہ ناانصافی ہے اس لئے ان کو ووٹ کا حق دینا ہوگا اس لئے ہم پوری کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہا اللہ رب العزت نے ہمارے ملک کو ہر قسم کے ذخائر اور وسائل سے مالا مال کر رکھا ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ ان وسائل کو بروئے کار لایا جائے۔مسئلہ کشمیر بارے انہوں نے کہا ہماری پالیسی روز روشن کی طرح عیاں ہے ہم کشمیر کی آزادی تک ہر قسم کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ صوبہ خیبر پختونخواہ کے اندر FATA کو ختم کرنے بارے انہوں نے کہا کہ FATA کے عوام کو قومی دھارے میں لانے کیلئے ضروری ہے کہ وہاں FIR کا خاتمہ کیا جائے اور FATA کو KPK میں فوری طورپر ضم کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ دورہ برطانیہ اور یورپ کے دوران پاکستانیوں کی کثیر تعداداورمختلف تنظیموں سے بلاواسطہ ملاقات کرنے کا موقع ملا اور ان کے مسائل کو سنا۔ ان شاء اللہ واپس جاکر ان کے تمام مسائل بارے ہر فورم پر آواز اٹھاؤں گا۔ MMA کی بحالی بارے انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ سیاسی جماعتوں جن پر کسی قسم کا کوئی الزام یا کرپشن کے ثبوت نہیں ہیں ان کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرکے MMA کو سابق کو سابق روایات کے تحت بحال کیا جائے گا تاکہ پاکستان کی عوام کو اچھے اور صاف ستھری قیادت کا انتخاب کرنے کا موقع مل سکے۔ آخر میں سینیٹر سراج الحق نے میڈیا کے تمام نمائندگان کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان کے دورہ برطانیہ اور یورپ میں ان کی بھرپور حمایت کی اور ان کو اچھی کوریج دی۔ انہوںنے کہا کہ ہمارا میڈیا ایک اچھا مثبت رول ادا کر رہا ہے جو ملک کی ترقی کیلئے بہت ہی مفید ثابت ہوگا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved