عوام کی اکثریت آج بھی نوازشریف کوقومی سیاسی لیڈرمانتی ہے،نویداختر
  9  جنوری‬‮  2018     |     یورپ

آ ئر لینڈ (فیصل ر ا جہ )مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کے سابق امیدوار اسمبلی آزاد کشمیر راجہ نوید اختر کوگا نے پاکستان اور آزاد کشمیرکے موجودہ سیاسی حالات اور پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت کے آئندہ لائحہ عمل پر گفتگو کیلئے مسلم لیگ ن یورپ میں بسنے والے ساتھیوں کے ساتھ ٹیلیفونک خطاب کیا۔ انھوں نے کہا آزاد کشمیر کے لوگ اپنے قائد سے بے انتہا محبت کرتے ہیں اور ان کی ایک کال پر کارکن تیار ہے۔ پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت اور نوازشریف کو پیش آنے والی مشکلات کے بارے میں انھوں نے خاص طور پر عدلیہ کے فیصلوں کے بارے تشویش کا اظہار کیا گیا۔انھوں نے کہا کہ ہم نواز شریف اور پاکستان مسلم لیگ ن کے بے لوث چاہنے والے ہیں کیونکہ پاکستان کی بقا خوشحالی اسی میں ھے۔ انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف ایک نیک انسان اور شریف خاندان سے تعلق رکھنے والے ہیں جن کو رشوت، منی لانڈرنگ، قومی خزانہ لوٹنے اور ملک دشمنی کے الزامات لگا کر ھر بار حکومت چھینی گئی، اس بار پانامہ کے بہانے الزامات کی بھرمار کی گئی لیکن اقامہ کے سوا کچھ نہیں ملا پھر بھی صرف اور صرف حکومت چھننے کیلئے نااھلی کا وار کیا گیا۔ جبکہ ھر طرح کی کرپشن بشمول اخلاق و کردار کی کرپشن میں ملوث عمران خان ان ججوں کیلئے صادق اور امین ھے، ھم ان ہتھکنڈوں کو نہیں مانتے اور 2018کے الیکشن میں پہلے سے زیادہ اکثریت سے حکومت پھر نوازشریف ھی بنائیں گے۔ عوام کو بیوقوف بنانے والے خود بیوقوف ہیں، پاکستان کے بچے بچے کو علم ھے کہ حکومت اور نوازشریف کو روکنے کیلئے دوبارہ اقتدار سے دور رکھنے کیلئے سازشیں ھو رھی ھیں ہمیں معلوم تھا کہ کورٹ کیا فیصلے کرنے والی ھے۔ لیکن یہ دوھرے معیار کے فیصلے عوام کو قبول نہیں۔ عمران خان کو اقرار جرم کے باوجود کلین چٹ جبکہ نوازشریف کو اقامہ میں بیٹے سے نا لینے والی تنخواہ کو بھی انکم بتا کر نااھل کر دیا گیا کہ یہ انکم ظاھر کیوں نہیںکی؟ نوید اختر نے مزید کہا کہ اگلے الیکشن جولائی18 میں میاں نواز شریف پہلے سے زیادہ ووٹ حاصل کریں گے انشااللہ۔ ملک کی تاریخ میں پچھلے تقریبا ایک سال سے عجیب و غریب معاملات پیش آ رھے ھیں جس پر نا صرف پاکستان بلکہ اوورسیز پاکستانیوں میں بے چینی ھے۔ حکومت کے خلاف اور نوازشریف کو آئندہ حکومت سے دور رکھنے، ھرانے جبکہ سینٹ کے الیکشن میں من مانیاں کرنے کی خاطر طرح طرح کے تماشے ھو رھے ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ یوں لگتا ہے کہ جیسے فیصلے کر لئے گئے ہیں اور مختلف اداروں بشمول عدلیہ کے ذریعے ان فیصلوں پر عمل درآمد کروایا جا رھا ھے، اس سلسلے میں مزید اور ناپسندیدہ فیصلے بھی آ سکتے ہیں یہ افسوسناک ہے۔ راجہ نوید اختر نے کہا دھرنوں والے پھر اپنے موسم میں آگئے ہیں دھرنے سے ملک کا نقصان ہوتا ہے 126 دن کا دھرنا دینے سے عمران خان کو کیا ملا الٹا ملک میں اکانومی کو شدید دھچکا لگا اس کا زمہ دار طاہر القادری اور عمران خان ہے جنہوں نے ملک کو 100سال کے لیے پیچھے دھکیل دیا ہے روزانہ کی بنیاد پر عوام میں بے چینی بڑھائی جا رھی ھے، عدلیہ کی مدد سے غیر مقبول اور ناپسندیدہ فیصلے صرف نوازشریف کے خلاف ھو رھے ھیں۔ جان بوجھ کر عمران خان کو حکومت میں لانے اور میاں برادران کو بدنام کر کے حکومت سے دور کرنے کی کوشش کی جارھی ھے۔ نوازشریف کی حکومت ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور آئندہ سالوں میں بھی ان کی قیادت میں پاکستان مسلم لیگ ن ترقی کا سفر جاری رکھے گی۔ میاں نوازشریف اور شہبازشریف کے ترقیاتی منصوبوں اور پاک چائنہ کوریڈور پاکستان کے مستقبل کو تابناک کر رہے ہیں۔ ھم نوازشریف کے جیالے کارکن ہیں ھم نے ساری سیاست نوازشریف کے ساتھ بے لوث کی ھے۔ ھمارے لیڈر کو پاکستان کی خدمت کرنے عوام کو خوشحال کرنے کی سزا دی جاتی ہے جھوٹے مقدمے کئے گئے، زبردستی وزیراعظم کا قلمدان چھینا گیا، ملک بدر کیا گیا ۔ اور آج پاکستان کی عدلیہ کی ذریعے میاں نواز شریف اور کو بدنام کر کے لوگوں کے دلوں سے نکالنے کی سازش میں غلط فیصلے کروائے جارھے ہیں جن پر ھمارے سر بحیثیت مجموعی قوم کے شرم سے جھک گئے ہیں ۔ کہ لوگوں کی اکثریت پاکستان میں میاں نواز شریف کو قومی سیاسی لیڈر مانتی ہے اور مانتی رھے گی۔ شہبازشریف، دیگر لیڈرز اور ھم کارکنان دینِ اسلام، عشقِ رسول، ناموسِ رسالت، پاکستان، سرزمین، نظریہ پاکستان، قوم اور اس کی ترقی و خوشحالی سے مضبوطی سے جڑے ہوئے لوگ ہیں، ھمارے آبائواجداد نے تحریک پاکستان میں قربانیاں دیں ہیں اس لئے تعمیر پاکستان ھمارا اولین مقاصد میں سے ھے، نواز شریف کے خلاف جھوٹے مقدمات بنا کر بدنام کیا گیا، آمر کے دور میں بھی نیب کی جان توڑ تحقیقات پر بیشمار پاکستان کے قومی خزانے کی رقم خرچ کرنے کے باوجود کچھ ثابت نہ ھوا اور آخیر میں ان کیسوں کو سیل کر دیا گیا، انہی نیب کے کیسوں کو پانامہ میں کچھ بھی نہ ملنے پر کھسیانی بلی کی طرح کھمبا نوچنے کیلئے اقامہ کی نا لی ھوئی تنخواہ کو اثاثہ کہ کر نااھلی کا ناپسندیدہ فیصلہ کر کے دوبارہ نیب کے کیس کھولنے کا جے آئی ٹی کے ذریعے کوشش کی گئی لیکن آج جبکہ سیل کر دی گئی فائل کو دوبارہ کھولنے کی کوئی وجہ پیش نہ کرنے پر مجبورا کیس نا کھولنے کا فیصلہ دینا پڑا۔ راجہ نوید اختر نے کہا کہ اس فیصلے کے پیش نظر جے آئی ٹی کی تحقیقات غلط، اقامہ کی بنیاد پر نااھلی کا فیصلہ غلط جبکہ ملک میں جھوٹ بول کر سیاست کرنے والے عوام میں ہیجان پیدا کر کے جلسے کرنے والے عمران خان اور شیخ رشید جیسے المشہور اسٹیبلشمنٹ کے گھوڑے اور پیادے غلط ثابت ھو چکے ہیں۔ عمران خان کا تبدیلی کا نعرہ بیکار ثابت ھوا انصاف کے نام پر بننے والی سیاسی جماعت نے عدلیہ کو جھوٹ کے پلندوں کے ذریعے غلط فیصلوں پر مجبور کیا، کیا ھی اچھا ھوتا کہ ھماری عدلیہ کے ججز آئین کے تحت فیصلے کرتے۔ قائدین سے گذارش ہے کہ وہ پارٹی کے بے لوث ورکروں کے ساتھ ھم آہنگی میں اضافہ کریں


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved